الیکٹرک ، الیکٹرونکس معلومات درکارہے

ایم اسلم اوڈ نے 'سائنس اور ٹیکنالوجی' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اگست 25, 2015

ٹیگ:
  1. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    26,036
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    گھر کے لیے سولر انرجی واقعی اچھا آپشن نہیں ہے، خاص طور پر جیسے پنجاب کے میدانی علاقے، سردیوں میں دھند اور گرمیوں میں برساتیں اس کو چلنے نہیں دیتیں۔

    عام طور پر جہاں لوڈ شیڈنگ شیڈول کے مطابق ہوتی ہے وہاں یو پی ایس کافی کارگر ہے۔ فریج، استری اور اے سی کے بغیر دیگر چیزوں کے لیے ضرورت کے مطابق ایک اچھا انورٹر اور بیٹری یا دو بیٹریاں چالیس پچاس ہزار کا خرچہ ہے، اور ہر ڈیڑھ دو سال بیٹریوں کی تبدیلی یوں کہہ لیے مہینے کا دو سے اڑھائی ہزارعلاوہ گورنمنٹ بل کے جس سے آپ اپنے بچوں کی پڑھائی کے لیے روشنی اور شدید گرمی میں کم از کم پنکھے کی ہوا کا بندوبست کر سکتے ہیں۔

    ظاہر ہے حکومت کی ذمہ داری ہے لیکن پاکستان میں آپ "فری چوری کی فلمیں" تو دیکھ سکتے ہیں لیکن بنیادی ضرورتوں کے لیے یہ اضافی خرچہ کرنا ہی پڑتا ہے۔
     
    • متفق متفق × 2
    • زبردست زبردست × 1
  2. ummargul

    ummargul محفلین

    مراسلے:
    65
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    میرے خیال میں گھر کے لیے سولر سسٹم ایک متبادل کی حثیت سے اپنایا جاسکتا ہے
    لوڈشیڈنگ کا مسئلہ گرمی ہی میں ہوتا ہے اور جب بادل یا بارش ہوتی ہے تو گرمی کی شدت کم ہو جاتی ہے
    عام طور پر اگر صبح سے شام تک ا س سسٹم سے کا م لیا جائے تو اس سے بجلی کا بل بھی آدھا ہوجائے گا۔
    یعنی صبح طلوع آفتاب سے غروب آفتاب تک اور گرمیوں میں دن بھی بڑے اور رات چھوٹے ہوتے ہیں
    میرے پاس خود آفس میں تین شمسی تختے ہیں جو 450 واٹ کے ہیں جو کہ بیٹری کو براہ راست چارج کرتے ہیں ۔ ۔ ۔ ۔۔۔۔۔ ۔ چونکہ آفس میں کام بھی دن ہی میں ہوتا ہے تو ہمیں لوڈ شیڈنگ کا پتہ نہیں چلتا ۔ ۔۔ ۔
    اچھی چیز ہے استعمال کرلیں ۔ ۔ ۔ ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  3. نبیل

    نبیل محفلین

    مراسلے:
    16,669
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Depressed
    برادرم محمد وارث، کیا آپ کے خیال میں یو پی ایس اور سولر پینل کے ذریعے بیٹری چارجنگ ایک اچھا combination نہیں ہے؟
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. اسد

    اسد محفلین

    مراسلے:
    1,090
    موڈ:
    Busy
    یہ ملٹی میٹر کی قسم ہے اور کلیمپ میٹر (clamp meter) یا ٹونگ ٹیسٹر (tong tester) کہلاتے ہیں۔ ان میں عام (تاروں والے) پروبز کے علاوہ ایک کلیمپ بھی ہوتا ہے جو کسی تار میں سے گزرنے والے کرنٹ کو ماپتا ہے۔ انگلش وکیپیڈیا پر صفحہ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  5. ایم اسلم اوڈ

