ڈاکٹر جمیل جالبی

سیدہ شگفتہ نے 'مصاحبہ (انٹرویو)' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اپریل 23, 2006

لڑی کی کیفیت:
مزید جوابات کے لیے دستیاب نہیں
  1. سیدہ شگفتہ

    سیدہ شگفتہ لائبریرین

    مراسلے:
    29,439



    ڈاکٹر جمیل جالبی


    (مصاحبہ)




     
  2. سیدہ شگفتہ

    سیدہ شگفتہ لائبریرین

    مراسلے:
    29,439


    تعارف

    ڈاکٹر جمیل جالبی اردو ادب کی معروف شخصیت ہیں ۔ آپ کا شمار اردو کے معزز محققین اور نقادوں میں ہوتا ہے ۔ آپ کی ساری زندگی اسی دشت کی سیاحی میں گزری ۔ آپ کی تصانیف علم و ادب میں گراں قدر سرمائے کی حیثیت رکھتی ہیں ۔ آپ کا خاندانی نام محد جمیل خان ہے ۔ آپ یکم جولائی 1929 میں پیدا ہوئے ۔ ایم اے ، ایل ایل بی ، پی ایچ ڈی اور ڈی لٹ کی اسناد حاصل کیں ۔ آپ کو ڈی ایس سی کی اعزازی ڈگری بھی دی گئی ۔ آپ کراچی یونیورسٹی میں وائس چانسلر کی خدمات سر انجام دے چکے ہیں ۔ آپ مقتدرہ قومی زبان ، اسلام آباد کے صدر نشین بھی رہ چکے ہیں اور متعدد اداروں کے رکن رہے ہیں ۔

    ۔
     
  3. سیدہ شگفتہ

    سیدہ شگفتہ لائبریرین

    مراسلے:
    29,439


    مصاحبہ (انٹرویو)

    سوال: آپ نے اپنا پہلا مضمون کب لکھا ؟

    جالبی : جب میں بی اے میں تھا تو پہلا تنقیدی مضمون " فیض احمد فیض کی شاعری " لکھا۔ اس وقت فیض کا صرف ایک مجموعہ " نقش فریادی " سامنے آیا تھا ۔ اس میں بہت تفصیل سے فیض کی شاعری پر تنقیدی نظر ڈالی گئی تھی ۔ یہ مضمون ممتاز شیریں کے رسالے " نیا دور" میں چھپا اور پھر اسے شاہد احمد دہلوی نے اپنے رسالے " ساقی" کے لئے منتخب کر لیا ۔ میرا یہ مضمون میری کتاب " ادب ، کلچر اور مسائل" میں شامل ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    وکیپر منتقل ہو گیا ہے
    قیصرانی
     
  5. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive

    یہ موضوع وکی پر منتقل ہو گیا ہے۔ ابھی اسے مندرجہ ذیل وکی کے لنک سے آگے جاری کیجئے گا

    ڈاکٹر جمیل جالبی
     
لڑی کی کیفیت:
مزید جوابات کے لیے دستیاب نہیں

اس صفحے کی تشہیر