آج کی دلچسپ خبر!

محمد عدنان اکبری نقیبی نے 'آج کی خبر' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏دسمبر 22, 2017

  1. فاخر رضا

    فاخر رضا محفلین

    مراسلے:
    2,784
    محرم کے ساتھ سفر ایک administrative حکم ہے. زمانہ قدیم میں اور قرون اولی' میں بھی خواتین سفر کرتی تھیں. اسکا کسی مسلک سے تعلق نہیں. حج تو ویسے بھی ایک واجب یا فرض ہے جس میں کسی کی بھی اجازت کی ضرورت نہیں
    خواتین کو ان دیکھی زنجیروں میں باندھنا اصلاً غیر انسانی سلوک ہے کجا کہ اسکا تعلق اسلام یا کسی مسلک سے ہو. مردوں کو اسکا کوئی حق نہیں کہ وہ عورت کو، جو کہ ایک انسان ہے، قید میں رکھے اور اسے باہر نکلنے کے لئے اجازت کا پابند بنائے
    یہ ایک انسانی مسئلہ ہے بھائی فہد اشرف
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • متفق متفق × 1
    • غمناک غمناک × 1
  2. لئیق احمد

    لئیق احمد معطل

    مراسلے:
    12,179
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    یہ بھی جاوید احمد غامدی کا فتوی ہے؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • مضحکہ خیز مضحکہ خیز × 1
  3. فاخر رضا

    فاخر رضا محفلین

    مراسلے:
    2,784
    میں جاوید غامدی کا نہ تو مقلد ہوں نہ ہی اسے قابل تقلید سمجھتا ہوں. مجھے جو بات logical لگتی ہے کر دیتا ہوں. مجھے تو ابھی تک سیدھے راستے کی تلاش ہے. روزانہ اھدنا الصراط المستقیم پڑھتا ہوں. بچپن جس ماحول میں گزرا اس کی وجہ سے ایک فرقے سے تعلق رکھتا ہوں مگر جہاں ان پر تنقید کی ضرورت ہو اور اصلاح کی امید ہو وہاں ضرور بات کرتا ہوں، یا وہ سمجھ جاتے ہیں یا مجھے سمجھاتے ہیں. اسی محفل میں پتہ نہیں کتنی مرتبہ اپنی رائے سے رجوع کیا ہے. سوال اٹھانا اور برین اسٹورمنگ ضروری ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 1
  4. لئیق احمد

    لئیق احمد معطل

    مراسلے:
    12,179
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    فاخر بھائی لوجک کو اختیار کرنا یقینا اچھی بات ہے مگر شرعی احکامات کی جب بات آئے تو سب سے پہلے قرآن و سنت پھر اجماع اور پھر مجتہد کے اجتہاد کو دیکھا جاتا ہے ۔ یہی شرعی حکم کو جاننے کے ذرائع ہیں، ان ذرائع کو دیکھے بغیر محض اپنی منطق سے شرعی فیصلہ کرلینا گمراہی کی طرف لے جاتا ہے۔ عورت کے سفر کی مثال ہی لے لیجئے عورت کے محرم کے ساتھ سفر کا حکم حدیث پاک میں ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • مضحکہ خیز مضحکہ خیز × 1
  5. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    17,899
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    لاڈلا تو وہ ہے ،جسے ضیا دور میں پالا گیا ، عمران خان

    تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا ہے کہ سانحہ ماڈل ٹائون کے معاملے پر پی ٹی آئی طاہرالقادری کے ساتھ کھڑی ہے ،ڈکٹیٹر کی گود میں پلنے والے آج ہمیں جمہوریت کا درست دیتے ہیں۔
    مکمل خبر کے لیے کلک کریں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  6. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    17,899
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    مولی سے بنے منفرد شاہکاروں کی نمائش

    میکسیکو میں120واں سالانہ دلچسپ میلہ،مولی سے بنے منفرد شاہکار نمائش کیلئے پیش کئے گئے۔ہر سال کی طرح اس سال بھی میکسیکو میں 120ویں سالانہ مولی میلے کا انعقاد کیا گیا جہاں مقامی آرٹسٹوں کے مولی سے تیار کئے گئے منفرد اور دلفریب مجسمے نمائش کے لئے پیش کیے گئے۔

