A Roadmap to End Aging

الف نظامی نے 'سائنس اور ٹیکنالوجی' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 23, 2020

  1. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    16,112
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    آخری تدوین: ‏مارچ 23, 2020
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  2. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    16,112
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused

     
    آخری تدوین: ‏مارچ 23, 2020
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  3. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    23,837
    بڑھاپا ہر جاندار میں ایک فطرتی پراسیس کا نام ہے۔ کیا آپ کا دین و مذہب یا اخلاق فطرت کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کی اجازت دے گا؟
     
  4. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    16,112
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    وَلَتَجِدَنَّهُمْ اَحْرَصَ النَّاسِ عَلٰى حَيَاةٍۚ وَمِنَ الَّذِيْنَ اَشْرَكُوْا ۚ يَوَدُّ اَحَدُهُمْ لَوْ يُعَمَّرُ اَلْفَ سَنَةٍۚ وَمَا هُوَ بِمُزَحْزِحِهٖ مِنَ الْعَذَابِ اَنْ يُّعَمَّرَ ۗ وَاللّهُ بَصِيْرٌ بِمَا يَعْمَلُوْنَ [2:96]
    اور آپ انہیں زندگی پر سب لوگوں سے زیادہ حریص پائیں گے، اور ان سے بھی جو مشرک ہیں، ہرایک ان میں سے چاہتا ہے کہ کاش اسے ہزار برس عمرملے، اور اسے عمر کا ملنا عذاب سے بچانے والا نہیں، اور اللہ دیکھتا ہے جو وہ کرتے ہیں۔​
     
    آخری تدوین: ‏مارچ 24, 2020
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  5. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    16,112
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    وَلَتَجِدَنَّهُمْ اَحْرَصَ النَّاسِ عَلٰى حَيَاةٍۚ وَمِنَ الَّذِيْنَ اَشْرَكُوْا ۚ يَوَدُّ اَحَدُهُمْ لَوْ يُعَمَّرُ اَلْفَ سَنَةٍۚ وَمَا هُوَ بِمُزَحْزِحِهٖ مِنَ الْعَذَابِ اَنْ يُّعَمَّرَ ۗ وَاللّهُ بَصِيْرٌ بِمَا يَعْمَلُوْنَ [2:96]
    اور آپ انہیں زندگی پر سب لوگوں سے زیادہ حریص پائیں گے، اور ان سے بھی جو مشرک ہیں، ہرایک ان میں سے چاہتا ہے کہ کاش اسے ہزار برس عمرملے، اور اسے عمر کا ملنا عذاب سے بچانے والا نہیں، اور اللہ دیکھتا ہے جو وہ کرتے ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. عدنان عمر

    عدنان عمر محفلین

    مراسلے:
    1,303
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    ہم ایسے رہے یا کہ ویسے رہے
    وہاں دیکھنا ہے کہ کیسے رہے

    حیات دو روزہ کا کیا عیش و غم
    مسافر رہے جیسے تیسے رہے

    (مولانا سید سلیمان ندوی رحمہ اللہ)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  7. عدنان عمر

    عدنان عمر محفلین

    مراسلے:
    1,303
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  8. زاہد لطیف

    زاہد لطیف محفلین

    مراسلے:
    359
    فطرت نے یا دین و مذہب نے فطرت کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کی کوئی ممانعت کی ہو تو ہمارے علم میں اس بابت اضافہ فرمائیں۔ میری دانست میں زندگی ہے ہی فطرت کے ساتھ اٹکھیلیاں کرنے کا نام۔ سر جھکا کر زندگی گزارنے کو وقت گزارنا کہا جائے تو زیادہ بہتر ہے۔ سر جھکا کر جیا تو پھر کیا جیا؟
    زندگی بڑھانے یا موت کو شکست دینے کی جستجو کرنے میں کوئی مضائقہ نہیں۔ میری دانست میں اگر حضرت انسان کی زندگی کو صدی دو صدی فطری طور پہ بھی بڑھا دیا جائے تو بھی ایک وقت ایسا آنے کے امکانات موجود ہیں جب انسان خود موت کی تمنا کرے۔ :)
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  9. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    16,112
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    دنیا کا ہر انسان جانتا ہے کہ زندگی کی تجدید ہر لمحہ ہوتی رہتی ہے۔ اس تجدید کے ظاہری مادی وسائل ہوا ، پانی اور غذا ہیں لیکن انسانی جسم پر ایک مرحلہ ایسا بھی آتا ہے جب ہوا ، پانی اور غذا زندگی کی تجدید نہیں کر سکتی۔ مادی دنیا میں ایسی حالت کو موت کہتے ہیں۔ جب موت وارد ہو جاتی ہے تو کسی طرح کی ہوا ، کسی طرح کا پانی اور کسی طرح کی غذا آدمی کی زندگی کو بحال نہیں کر سکتی۔ اگر ہوا ، پانی اور غذا ہی انسانی زندگی کا سبب ہوتے تو کسی مردہ جسم کو ان چیزوں کے زندہ کرنا ناممکن نہ ہوتا۔ اب یہ حقیقت بے نقاب ہو جاتی ہے کہ انسانی زندگی کا سبب ہوا ، پانی اور غذا نہیں بلکہ کچھ اور ہے۔
    (لوح و قلم از قلندر بابا اولیاء صفحہ 137)
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  10. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    16,112
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    انسان ایسی زندگی چاہتا ہے جو فنا سے نا آشنا ہو۔ ایسی صحت چاہتا ہے جو بیماریوں سے متاثر نہ ہو۔ ایسی جوانی چاہتا ہے جو بڑھاپے میں تبدیل نہ ہو۔ لیکن ایسا کبھی نہیں ہوا۔ جوانی بڑھاپے میں تندیل ہو جاتی ہے، صحت اور تندرستی کے اوپر بیماریوں کا غلبہ ہوتا رہتا ہے۔ انسان زندگی کے نشیب و فراز سے کتنا ہی فرار چاہے کامیاب نہیں ہوتا۔ اس لیئے کہ دنیا میں کوئی چیز بے ثباتی سے خالی نہیں۔ فنا اور تخریب کا عمل ہر وقت جاری و ساری ہے۔
    انسان کے اوپر جب بے ثباتی کا غلبہ ہوتا ہے تو وہ تکلیف کے بارے میں زیادہ حسّاس ہو جاتا ہے۔ تکلیف اور غم کے عالم میں ایسے ایسے احساسات نمودار ہوتے ہیں جن سے انسان غمگین اور پریشان خیال بن جاتا ہے۔ زندگی کی ساری چمک دمک ماند پڑ جاتی ہے اور شان و شوکت افسردہ ہو کر ٹھٹھر جاتی ہے۔
    انسان پیدائش کے بعد بڑھاپے تک مسلسل ایک جنگ لڑتا ہے۔ وہ ہر حال میں فتح یاب ہو کر سرخرو ہونا چاہتا ہے لیکن بالآخر جیت بڑھاپے کی ہوتی ہے اور ایک وقت ایسا آتا ہے کہ موت بڑھاپے کے اوپر چھآجاتی ہے۔ حیات کی ابتدا کتنی ہی شاندار کیوں نہ ہو، انتہا لازمی طور پر فنا ہے۔ ہر آن اور ہر لمحہ انسان کو موت کی آنکھ گھورتی رہتی ہے۔
     
    • غمناک غمناک × 1

اس صفحے کی تشہیر