آپ کا پسندیدہ شخص

نور وجدان نے 'گپ شپ' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ستمبر 18, 2020

  1. احمد محمد

    احمد محمد محفلین

    مراسلے:
    471
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    نہیں ناں۔۔ لڑی کے جاری کنندہ اس کے تعین کے جملہ حقوق محفوظ رکھتے ہیں۔ ہم آپ تو دائرہ کار وضع کرنے کی درخواست کر سکتے ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  2. احمد محمد

    احمد محمد محفلین

    مراسلے:
    471
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    شاہ صاحب! آپ نے برا مانا؟ یقین جانئے، خالصتاً محبت والا مذاق کیا تھا۔ :rose:
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  3. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    13,601
    جھنڈا:
    Pakistan
    برا مناتے تو سرگوشی میں بھی نہ ہنستے!!!
     
    • دوستانہ دوستانہ × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. نور وجدان

    نور وجدان مدیر

    مراسلے:
    6,341
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    میری پسندیدہ شخصیت میری ماں ہیں، جن کے بغیر میں نامکمل ہوں
    پسندیدہ میں ہر وہ شخص ہے جس نے مجھے، میری ذات کو مکمل کرنے میں مدد دی ہو ...

    ذات: میں: اس سے مراد میں نہیں بلکہ ایک ایسی قوت ہے جس نے مجھے زیر کردیا ہے اور میں نے تسلیم کرلیا ہے اور چونکہ اس چیز کا منبع میری ذات ہے اس لیے مجھے خود سے محبت ہے! یہ محبت تقسیم ہوتی ہے اور یہاں میں یعنی میری ذات دینے کی سعی میں ہے مگر یہ ہرگز توصیف نہیں اپنی کی کہ میری انا بھی سلامت ہے! میں نے اس لیے پسندیدگی کی بات کی! اس محبت نے مجھے ہر اچھے خیال سے محبت کرنے کی جانب بلایا ہے. ہر انسان سافٹ وئیر کے لحاظ سے خیال ہے اور ذات ہے. ذات ایک ہے تو گویا محبت میں خود سے کر رہی ہوں. غیر کوئی ہے ہی نہیں. اس لیے نرگیست اور ذات سے محبت میں فرق آجاتا ہے


    آپ نے بھی بات کی کھال اتار ڈالی:) اب آپ بتائیے:)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  5. سیما علی

    سیما علی لائبریرین

    مراسلے:
    7,916
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    میری دونوں پسندیدہ شخصیت اس دنیائے فانی سے کوچ کر چکی ہیں
    پہلی شخصیت میرے والد کی ہے ۔مالک اُنکے درجات بلند فرمائے۔۔۔آمین
    دوجہانوں کے مالک ! میرے اباّ جان کو اپنے فرمابردار اور محبوب لوگوں کی صف میں شامل فرمادے۔
    ان کو جنت الفردوس میں اعلٰی مقام سے نوازیں۔آمین۔
    میری اُردو ادب سے محبت اُن سے ورثے میں ملی ہے ۔میرا یہ شوق اُنکی کتابوں سے سے شروع ہوا اور آخری سانسوں تک رہے گا۔
    وہ بھی تو مِٹے ،جانِ جہاں نام تھا جن کا
    یہ نظمِ جہاں پھر بھی تو،برہم نہیں ہوتا!!!
    دوسری شخصیت میرے اُستادِ محترم جناب ارشد جاوید صاحب
    ہمارے ٹرئیننگ ڈویژن کے ہیڈ اور تمام ٹرینیز کی ہر دل عزیز شخصیت ۔پسندیدگی کی وجہ اُنکی اُردو ادب سے محبت۔بینکنگ انڈسٹری کے بارے میں قدم قدم پہ رہنمائی۔
    کوئی بھی کچھ جانتا ہے تو معلم کے طفیل
    کوئی بھی کچھ مانتا ہے تو معلم کے طفیل
    گر معلم ہی نہ ہوتا دہر میں تو خاک تھی
    صرف ادراکِ جنو ںتھا اور قبا ناچاک تھی
    پرودگار اگلے جہاں میں اُنکے لیے آسانیاں فرما۔اللّہکریم کے حضور دعا ہے وہ انکی مغفرت فرمائےاور درجات بلند فرمائے آمین۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  6. نور وجدان