    مولی سے بنائے جانے والے ان دیدہ زیب مجسموں کوانتہائی صفائی اور نفاست سے عظیم انسانوں ، اہم مقامات اور جانوروں کی اشکال میں ڈھالا جاتا ہے جوحقیقت سے قریب تر معلوم ہوتے ہیں۔

    [​IMG]

    اس دلچسپ میلے کا آغاز امریکہ میں مولی کی فروخت بڑھانے کے لئے سو سال قبل کیا گیا تھا جو اب ایک روایت کی صورت اختیار کر گیا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  7. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    17,899
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    مختلف بیماریوں میں مبتلا بچے’سپر ہیروز‘ کے روپ میں

    [​IMG]

    امریکہ کے ایک فوٹوگرافر نے مختلف بیماریوں سے لڑتے چھ ننھے بچوں کو سپر ہیروز کے روپ میں ڈھال کر ان کا فوٹو شوٹ کیا جسے بے حد پسند کیا گیا ہے۔
    ڈیلی میل کے مطابق ’جوش روسی‘ نامی امریکی فوٹوگرافر نے مختلف بیماریوں میں مبتلا چھ بہادر بچوں کو ہالی ووڈ کی مشہور زمانہ فلم جسٹس لیگ کے کرداروں میں تبدیل کر کے انہیں ایک نئے انداز میں اپنی بیماری سے لڑتے دکھایا۔
    ان بچوں میں دو سے نو سال تک کی عمر کے بچے شامل ہیں جنہوں نے ’ونڈر ویمن‘، ’سپر مین‘، ’بیٹ مین‘اور دیگر جسٹس لیگ کے کرداروں کا روپ دھارا ہواہے۔

    [​IMG]

    ڈیلی میل سے بات کرتے ہوئے جوش روسی کا کہنا تھا کہ جب انہوں نے شوٹ شروع کیا تو کچھ بچے بیمار اورکم دلچسپی لیتے نظر آئے لیکن جیسے ہی بچوں نے سپر ہیروز کے ملبوسات زیب تن کیے تو ان کے چہرے خوشی سے کھل اٹھے اور وہ پوری طرح اس کردار میں ڈھل گئے۔
    جوش نے مزید بتایا کہ سپر ہیروز کے روپ میں بچوں کا فوٹو شوٹ کرنے کا خیال انہیں اس وقت آیا جب وہ اپنی چار سالہ بیٹی کی سالگرہ پر اسے ونڈر ویمن کے کاسٹیوم میں تیار کر رہے تھے۔
    ان چھ بچوں کی تصاویر وائرل ہونے کے بعد جوش کو امریکہ بھر سےلوگ ایسی ہی تصویریں بنوانے کی درخواست کر رہے ہیں جبکہ جوش اور ان کی اہلیہ نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ اپنی صلاحیتوں کا استعمال صرف متاثرہ بچوں کے لیے کریں گے۔

    [​IMG]

    ان بہادر بچوں میں ایک تین سالہ صوفی نامی بچی شامل ہے جو آنکھوں کے سرطان جیسے مرض میں مبتلا ہے۔ فوٹوشوٹ کروانے سے قبل وہ بہت گھبرا رہی تھی لیکن ونڈر ویمن کا لباس پہنتےہی وہ اپنے آپ کو اصل ونڈر ویمن سمجھنے لگی۔

    کیڈن، ایک ایسی بیماری کا شکار ہے جس میں جسم کے اندرونی اعضاباہر کی جانب بڑھنے لگتے ہیں ایسی صورتحال میں کیڈن کی ماں نے اپنے بچے کی ٹانگیں کٹوانے کا فیصلہ کیا تاکہ اس کی جان بچائی جاسکے۔

    [​IMG]

    پانچ سالہ کیڈن نے سائبرگ کا روپ اپنایا۔ سائبرگ وہ کردار ہے جو ایک خوفناک حادثے میں اپنی ٹانگیں کھو دیتا ہے جس کے بعد اس کے والد اسے مصنوعی ٹانگیں لگواتے ہیں۔

    [​IMG]

    سپر مین کا کردار ٹیگن نامی بچے نے بخوبی نبھایا، یہ نو سالہ بچہ ہے جو نامکمل دل کے ساتھ اس دنیا میں آیا۔ اب تک ٹیگن کی تین بار اوپن ہارٹ سرجری ہوچکی ہے اور ڈاکٹروں کے مطابق اب اس کی حالت پہلے سے کافی بہتر ہے۔

