کاوون کی آزادی کا پروانہ جاری کردیا گیا: مبارک ہو

محمد خلیل الرحمٰن نے 'ماحولیات' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 22, 2020

  1. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    10,040
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    اسلام آباد کے چڑیا گھر میں قید ہاتھی کی رہائی پر امریکی گلوکارہ خوش - Pakistan - Dawn News

    ہمارے پاکستانی حکمران جن کے نزدیک انسان کے دکھ درد کوئی اہمیت نہیں، جانوروں کے دکھ درد کیا جانیں۔ بہرحال امریکی اداکارہ و گلوکارہ شیر کی سرکردگی میں دنیا کی کوششیں رنگ لائیں۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نے اسلام آباد چڑیاگھر کے جانوروں خاص طور پر کاوون نامی ہاتھی کی بہتر جگہ پر منتقلی کے احکامات جاری کردئیے۔

    ابھی حال ہی میں کسی محفلین نے اسلام آباد چڑیاگھر کی سیر کا حال لکھا تھا اور ہاتھی کے غصے کا بھی تذکرہ کیا تھا۔ جانور یونہی غصہ نہیں کرتے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • زبردست زبردست × 3
  2. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    10,040
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    [​IMG]
    عدالت نے کاوون کو 30 دن میں محفوظ مقام پر منتقل کرنے کا حکم دیا—فوٹو: اے ایف پی



    کاوون ہاتھی کو سری لنکا نے 1985 میں تحفے کے طور پر پاکستان کو دیا تھا اور اس وقت اس کی عمر محض ایک سال تھی۔
     
    • زبردست زبردست × 2
  3. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    10,040
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    Cher (@cher) Tweeted:
    MY AMAZING PARTNER IN
    “FREE THE WILD”DID IT‼️
    MARK COWNE DID IT‼️
    GINA DID IT‼️
    ZOOBS DID IT‼️
    JEN DID IT‼️
    I HELPED,
    BUT MARKACTUALLY DID IT
    “ON HIS”‼️
    CANT BELIEVE THIS ,
    WE’VE BEEN TRYING SO LONG...BUT MARK IS A GIANT OF A MAN.. HE NEVER GAVE UP
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. مریم افتخار

    مریم افتخار مدیر

    مراسلے:
    5,181
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    خیر مبارک!
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  5. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    10,040
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. جا ن

    جا ن محفلین

    مراسلے:
    307
    چلیں کسی کو تو آزادی نصیب ہوئی، حیوان ہی سہی!
     
    • متفق متفق × 3
  7. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    10,040
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    اسلام آباد کا واحد ہاتھی کمبوڈیا جانے کیلئے آزاد
    ویب ڈیسک 20 جولائ, 2020



    واضح رہے کہ 21 مئی کو اسلام آباد ہائی کورٹ نے قرار دیا تھا کہ مرغزار چڑیا گھر میں نایاب ہاتھی کاون سمیت جانوروں کو جن حالات میں رکھا گیا ہے وہ درد اور تکالیف سے بھرپور اور قوانین کی خلاف ورزی ہے۔

    اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے اسلام آباد وائلڈ لائف منیجمنٹ بورڈ کی میٹروپولیٹن کارپوریشن اسلام آباد (ایم سی آئی) کے خلاف دائر درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئے کاون اور دیگر جانوروں کو دیگر پناہ گاہوں میں منتقل کرنے کا حکم دیا تھا۔


    چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ نے فیصلے میں کہا کہ 'نہ تو مناسب سہولیات فراہم کی گئی ہیں اور نہ ہی جانوروں کو زندہ رہنے کے لیے ان کے رویے، سماجی اور نفسیاتی ضروریات کو پورے کرتے حالات پیدا کیے گئے ہیں۔'

    فیصلے میں کہا گیا کہ مرغزار چڑیا گھر کا واحد ہاتھی کاوون کے ساتھ ظالمانہ سلوک روا رکھا گیا جس کے نتیجے میں وہ گزشتہ تین دہائیوں سے ناقابل تصور تکالیف سے گزر رہا ہے۔