    ایم اسلم اوڈ محفلین

    مراسلے:
    643
    موڈ:
    Cool
    جزاک اللہ بھائی
    ہر کسی کا بجلی کا استعمال مختلف ہے
    جب دھوپ ہے اسوقت تک گرمی ہے اور جب دھوپ ختم تو گرمی بھی ختم
    مغرب کے بعد اگر بجلی نہ ہو تو گھر کی چھت پر چلے جاتے ہیں رات کو بجلی نہ ہو تو کام چل جاتا ہے ہمارا
    مسئلہ سورج کی دھوپ سے پیدا ہونے والی گرمی سے بچنا ہے اور جب دھوپ ہے تو سولر آن ہے
     
    • متفق متفق × 2
  6. ummargul

    ummargul محفلین

    مراسلے:
    65
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    بس ذرہ توجہ کی ضرورت ہوتی ہے یو پی ایس تو خود کار نظام کے اندر چارج بند کر دیتا ہے لیکن شمسی نظام پر نظر رکھنا پڑتا ہے یعنی جب بیٹریا بھر جائے تو پھر شمسی چارج کے لیے ایک ایک ریلے کی ضرورت پڑی گی ۔ ۔ ۔ ۔ میرے ساتھ یو پی ایس اور شمسی ایک ہی بیٹری کو لگی ہے ۔ ۔۔۔ ۔ ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  7. ایم اسلم اوڈ

    ایم اسلم اوڈ محفلین

    مراسلے:
    643
    موڈ:
    Cool
    http://shamsitawanay.blogspot.com/2015/08/blog-post_0.html?m=1
     
  8. اسد

    اسد محفلین

    مراسلے:
    1,090
    موڈ:
    Busy
    اب ایسے چینی انورٹر دستیاب ہیں جو بیک وقت لائن اور سولر چارجنگ کی سہولت دیتے ہیں۔ ان میں charging priority منتخب کی جا سکتی ہے۔ عام طور پر یہ سولر چارجنگ پر سیٹ ہوتے ہیں، جب سولر پینل مطلوبہ کرنٹ مہیا کر رہے ہوتے ہیں تو انہی سے چارجنگ ہوتی ہے اور جب مطلوبہ کرنٹ دستیاب نہیں ہوتا تو لائن سے چارجنگ شروع ہو جاتی ہے۔ یہاں ایبٹ‌آباد میں ایسا کم استعداد والا سستا انورٹر سولہ ہزار روپے(Rs.16,000) میں دستیاب ہے۔ عام طور پر پاکستان میں درمیانی استعداد (گھریلو) والے سسٹم استعمال ہوتے ہیں جو مہنگے ہوں گے۔

    نیا سسٹم لگانے کے لئے یہی انورٹر بہتر ہیں، چاہے آغاز میں سولر پینل نہ بھی لگائے جائیں۔

    ایک چیز جس کی کمی محسوس ہو رہی ہے وہ مختلف حالات میں ممکنہ حل کی معلومات کی کمی ہے۔ مثلاً اگر کوئی نیا سسٹم لگانا چاہتا ہے تو اس کے پاس کیا راستے ہیں؟ (12vdc سسٹم یا 12vdc/220vac سسٹم) اگر کسی کے پاس عام انورٹر/یو پی ایس لگا ہوا ہے تو سولر پینل لگانے کے کیا ممکنہ حل ہو سکتے ہیں؟ اور انتخاب میں کیا چیزیں مد نظر رکھنی ہوتی ہیں؟ بدقسمتی سے پاکستان میں حالات* کے پیشِ نظر ہمارے بیشتر فیصلے (total loss کے) خوف کی بنیاد پر کیے جاتے ہیں، اسی لیے مکمل 12vdc سسٹم اتنے زیادہ استعمال نہیں ہوتے۔

    *حالات سے مراد عام طور پر تکنیکی استعداد کی کمی یا عدم موجودگی ہے۔
     
    آخری تدوین: ‏اگست 28, 2015
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • معلوماتی معلوماتی × 2
  9. ایم اسلم اوڈ