    [​IMG]

    سات سالہ زیدن نامی بچہ ’اے ڈی ایچ ڈی‘ کا شکار ہے۔ اس کو بھاگنے دوڑنے کا بے حد شوق تھا لیکن بیماری نے اس کا یہ شوق پورا نہ ہونے دیا۔ جوش کا کہنا تھا کہ زیدن کے اس شوق کو مدد نظر رکھتے ہوئے اسے ’دا فلیش ‘ کا کردار دیا۔

    [​IMG]

    کنسر کے مرض میں مبتلا دو سالہ بچے کی’ ایکوا مین‘ کے روپ میں تصویروں نے سب کو حیران کردیا۔ متائسی نامی بچے نے فوٹو شوٹ کے دوران ثابت کردیا کہ وہ واقعی کسی سپر ہیرو سے کم نہیں ہے۔

    [​IMG]

    پانچ سالہ سمن نے ’بیٹ مین‘ کا کردار بنھایا جبکہ وہ دماغ کے سرطان جیسے مرض میں مبتلا ہے۔

    ان چھ ننھے سپر ہیروز کو فوٹوشوٹ کے بعد نیو یارک بھیجا گیا جہاں انہوں نے کامک کان فیسٹیول میں تمام جسٹس لیگ کے کرداروں سے ملاقات کی جن کا روپ وہ دھارے ہوئے تھے۔
    کومل زیدی[​IMG]
     
    • زبردست زبردست × 3
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  8. عبید انصاری

    عبید انصاری محفلین

    مراسلے:
    2,461
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    چھ کا تو آپ نے تفصیل سے بتا دیا ہے لیکن یہ کومل زیدی کون سی ہیروئین ہے؟ اس کا تعارف بھی کروا دیں.
     
    • پر مزاح پر مزاح × 8
  9. خالد محمود چوہدری

    خالد محمود چوہدری محفلین

    مراسلے:
    11,610
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    (1)حنفی مسلک
    احناف کے نزدیک عورت تین دن رات کی مسافت کا سفر صرف شوہر یا محرم کےساتھ کر سکتی ہے ۔
    حنبلی مسلک
    اگر محرم موجود نہ ہو توعورت پر حج قرض نہیں ہے ۔ ان کے نزدیک اگر فرض حج کے سفر کے دوران محرم فوت ہو جائے توعورت سفر جاری رکھ کر فرض حج ادا کرلے ۔ مگر نفلی حج میں اسے وہیں رک جانا چاہیے بشرطیکہ رکنا ممکن ہو ۔ لیکن امام احمد سے ایک دوسری روایت یہ ہے کہ سفر حج کے سفر میں عورت کے لئے محرم کی شرط نہیں ہے وہ دوسری قابل اعتماد عورتوں کے ساتھ جا سکتی ہے ۔ (فیاللعجب ، اپنےہی موقف کے خلاف فتویٰ)
    (فتاویٰ شرعیہ ۔ للشیخ حسنین مخلوق)
    شافعی مسلک
    ان کےنزدیک عورت کے فرض حج کے لیے محرم کی موجودگی کسی صورت میں شرط نہیں ہے ۔ وہ قابل اعتماد ساتھیون کے ساتھ یا عورتوں کی جماعت کے ساتھ حج کے لیے جا سکتی ہے بشرطیکہ اسے اپنی ذات کے بارے میں حفاظت کی پوری تسلی ہو ۔
    البتہ نفی حج میں محرم یا خاوند کے بغیر جانے کی اجازت نہیں ۔
    مالکی مسلک
    ان کےنزدیک قابل اعتماد ساتھیوں کے ساتھ حج پر جا سکتی ہے اگر اس کے شہر او رمکہ کے درمیان ایک دن رات کی مسافت ہو ۔ امام مالک کےبقول عورت حج کےلئے عورتوں کی جماعت کے ساتھ جا سکتی ہے ۔
    امام نخعی ، امام حسن بصری ، امام سفیان ثوری ، امام اسحاق کے نزدیک عورت کے لیے محرم کا ہونا 'استطاعت حج' میں داخل ہے ۔ وہ محرم کے بغیر سفر حج نہیں کر سکتی ۔
    آج کل خواتین اپنے محرم کے بغیر عورتوں کے قافلے میں حج کے لئے چلی جاتی ہیں اور اس کےلئے دلیل یہ دی جاتی ہے کہ ازواج مطہرات نےحضرت عمر کے دور خلافت میں حضرت عمر کیاجازت سے جو حج کیا اس میں ان کےہمراہ کوئی محرم نہیں تھا اور حضرت عمر نے حضرت عثمان اور حضرت عبد الرحمن بن عوف کوازواد مطہرات کےہمراہ بھیجا تھا ۔ حضرت عثمان یہ منادی کرتے تھے کہ ''خبردار ! کوئی شخص امہات المومنین کے قریب نہ جائے اور نہ ان کی طرف دیکھے۔''
    علماء اس بات کا یہ جواب دیتے ہیں کہ امہات المومنین تو مومنوں پر حرام کر دی گئی ہیں ۔ وہ سب مومنوں کی مائیں ہیں ۔ حضرت عثمان اور حضرت عبدالرحمن بن عوف کے لیے بھی وہ مائیں ہی تھیں ۔ یہ روایت عام خواتین کے لئے جواز نہیں بن سکتی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. فاخر رضا