    کاون کی تکلیف کے حوالے سے کہا گیا کہ جن حالات میں اس کو رکھا گیا ہے اس سے حکام کو متعلقہ قانون کے مطابق نتائج کا سامنا کرنا ہوگا۔

    اسلام آباد ہائی کورٹ کے فیصلے میں کہا گیا کہ کاون کی تکالیف، انہیں ملک کے اندر یا باہر کسی محفوظ مقام پر منتقلی سے دور ہوں گی۔


    مزید پڑھیں: وزارت ماحولیاتی تبدیلی کو چڑیا گھر کا انتظام سنبھالنے کی ہدایت

    عدالتی فیصلے کے بعد اسلام آباد کے وائلڈ لائف مینجمنٹ بورڈ کے چیئرمین ڈاکٹر انیس رحمٰن نے 8 رکنی کمیٹی تشکیل دی تھی جسے کاون اور دیگر جانوروں کو منتقل کرنے کے لیے مناسب پناہ گاہوں کی تجاویز پیش کرنے کا ٹاسک دیا گیا تھا۔

    کمیٹی نے ممکنہ مقامات کا جائزہ لینے کے بعد کمبوڈیا میں ہاتھیوں کی پناہ گاہ میں 80 ہاتھی موجود ہیں اور ماہرین کی زیر نگرانی ان کی بہترین دیکھ بھال کی جارہی ہے اور کاون کے لیے بھی یہی سب سے بہترین انتخاب ہوگا۔

    خیال رہے کہ کاوون کو 1985 میں سری لنکا نے پاکستان کو تحفے میں دیا تھا اس وقت ان کی عمر ایک سال تھی اور 30 سے زائد برس تک انہیں تنگ جگہ میں زنجیروں سے باندھ کر رکھا ہوا ہے جہاں کے حالات انتہائی خراب ہیں۔

    مرغزار چڑیا گھر میں کاوون کو ایسی حالت میں رکھا گیا ہے جہاں نایاب جانوروں کو درکار نفسیاتی، سماجی اور رویوں کی ضروریات ناپید ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  8. سیما علی

    سیما علی لائبریرین

    مراسلے:
    9,670
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    خیر مبارک بھائی!!!!!
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  9. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    18,330
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    اس ہاتھی سے دو چار ملاقاتیں رہی ہیں۔ پہلی بار جب اسے جنگلے کے بالکل ساتھ ایک پاؤں میں زنجیر سے بندھا دیکھا تو کچھ دیر کے مشاہدے کے بعد یہ علم ہوا کہ بچے اس کو گنے کا ٹکڑا کھلاتے ہیں جو نگران 15, 20 روپے میں بیچ رہا ہوتا تھا۔

    بالکل نزدیک بندھا ہونے کی وجہ سے بچے اپنے ہاتھ سے گنا دے کر خوش ہوجاتے اور نگران کی اچھی خاصی دیہاڑی بن جاتی۔ لگاتار جانور کو ایک ہی جگہ پر کچھ روپوں کی خاطر بندھا ہوا دیکھ کر تکلیف تو ہوئی لیکن نقار خانے میں۔۔۔ وغیرہ وغیرہ۔

    یہ ایک اچھا فیصلہ ہے۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • متفق متفق × 1
  10. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    10,040
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
  11. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    10,040
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
     