    نور وجدان مدیر

    مراسلے:
    6,341
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    مدوون!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    ویسے اگر غور کیا جائے تو حقیقت یہی ہے کہ انسان کے لیے سب سے پسندیدہ شخصیت خود اسی کی ذات ہوتی ہے؛ کیونکہ اپنی ذات کے احساسات و جذبات کی تسکین کے لیے ہی وہ کسی کو پسندیدہ قرار دیتا ہے اور کسی کو ناپسندیدہ، کسی پر اپنا سب کچھ نچھاور کر دیتا ہے اور کسی سے سب کچھ بچا کر کنارہ کرتا ہے۔
    دینی یا دنیاوی ہر دو لحاظ سے اگر کسی کو پسند کرے تو اس کی ذات و صفات اور کردار کی وجہ سے پسند کرتا ہے یعنی اپنی ذات میں وہی کچھ دیکھنا چاہتا ہے۔
    ہر انسان اپنی دنیا خود ہی ہے، اپنا پسندیدہ بھی خود ہی اور اپنا دوست بھی خود ہی، اپنا دشمن بھی خود ہی اور اپنے آگے گڑھے کھودنے والا بھی خود ہی ، اسی اپنی دنیا میں جیتے جیتے ایک دن اس کی دنیا ختم ہوجاتی ہے یعنی اس کی قیامت تو واقع ہو گئی نا!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 2
  8. احمد محمد

    احمد محمد محفلین

    مراسلے:
    471
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    آمین
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  9. سیما علی

    سیما علی لائبریرین

    مراسلے:
    7,916
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    جیتی رہیے اور آپکو پتہ ہے کہ ہم آپکو کتنا پسند کرتے اور کتنا پیار کرتے ہیں :redheart::redheart::redheart::redheart::redheart:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  10. نور وجدان

    نور وجدان مدیر

    مراسلے:
    6,341
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    محبتیں نثار کرنے میں، پیار دینے میں کون ثانی آپکا یہاں؟ آپ کی اس قدر محبت سرشار کرتی ہے:)
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • متفق متفق × 1
  11. سیما علی

    سیما علی لائبریرین

    مراسلے:
    7,916
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    :in-love::in-love::in-love::in-love::in-love:
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  12. نور وجدان

    نور وجدان مدیر

    مراسلے:
    6,341
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    آپ بہت کم آتی ہیں مگر متاثر کن باتیں کرتی ہیں!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  13. بابا-جی

    بابا-جی محفلین

    مراسلے:
    552
    مُجھے وہی شخصیات پسند ہیں جن میں تصنع نہ ہو جیسا کہ مستنصر حُسین تارڑ، جیسا کہ گُلزار، جیسا کہ اُستاد دامن اور اسی قبیل کے اور بہت سے افراد۔ ایک طویل فہرست ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  14. نور وجدان

    نور وجدان مدیر

    مراسلے:
    6,341
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    استاد دامن؟ طویل فہرست دیجیے اور کیوں کا جواب بھی
    ادبی لوگوں کے علاوہ ملنے جلنے والوں میں؟
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  15. نور وجدان

    نور وجدان مدیر

    مراسلے:
    6,341
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    بہت عمدہ کہانی کار ہیں آپ!
    ان کی شخصیت، جن سے آپ متاثر وجہ کیا تھی
    وجہ آپ نے جو لکھی وہ سطحی سی ہے مطلب شخصیت بہت پسند ہے تو وجہ تو خاص ہو
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  16. بابا-جی

    بابا-جی محفلین

    مراسلے:
    552
    اُستاد دامن پنجابی زبان کے شاعر تھے، اُنہیں پنجابی زبان کا حبیب جالب سمجھ لیجیے۔ ملنے جلنے والوں میں افتخار عارف، مگر وہ بھی کبھی کبھار نرگسیت کا شکار ہو جاتے ہیں۔ لیکن اُن سے مُتاثر ہوئے بغیر نہ رہ سکا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  17. ام اویس

    ام اویس محفلین

    مراسلے:
    2,035
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    باتوں میں تاثیر بھی ایک ردعمل ہے ہر نفس ایک آئینہ ہے جس میں اپنا ہی عکس جھلکتا ہے۔
    خوش رہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  18. شمشاد