    فاخر رضا محفلین

    مراسلے:
    2,784
    کیا میں ان اماموں کے درمیان اپنے پسند سے امام چن سکتا ہوں، جس کا مسئلہ آسان ہو
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  11. عبید انصاری

    عبید انصاری محفلین

    مراسلے:
    2,461
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    اس میں آپ اس مسلک کو اختیار کر لیں جو آپ کو دلیل سے مضبوط معلوم ہو. چاہے آپ کو مشکل ہی لگے. :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • متفق متفق × 1
  12. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    25,554
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    یہ آپ نے مغلِ اعظم اکبر والی بات کہی ہے۔ اُس کو ایک مسئلے میں دشواری تھی، درباری ملا نے مشورہ دیا کہ حنفی قاضی کو بدل کر مالکی قاضی کو رکھ لو اور اُس سے فتویٰ لے لو جس سے وہ دشواری حل ہو جاتی تھی سو اُس نے ایسا ہی کیا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  13. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    17,899
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    کلبھوشن کی اہلیہ کے جوتوں میں کچھ مشکوک محسوس ہوا، دفترخارجہ

    ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ کلبھوشن یادیو کی اہلیہ کے جوتوں میں کچھ مشکوک محسوس ہوا جس کی وجہ سے جوتا واپس نہیں کیا گیا۔ کلبھوشن کی اہلیہ کے جوتے کی چھان بین کی جا رہی ہے، کلبھوشن کی اہلیہ کو متبادل جوتا فراہم کردیا گیا تھا،مشکوک ہونے پر جوتے کی تحقیق کی جا رہی ہے جبکہ کلبھوشن کی اہلیہ کا تمام سامان اور جیولری واپس کر دی گئی تھی۔

    [​IMG]

    ترجمان کا کہنا ہے کہ شک کی بنیاد پر کلبھوشن کی اہلیہ کا صرف جوتا رکھا گیا ہے، کلبھوشن یادیو کی اہلیہ کے جوتے میں میٹل کی کوئی چیز تھی، میٹل کی انکوائری کی جا رہی ہے کہ وہ ریکارڈنگ چِپ تھی یا کیمرہ ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  14. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    17,899
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  15. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    17,899
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
  16. لئیق احمد

    لئیق احمد معطل

    مراسلے:
    12,179
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    اگر کوئی آسان مسئلہ دیکھ کر مسلک اختیار کریگا تو اس کا مطلب یہ ہوا کہ وہ نفس کی پیروی کر رہا ہے، رب کریم کی خوشنودی کی نہیں ۔ ہونا یہ چاہئیے کہ آئمہ اربعہ میں سے کسی ایک کا مسلک اختیار کیا جائے اور اس کی وجہ یہ ہو کہ ان کے دلائل آپ کو قرآن و سنت کے مطابق زیادہ درست لگتے ہوں۔
     
    • متفق متفق × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  17. لئیق احمد