    • زبردست زبردست × 1
  12. بابا-جی

    بابا-جی محفلین

    مراسلے:
    742
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Doubtful
    شکر ہے، شکر ہے۔ میں پہلی نظر میں عنوان سے یہ سمجھا، شاید سری لنکا یا کمبوڈیا میں کسی جزیرہ ٹائپ اسٹیٹ نے آزادی کا اعلان کر دیا ہے۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  13. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    10,040
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    گلوکارہ چیر نے کمبوڈیا جانے کو تیار ہاتھی کاوون کیلئے گانے تیار کرلیے
    انٹرٹینمنٹ ڈیسک 29 اکتوبر 2020
    Facebook Count
    Twitter Share
    0
    Translate
    [​IMG]
    کاوون کا علاج کرنے کی غرض سے اسے 30 ستمبر کو کمبوڈیا منتقل نہیں کیا گیا—فائل فوٹو: اے پی
    امریکی گلوکارہ، اداکارہ اور جانوروں کے حقوق کی کارکن 74 سالہ چیر دنیا کے ان چند افراد میں شامل ہیں جنہوں نے پاکستان میں ناقص حالات میں زندگی گزارنے والے ہاتھی کاوون کی آزادی اور دوسرے ملک منتقلی میں کردار اہم کردار ادا کیا تھا۔

    36 سالہ کاوون کو رواں برس مئی میں اسلام آباد ہائی کورٹ نے مرغزار چڑیا گھر سے نکال کر محفوظ مقام پر منتقل کرنے کے احکامات دیے تھے۔

    عدالت میں یہ کیس 2 سال سے زیر سماعت تھا اور عدالت مرغزار چڑیا گھر میں ناقص انتظامات پر سرکاری اداروں کی سرزنش بھی کر چکی تھی، تاہم مئی میں عدالت نے کیس کو نمٹاتے ہوئے تمام جانوروں کو محفوظ مقام پر منتقل کرنے کا حکم دیا تھا۔

    جس کے بعد خیال کیا جا رہا تھا کہ کاوون کو سری لنکا بھیجا جائے گا، تاہم بعد ازاں حکومت نے ہاتھی کو کمبوڈیا بھیجنے کا فیصلہ کیا۔

    تحریر جاری ہے‎
    جولائی میں حکومت نے تصدیق کی تھی کہ کاوون کو ستمبر کے آخر تک کمبوڈیا منتقل کیا جائے گا، تاہم بعد ازاں ہاتھی کی خراب صحت کے پیش نظر اس کی منتقلی کے فیصلے کو مزید کچھ ہفتوں کے لیے ملتوی کردیا گیا تھا۔

    اور اب خیال کیا جا رہا ہے کہ کاوون کو نومبر کے وسط تک کمبوڈیا منتقل کردیا جائے گا، تاہم ہاتھی کو منتقل کیے جانے کے حوالے سے حتمی تاریخوں کا اعلان نہیں کیا گیا۔

    یہ بھی پڑھیں: اسلام آباد کے چڑیا گھر میں قید ہاتھی کی رہائی پر امریکی گلوکارہ خوش
    36 سالہ کاوون کی کمبوڈیا منتقلی پر جہاں دنیا بھر کے جانوروں کے حقوق کے کارکنان خوش ہیں، وہیں امریکی گلوکارہ 74 سالہ چیر بھی بے حد خوش ہیں۔



    تحریر جاری ہے‎
    چیر نے کاوون کی پاکستان سے کمبوڈیا منتقلی کے موقع پر 2 خصوصی گانے بھی تیار کرلیے ہیں جب کہ وہ ہاتھی کی منتقلی کے وقت امریکا سے کمبوڈیا بھی پہنچیں گی۔

    اداکارہ چیر نے اپنی ٹوئٹ میں کاوون کی منتقلی کے لیے تیار کیے گئے پنجرے کی تصاویر شیئر کرتے ہوئے مداحوں کو بتایا کہ وہ ہاتھی کی منتقلی کے حوالے سے بہت خوش ہیں۔



    انہوں نے ہاتھی کی منتقلی کے لیے بنائے گئے پنجرے کی تصاویر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ انہیں امید ہے کہ مذکورہ پنجرے کے ذریعے کاوون کو آسانی سے کمبوڈیا منتقل کیا جائے گا۔

