چائے کے ساتھ ٹیلی پیتھی

نور سعدیہ شیخ نے 'محفل چائے خانہ' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 2, 2018

  1. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    13,528
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    دل اور دماغ کے حوالے سے ڈاکٹر اسد زمان(رکن قومی اقتصادی مشاوری کونسل) کا مضمون
    The Great Divide: Heart and Head

    Through the entire course of my Western education, I had received no hint or clue that there was such a thing as the “knowledge of the heart” — all we had been taught was the knowledge of the mindrational, logical, but not about love, courage, trust, compassion, nor about the purification of the heart. For the first time, I got a hint, a clue, and an inkling, there were oceans of knowledge of a type simply not available, not even dreamt of, in the West
     
  2. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    13,528
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    براہ کرم ضرور تفصیل فراہم کیجیے۔
    فی الحال اس آیت کو سوچ رہا ہوں۔

    وَمِنْهُم مَّن يَسْتَمِعُ إِلَيْكَ وَجَعَلْنَا عَلَى قُلُوبِهِمْ أَكِنَّةً أَن يَفْقَهُوهُ
    اور ان میں کچھ وہ (بھی) ہیں جو آپ کی طرف کان لگائے رہتے ہیں اور ہم نے ان کے دلوں پر(ان کی اپنی بدنیتی کے باعث) پردے ڈال دیئے ہیں (سو اب ان کے لئے ممکن نہیں) کہ وہ اس (قرآن) کو سمجھ سکیں
    مندرجہ بالا آیت کی رو سے "سمجھ" کا تعلق "دل" سے ہے
    اور
    خناس کے وسوسے کا تعلق بھی صدور الناس سے ہے۔
    ---
    مزید آیات جن میں دل کے مختلف ایٹریبویٹس (سننا ، سمجھنا )کا ذکر ہے
    أَوَلَمْ يَهْدِ لِلَّذِينَ يَرِثُونَ الْأَرْضَ مِن بَعْدِ أَهْلِهَا أَن لَّوْ نَشَاءُ أَصَبْنَاهُم بِذُنُوبِهِمْ وَنَطْبَعُ عَلَى قُلُوبِهِمْ فَهُمْ لاَ يَسْمَعُون

    کیا (یہ بات بھی) ان لوگوں کو (شعور و) ہدایت نہیں دیتی جو (ایک زمانے میں) زمین پر رہنے والوں (کی ہلاکت) کے بعد (خود) زمین کے وارث بن رہے ہیں کہ اگر ہم چاہیں تو ان کے گناہوں کے باعث انہیں (بھی) سزا دیں، اور ہم ان کے دلوں پر (ان کی بداَعمالیوں کی وجہ سے) مُہر لگا دیں گے سو وہ (حق کو) سن (سمجھ) بھی نہیں سکیں گے
    -
    وَلَقَدْ ذَرَأْنَا لِجَهَنَّمَ كَثِيرًا مِّنَ الْجِنِّ وَالْإِنسِ لَهُمْ قُلُوبٌ لاَّ يَفْقَهُونَ بِهَا وَلَهُمْ أَعْيُنٌ لاَّ يُبْصِرُونَ بِهَا وَلَهُمْ آذَانٌ لاَّ يَسْمَعُونَ بِهَا أُوْلَ۔ئِكَ كَالْأَنْعَامِ بَلْ هُمْ أَضَلُّ أُوْلَ۔ئِكَ هُمُ الْغَافِلُونَ
    اور بیشک ہم نے جہنم کے لئے جِنّوں اور انسانوں میں سے بہت سے (افراد) کو پیدا فرمایا وہ دل (و دماغ) رکھتے ہیں (مگر) وہ ان سے (حق کو) سمجھ نہیں سکتے اور وہ آنکھیں رکھتے ہیں (مگر) وہ ان سے (حق کو) دیکھ نہیں سکتے اور وہ کان (بھی) رکھتے ہیں (مگر) وہ ان سے (حق کو) سن نہیں سکتے، وہ لوگ چوپایوں کی طرح ہیں بلکہ (ان سے بھی) زیادہ گمراہ، وہی لوگ ہی غافل ہیں
    -
    وَاعْلَمُواْ أَنَّ اللّهَ يَحُولُ بَيْنَ الْمَرْءِ وَقَلْبِهِ