    شمشاد لائبریرین

    مراسلے:
    205,149
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    نور میں کہانی کار نہیں ہوں۔ ایک حقیقت بیان کی تھی۔
    شخصیت ان دونوں اساتذہ کرام کی بہت ہی متاثر کُن تھی۔ لطیف صاحب مرحوم بہت ہی شفیق انسان تھے، بہت دفعہ اکیلے میں بھی ان سے علم حاصل کرنے کے لیے ملاقات ہوئی، کبھی انہوں نے بُرا نہیں منایا تھا نہ کبھی کوئی بہانہ بنایا کہ مصروف ہوں، پھر کسی وقت آنا، وغیرہ وغیرہ۔ حالانکہ مختلف کلاسوں کو پڑھانے کے علاوہ بحثیت پرنسپل ان کی کئی ایک اضافی ذمہ داریاں بھی تھیں۔ کالج کی ہر دلعزیز شخصیت تھے۔

    مسعود صاحب ماشاء اللہ تو ایسے بندے کو ڈھونڈھتے تھے کہ کوئی ان سے کوئی سوال پوچھے، نصاب سے تعلق رکھتا ہو یا غیر نصابی ہو۔ پھر جو علم کا دریا بہتا تھا، سُننے والا اس میں بہتا ہی چلا جاتا تھا۔ اور اس سے باہر نکلنے کےلیے بالکل بھی ہاتھ پاؤں نہیں مارتا تھا۔

    ان دونوں کو پسند کرنے کی وجہ بالکل بھی سطحی نہیں بلکہ خاص الخاص ہے۔
     
    • زبردست زبردست × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  19. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    14,432
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    مجھے اپنے ماسٹرز کے دور میں اپنے ایک استاد سر سلیم بٹ صاحب بہت پسند تھے۔ ان کی شخصیت، ان کا گفتگو کا انداز، ان کی گفتگو، ان کی چار زبانوں میں بات چیت۔۔۔۔ اور ان کی محبت۔ وہ محبت کے آدمی تھے۔ بہت رومانوی شخصیت تھی ان کی۔ انھیں سڑک سے بھی محبت ہو جاتی تھی۔ رومانویت کو اگر کوئی صحیح سے سمجھتا ہو تو سر سلیم بٹ کو سمجھنا آسان ہو گا۔
    جب وہ کوئی واقعہ بیان کرتے تو سننے والا کھو جاتا۔۔۔ ایک بار حضرت بلال حبشی رضی اللہ تعالیٰ عنہ کا اذان والا واقعہ بیان کیا اور رلا دیا۔
    وہ جہاں بھی ہوں، اللہ انھیں خوشیاں اور آسانیاں دے۔ زندہ ہوں تو اچھی صحت والی زندگی دے اور اگر اللہ کے پاس جا چکے ہوں تو وہاں انھیں اونچے درجات عطا فرمائے۔ آمین!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  20. وقار علی ذگر

    وقار علی ذگر محفلین

    مراسلے:
    310
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    میری پسندیدہ شخصیت میرے والد محترم (اللہ مغفرت فرمائے) ہیں۔ اُن کا ہر ایک عمل اپنی مثال آپ تھا۔ میرے رازداں، دوست، اُستاد وہ میرے سب کچھ تھے۔ بقول احمد فراز صاحب کے کہ " ہر کوئی اُسے سراہتا ہے" ۔ اُنکی شخصیت ایسی تھی کہ کوئی اُن سے متاثر ہوئے بغیر نہیں رہ سکتا تھا۔ سات زبانوں پر عبور حاصل تھا جس میں (مادری زبان پشتو کے علاوہ، قومی زبان اُردو ، انگلش، عربی، فارسی ، پنجابی اور سرائیکی) ۔انھوں نے اپنی پوری زندگی نشیب و فراز میں گزاری لیکن کبھی نا اُمید نہ ہوئے۔ ہر وقت اللہ کا شکر ادا کرتے اور کہتے "یا اللہ تونے جس حال میں بھی رکھا ہے، اچھا رکھا ہے اس میں ہی ہماری بھلائی ہوگی"۔
    اُنکی وفات کے بعد میرے سر سے صرف والد کا سایہ نہیں اُٹھا بلکہ میں ایک رازدان ، ایک بہترین دوست ، ایک شفیق اُستاد سے محروم ہوگیا ہوں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر