ابنِ انشا کی زمین میں دلاور فگار

الف عین نے 'مزاحیہ شاعری' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ستمبر 11, 2008

  1. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    34,521
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    کل چودھویں کی رات تھی آباد تھاکمرہ ترا
    ہوتی رہی دھک دھک دھنا، بجتا رہا طبلہ ترا
    شوہر، شناسا، آشنا، ہمسایہ، عاشق، نامہ بر
    حاضر تھا تیری بزم میں ہر چاہنے والا ترا
    عاشق ہیں جتنے دیدہ ور، تو سب کا منظورِ نظر
    نتھا ترا، فجّا ترا، ایرا ترا، غیرا ترا
    اک شخص آیا بزم میں، جیسے سپاہی رزم میں
    کچھ نے کہا یہ باپ ہے، کچھ نے کہا بیٹا ترا
    میں بھی تھا حاضر بزم میں، جب تو نے دیکھا ہی نہیں
    میں بھی اٹھا کر چل دیا بالکل نیا جوتا ترا
    یہ مال اک ڈاکے میں کل دونوں نے مل کرلوٹا ہے
    انصاف اب کہتا ہے یہ، آدھا مرا، آدھا ترا
    ** دلاور فگار
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 10
    • زبردست زبردست × 4
  2. خرم

    خرم محفلین

    مراسلے:
    2,294
    ہمارے ایک دوست نے ایک دفعہ کہا تھا
    کل چودھویں کی رات تھی شب بھر رہا چرچا تیرا
    کچھ نے کہا یہ سانڈ ہے کچھ نے کہا چہرا تیرا
    ہم بھی وہیں موجود تھے ہم سے بھی سب پوچھا کئے
    ہم چپ رہے ہم ہنس دئے منظور تھا پردہ تیرا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
  3. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    34,521
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    سمت کے کسی اگلے شمارے میں ایک فیچر کا خیال آیا ہے۔ چار رنگ۔۔ اسی زمین میں ابنِ انشا، ان کے دوست خلیل الرحمن اعظمی، ان دونوں کی یاد میں میری ایک غزل، اور دلاور فگار کی یہ مزاحیہ غزل۔۔ یہ چار رنگ سجائے جائیں گے۔ بلکہ ممکن ہوا تو آدیو وویڈی لنکس بھی ابنِ انشاء کی غزل کے۔ ہیں کسی کے پاس یو ٹیوب میں؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
  4. شاہ حسین

    شاہ حسین محفلین

    مراسلے:
    2,901
    بہت خوب جناب نہایت عمدہ شراکت ہے
     
  5. محمداحمد

    محمداحمد لائبریرین

    مراسلے:
    22,243
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amazed
    واہ! :)

    لاجواب انتخاب ہے۔
     
    • متفق متفق × 1

اس صفحے کی تشہیر