    تحریر جاری ہے‎
    ساتھ ہی چیر نے بتایا کہ انہوں نے کاوون کی کمبوڈیا آمد کے حوالے سے 2 گانے بھی تیار کر رکھے ہیں اور وہ ہاتھی کی منتقلی کے وقت وہاں موجود بھی ہوں گی اور سوشل میڈیا پر شائقین کو ہر چیز براہ راست دکھائیں گی۔

    خیال رہے کہ کاوون کو ایئربس کے ذریعے کمبوڈیا منقتل کیا جائے گا، ان کی منتقلی کے لیے بنایا گیا لوہے کا پنچرہ پاکستانی انجنیئر محمد عمر ہارون نے تیار کیا ہے، جس پر پاکستانی جھنڈے سمیت پاکستانی ٹرک آرٹ کو بھی سجایا گیا ہے۔



    کاوون ہاتھی کو سری لنکا نے 1985 میں تحفے کے طور پر پاکستان کو دیا تھا اور اس وقت اس کی عمر محض ایک سال تھی۔

    کاوون کو اسلام آباد کے مرغزار چڑیا گھر میں رکھا گیا تھا اور انہیں چھوٹے جنگلے اور انتہائی محدود جگہ میں قید کردیا گیا تھا، جس وجہ سے ماہرین نے اس ہاتھی کی ذہنی و جسمانی صحت پر تشویش کا اظہار کیا تھا۔

    مزید پڑھیں: اسلام آباد کا واحد ہاتھی کمبوڈیا جانے کیلئے آزاد
    کاوون ہاتھی کے ساتھی کو بھی سری لنکا سے 1995 میں پاکستان منتقل کیا گیا تھا مگر وہ ہاتھی 2012 میں ہلاک ہوگیا تھا، جس کے بعد انسانی حقوق کے رہنماؤں نے کاوون کے رہائی کے لیے جدوجہد شروع کی تھی۔

    [​IMG]
    چیر نے ہاتھی کی آزادی کی مہم میں بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لیا تھا—فائل فوٹو: انسٹاگرام/ اے ایف پی


    کاوون کو مرغزار چڑیا گھر سے نکالنے کے لیے گزشتہ دور حکومت کے دوران جانوروں کے حقوق کے لیے کام کرنے والے دنیا بھر کے رہنماؤں میں ایک آن لائن پٹیشن پر 2 لاکھ کے قریب دستخط کرکے حکومت سے مطالبہ کیا تھا کہ کاوون کو محفوظ مقام پر منتقل کیا جائے۔

    کاوون کو محفوظ مقام پر منتقل کرنے کی پٹیشن کو اس وقت کے وزیر اعظم نواز شریف کو دیا گیا تھا مگر اس پر عمل نہیں ہوا تو 2016 میں ایک بار پھر عالمی رہنماؤں نے دوسری پٹیشن پر دستخط کرکے حکومت سے دوبارہ بھی ہاتھی کو رہا کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔

    تاہم اس وقت ایسا نہ ہوسکا، جس کے بعد نجی فلاحی تنظیم وائلڈ لائف مینیجمنٹ نے مرغزار چڑیا گھر کے جانوروں کو محفوظ مقام پر منتقل کرنے کے لیے اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع کیا تھا اور عدالت نے تقریبا 2 سال تک کیس کی سماعت کرنے کے بعد 21 مئی2020 کو تمام جانوروں کو 60 دن جب کہ کاوون ہاتھی کو 30 دن میں محفوظ مقام پر منتقل کرنے کا حکم دیا تھا۔

    اور اب جلد ہی کاوون کو پاکستان سے کمبوڈیا منتقل کردیا جائے گا۔

    [​IMG]
    اب ہاتھی کو نومبر کے وسط تک کمبوڈیا منتقل کردیا جائے گا—فائل فوٹو: اے ایف پی


    Facebook Count
    Twitter Share
     
    • زبردست زبردست × 1
  14. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    10,040
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive

اس صفحے کی تشہیر