    ایم اسلم اوڈ محفلین

    مراسلے:
    643
    موڈ:
    Cool
    میں نے ابھی کراچی میں مون سون کے موسم کے دوران جب سورج مکمل بادلوں میں چھپا ہوا تھا اسوقت اپنے مونوکرسٹلائن سولر سے ایک 3ایمپئر اور12وولٹ ڈی سی کا عام کمپیوٹرمیں استعمال ہونے والا فین کی طرح کا 6 انچ کافین لگایاجو کہ دھوپ نہ ہونے کہ باوجود صحیح چل رہا تھا
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  10. ummargul

    ummargul محفلین

    مراسلے:
    65
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    بہت شکریہ جناب میں ایک عدد لگایا تھا لیکن ایک ہفتے ایک اندر ناکارہ ہوگیا
    مونو کرسٹلائن میں ، میں نے ایک بات نوٹ کی ہے اگر روشنی پورے پلیٹ پر پڑ رہی ہو اور آپ صرف اپنا ہتھیلی بھی سامنے کر دیں تو آوٹ پٹ میں فرق آتا ہے اس کے لیے میں نے 12 وولٹ کا ایک پنکھا اس کے ساتھ ڈائرکٹ لگایا ۔ تو پنکھا کبھی تیز ہو جاتا تھا اور کبھی آہستہ ۔ ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  11. ایم اسلم اوڈ

    ایم اسلم اوڈ محفلین

    مراسلے:
    643
    موڈ:
    Cool
    ایک 100 ایمپئر کی بیٹری اور 5 ایمپئر 12وولٹ ڈی سی کا ایک پنکھا
    اسکے لئے کتنے واٹ کا شمسی پینل اور کتنے ایمپئر کا چارج کنٹرولر درکار ہے؟؟؟؟؟
     
  12. افضل حسین

    افضل حسین محفلین

    مراسلے:
    1,211
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Amused
    گزشتہ دنوں کیرالہ کا کوچی ایئرپورٹ سولر پاور سے چلنے والا دنیا کا پہلا ایئر پورٹ بن گیا۔
     
    • زبردست زبردست × 2
  13. ایم اسلم اوڈ

    ایم اسلم اوڈ محفلین

    مراسلے:
    643
    موڈ:
    Cool
    رپلائی پلیز
     
  14. arifkarim

    arifkarim معطل

    مراسلے:
    29,828
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
    ایک الیکٹریکل انجنیئر آپکی رہنمائی کیلئے یہاں پہنچ چکے ہیں۔ انتظار فرمائیں :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  15. arifkarim

    arifkarim معطل

    مراسلے:
    29,828
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
  16. arifkarim

    arifkarim معطل

    مراسلے:
    29,828
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
    یہ کونسی بڑی بات ہے۔ ادھر پاکستان میں ہم نے کافی سال قبل پانی سے گاڑی چلا دی تھی :)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
  17. افضل حسین

    افضل حسین محفلین

    مراسلے:
    1,211
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Amused
    پاکستان اس ٹیکنالوجی کو بیچ کے دنیا کا دولت مند ملک بن سکتا ہے
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
  18. اسمٰعیل

    اسمٰعیل محفلین

    مراسلے:
    20
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    QUOTE="آوازِ دوست, post: 1692316, member: 9336"]ایم اسلم اوڈ صاحب بہت اچھی کاوش ہے۔ نبیل صاحب نے بنیادی چیزوں کے بارے میں رہنمائی کر دی ہے آپ کے ذہن میں بنیادی اصطلاحات کو واضح کرنے کے لیے اتنا اضافہ کروں گا کہ وولٹ برقی دباؤ ہے اور کرنٹ برقی بہاؤ ۔ آپ کے گھر میں جو پانی والی ٹونٹی لگی ہے اُس سے پانی کے بہاؤ کا دارو مدار آپ کے گھر کی پانی والی ٹینکی کی اونچائی پر ہے ٹینکی جتنی اونچی ہو گی پانی پر دباؤ اُتنا زیادہ ہو گا اور فلو اُتنا ہی تیز ہو گا۔ ہماری گھریلو برقی اشیاء 220 وولٹ کے برقی دباؤ پر کام کرتی ہیں۔ نائٹ لیمپ سے لے کر اے سی تک لیکن نائٹ لیمپ برائے نام بجلی خرچ کرتا ہے جبکہ اےسی کا بجلی کا خرچ اِس کے مقابلے میں بہت زیادہ ہے اِس کی وجہ یہ ہے کہ نائٹ لیمپ سے گزرنے والے کرنٹ کی مقدار بہت قلیل ہے جبکہ اے سی کے کرنٹ کی مقدار نسبتا" بہت زیادہ ہے آپ نے دیکھا ہو گا کہ ہم زیادہ کرنٹ لینے والی چیزوں کے ساتھ خصوصا" موٹی تار استعمال کرتے ہیں تاکہ وہ کرنٹ کی زیادہ مقدار کو با آسانی گزار سکے۔
    ہمارے گھروں کے باہر لگے بجلی کے میٹر پا ور میٹر یا انرجی میٹر کہلاتے ہیں اور جیسا کہ نبیل صاحب نے بتایا ہے پاور = وولٹ x کرنٹ یا P = V x I
    (وولٹ کو V سے اور کرنٹ کو I سے ظاہر کرتے ہیں جبکہ وولٹ کا بنیادی یونٹ یا اکائی وولٹ ہی ہے اور کرنٹ کی ایمپیئر ہے جسے A یا Amp سے ظاہر کرتے ہیں، پاور کو P سے ظاہر کرتے ہیں اور اِسکی اکائی واٹ ہے اورجسے W سے ظاہر کرتے ہیں)
    ایک عام انرجی سیور 23 یا 24 واٹ پاور استعمال کرتا ہے۔ وولٹیج ظاہر ہے 220 ہیں تو کرنٹ ہم معلوم کر سکتے ہیں اگر پاور کو یعنی 23 یا 24 کو 220 سے تقسیم کردیں
    ایک عام چھت والا پنکھا 80 سے 150 واٹ پاور استعمال کرتا ہے ( اگر معیاری ہے تو کم پاور استعمال کرے گا اور غیر معیاری ہے تو زیادہ پاور استعمال کرے گا)
    عام ریفریجریٹر سائیز کے حساب سے 200 سے 500 واٹ تک پاور استعمال کرتا ہے۔
    عام برقی استری 1000واٹ پاور خرچ کرتی ہے اگر آپ ایسی استری کو ایک گھنٹہ استعمال کریں تو آپ بجلی کا ایک یونٹ خرچ کرتے ہیں وہ یونٹ جِس کے حساب سے ہمارا میٹر بجلی کا استعمال ماپتا ہے اور جِس سے ہمارا بِل بنتا ہے۔
    پانی کا عام گھریلو پمپ ہارس پاور کے حساب سے نصف، تین چوتھائی یا ایک ہارس پاور کو ہو سکتا ہے جبکہ ایک ہارس پاور تقریبا" 746 واٹ پاور کے برابر ہے۔
    عام ائیر کنڈیشنر ایک ٹن والا قریبا" 1500 واٹ اور ڈیڑھ ٹن والا قریبا" 2000 واٹ پاور استعمال کرتا ہے۔

    سولر پینل مارکیٹ میں عموما" 150 واٹ اور 250 واٹ پاور کے دستیاب ہیں اور اُن کی کوالٹی کے حساب سے اُن کی پر واٹ قیمت ہے۔ معیاری سولر پینل کم و بیش 80 روپے فی واٹ کے حساب سے بیچے جا رہے ہیں۔ سننے میں آیا ہے کہ افغانستان سے امریکی آرمی کے استعمال کردہ پُرانے پینل بھی چمکا شمکا کر بطور نئے بیچے جا رہے ہیں اور جعلی لمبی لمبی گارنٹیوں کے زور پر بھی سیل بڑھانے کی کوشش کی جاتی ہے۔ آپ اصل ڈیلر کی تصدیق کر کے ہی پینل خریدیں۔ دوسری تین چیزوں میں سے ایک تو بیٹریز ہیں جو کہ آپ کے بیک اَپ ٹائم کی ضرورت اور پینلز کی کیپیسٹی پر منحصر ہیں پھر چارچنگ کنٹرول ڈیوائس ہے جو اچھی ذرا مہنگی اور سستی ذرا لیس ایفیشنٹ ہے۔ عموما" یہ 2 ہزار سے 15 ہزار تک کا خرچ ہے۔ اِب انورٹر کی ضرورت ہے تو یہ بھی پاور ہینڈلنگ کیپیسٹی اور فیچرز کے مطابق 8 ، 10 ہزار سے لے کر 40، 50 ہزار تک کا ہو سکتا ہے۔
    ایک ہزار واٹ پاور کے معیاری سسٹم کے لیے آپ کو دو سے اڑھائی لاکھ روپے تک کا تخمینہ ذہن میں رکھنا چاہیے :)[/QUOTE] بہت خوب
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  19. arifkarim

    arifkarim معطل

    مراسلے:
    29,828
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
    اگر یہ ہمارے سیاست دانوں کی لوٹ کھسوٹ سے بچ گئی تو ضرور بیچیں گے :)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • مضحکہ خیز مضحکہ خیز × 1
  20. کعنان

    کعنان محفلین

    مراسلے:
    865
    جھنڈا:
    England
    موڈ:
    Amused

    وولٹ
    یہ وہ توانائی ہے جو ایک الیکٹرون ایک وولٹ کے برقی دباو (وولٹیج) کے تحت فاصلہ طے کر کے حاصل کرتا ہے، یہ وہ دباو ہوتا ہے جسکی وجہ سے بجلی رواں ہوتی ہے یا آسان الفاظ میں یہ وہ دھکا ہوتا ہے جو الیکٹرون کو بہنے پر مجبور کرتا ہے، وولٹ توانائی ناپنے کی اکائی ہے اسے V سے ظاہر کرتے ہیں۔ پاکستان میں سپلائی وولٹیج 220 سے 240 وولٹ تک ہوتے ہیں۔

    برقی رو current

    الیکٹرون کے بہاؤ کی شرح کو کرنٹ کہتے ہیں برقی رو (کرنٹ) کی اکائی ایمپئر Ampere ہوتی ہے جسے A سے ظاہر کرتے ہیں۔

    طاقت
    توانائی energy پیدا کرنے یا توانائی energy خرچ کرنے یا کام کرنے کی رفتار کو طاقت power کہتے ہیں۔ طاقت کو ناپنے کی اکائی واٹ ھے جسے W یا P سے ظاہر کرتے ہیں۔
    اگر ایک موٹر پمپ سے پانی کی ٹنکی بھرنے میں دو گھنٹے لگتے ہیں جبکہ دوسرا پمپ وہی ٹنکی ایک گھنٹے میں بھر سکتا ہے تو دوسرا پمپ پہلے پمپ سے دوگنا طاقتور ہے کیونکہ اس نے نصف وقت میں اتنا ہی کام کر دیا۔

    اوھم
    اوھم برقی مزاحمت Resistance کی اکائی ہے۔ جو کہ طبعی سائنس دان جارج سائمن اوہم کے نام سے منسعب ہے اور اس کو یونانی حرف اومیگا (Ω) سے ظاہر کیا جاتا ہے۔ طبیعات کی روح سے ایک اکائی یعنی ایک اوھم مزاحمت کی تعریف کچھ یوں ہو گی۔ اگر کسی موصل سے ایک اکائی وولٹ برقی پوٹینشنل مہیا کرنے پر اس میں سے ایک ایمپیر برقی رو (کرنٹ) گزرے تو مزاحمت کی مقدار ایک اوھم ہو گی۔

    [​IMG]


    [​IMG]


     
    • معلوماتی معلوماتی × 1

اس صفحے کی تشہیر