    لئیق احمد معطل

    مراسلے:
    12,179
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    اس طرح کی خبریں واقعی دلچسپ خبروں کی کیٹیگری میں آتی ہیں، باقی سیاسی خبریں تو اس کھاتے میں عجیب سی لگتی ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
    • متفق متفق × 1
  18. سردار محمد نعیم

    سردار محمد نعیم محفلین

    مراسلے:
    1,836
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Aggressive
    [​IMG] ا مرزاغالب کی 220ویں سالگرہ پرزبردست خراج تحسین
    27/December/2017, 09:03express.pk

    اردو کے عظیم شاعر مرزا غالب 15فروری 1869 کو دہلی میں جہان فانی سے کوچ کرگئے

    لاہور: گوگل نے اردو کے عظیم شاعرمرزااسداللہ خان غالب کی 220 ویں سالگرہ کے موقع پر انہیں زبردست خراج تحسین پیش کرتے ہوئے ڈوڈل متعارف کرادیا۔

    مرزا غالب 27 دسمبر 1797 کو آگرہ میں پیدا ہوئے۔ 5 سال کی عمر میں والد کی وفات کے بعد غالب کی پرورش چچا نے کی تاہم 4سال بعد چچا کا سایہ بھی ان کے سر سے اٹھ گیا۔ مرزا غالب کی13 سال کی عمرمیں امرا بیگم سے شادی ہو گئی جس کے بعد انھوں نے اپنے آبائی شہرکو خیر باد کہہ کر دہلی میں مستقل سکونت اختیارکرلی۔

    دہلی میں پرورش پانے والے غالب نے کم سنی ہی میں شاعری کا آغاز کیا۔ غالب کی شاعری کا انداز منفرد تھا، جسے اس وقت کے استاد شعرا نے تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ ان کی سوچ دراصل حقیقی رنگوں سے عاری ہے۔

    دوسری طرف غالب اپنے اس انداز سے یہ باور کرانا چاہتے تھے کہ وہ اگر اس انداز میں فکری اور فلسفیانہ خیالات عمدگی سے باندھ سکتے ہیں تو وہ لفظوں سے کھیلتے ہوئے کچھ بھی کر سکتے ہیں۔ غالب کا اصل کمال یہ تھا کہ وہ زندگی کے حقائق اورانسانی نفسیات کو گہرائی میں جاکر سمجھتے تھے اور بڑی سادگی سے عام لوگوں کے لیے اپنے اشعار میں بیان کردیتے تھے۔ غالب پہلے شاعر تھے جنہوں نے اردو شاعری کو ذہن عطا کیا، غالب سے پہلے کی اردو شاعری دل و نگاہ کے معاملات تک محدود تھی، غالب نے اس میں فکر اور سوالات کی آمیزش کرکے اسے دوآتشہ کردیا۔

    اردو کے عظیم شاعر مرزا غالب 15 فروری 1869 کو دہلی میں جہان فانی سے کوچ کرگئے، لیکن جب تک اردو زندہ ہے ان کا نام بھی جاوداں رہے گا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • معلوماتی معلوماتی × 2
  19. محمد عدنان اکبری نقیبی

    محمد عدنان اکبری نقیبی محفلین

    مراسلے:
    17,899
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    بھارت: 98 سالہ شخص نے ایم اے کا امتحان پاس کرلیا۔
    [​IMG]
    بھارتی ریاست بہار کے رہائشی راج کمار ویشیہ نے 98 سال کی عمر میں ایم اے معاشیات کا امتحان پاس کرکے سب کو حیران کردیا۔
    میڈیا رپورٹس کے مطابق ویشیہ کا تعلق ضلع پٹنا سے ہے ،انہوں نے یہ امتحان نالندہ اوپن یونیورسٹی سے پاس کیاہے۔
    ویشیہ نے 1934 میں میٹرک جبکہ 1938 میں گریجویشن کا امتحان پاس کیا تھا ویشیہ کا کہنا ہے کہ اس نے اپنا خواب پورا کیا ہے اب وہ ایک ماسٹرز ڈگری رکھتے ہیں اور نوجوانوں کو پیغام دیتے ہیں کہ انہیں کبھی بھی مشکلات سے ہار نہیں ماننی چاہئے ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • زبردست زبردست × 2
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  20. لئیق احمد

    لئیق احمد معطل

    مراسلے:
    12,179
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool

اس صفحے کی تشہیر