    اور جان لو کہ اللہ آدمی اور اس کے قلب کے درمیان (شانِ قربتِ خاصہ کے ساتھ) حائل ہوتا ہے


     
    آخری تدوین: ‏نومبر 6, 2018
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  3. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,177
    جھنڈا:
    Pakistan
    سوچ کا خود سے آنا غیر اختیاری اور اسے ٹھہرائے رکھنا یا مزید بڑھاوا دینا اختیاری۔۔۔
    اختیار پر جزا و سزا اور غیر اختیاری سب معاف!!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  4. فیصل عظیم فیصل

    فیصل عظیم فیصل محفلین

    مراسلے:
    3,479
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    کیا دل کے بغیر جینا ممکن ہے۔۔؟؟
    اگر ایک انسان کے اندر دل کی جگہ مشین لگا دی جائے تو کیا اس کی سوچ اور خیال پر بطور ایک انسان کچھ اثر ہوگا۔۔؟؟ ماسوائے اپنے طبی معاملے کے۔۔؟؟ کیا تب سوچ اس دل میں پیدا ہوگی جو اسے خون کا دوران فراہم کر رہی ہے یا پھر کہیں اور۔۔؟؟

    جیسے یہ صاحب بغیر دل کے ۵۵۵ دنوں تک زندہ رہے جبکہ ان کے جسم میں دل نہ تھا اور یہ اپنے زندگی کے افعال سرانجام بھی دیتے رہے اور بحیثیت انسان اس دنیا میں اپنا کردار بھی ادا کرتے رہے- اس کے بعد انہیں دوسرا دل لگا دیا گیا اور یہ شاید اب بھی کہیں زندہ ہوں۔ سوال یہ ہے کہ جب ان کے پاس اپنا دل تھا تب ان کی سوچ دل میں تھی پھر ان کا دل نہ رہا لیکن یہ زندہ رہے اور پھر کسی اور کا دل انہیں لگا دیا گیا اور یہ پھر بھی زندہ رہے اس ساری ٹرانزیشن میں دل میں سوچ کا پیدا ہونا کیسے متاثر ہوا ہوگا-

    درج بالا نظریات کی روشنی میں سوچ کے دل میں پیدا ہونے اور اس کا مرکز دل ہونے کو سائنسی طور پر واضح فرمائیں تاکہ ہم جیسوں کا بھلا ہو اور موضوع واضح ہو سکے

    کیونکہ اگر سوچ صرف عضلہ قلب (طبی طور پر خون فراہم کرنے کا آلہ) میں پیدا ہوتی ہے تو درج بالا مثال سے اس کا متاثر ہونا ضروری ٹھہرتاہے اور اگر قلب سے مراد روح کا وہ مرکز ہے جو عضلہ قلب یا مادی دماغ سے بالا تر ہے تو ایسا ہونا ضروری نہیں ٹھہرتا کیونکہ بات پھر مادے کی رہ نہیں جاتی بلکہ ان کی ہو جاتی ہے جنہوں نے اس مادے کی تخلیق سے بھی پہلے کسی کے سامنے کچھ قول و قرار کیئے تھے۔ تب نہ صرف سوچ کا وجود سمجھ میں آتا ہے بلکہ میت کا یہ پوچھنا بھی سمجھ آتا ہے کہ مجھے کہاں لے کر جا رہے ہو حالانکہ اس کا دل تو اس وقت دھڑک ہی نہیں رہا یا دوسرے الفاظ میں زندگی کے تمام اثرات بظاہر اس جسم سے مفقود ہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  5. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    13,528
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    گفتگو کو "لطیفہ قلب" کے تناظر میں دیکھیں تو شاید یہ اشکال پیدا نہ ہوں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. فیصل عظیم فیصل

    فیصل عظیم فیصل محفلین

    مراسلے:
    3,479
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    تو کیا اس سے مراد یہ لیا جائے کہ سوچ کی پیدائش در اصل لطیفہءقلب سے ہے جو ایک ظاہری یا مادی وجود سے ماوراء شے ہے۔
    اور
    حاضر سائنس چونکہ مادے اور اس پر مختلف عوامل کے اثرات پر بحث کرتی ہے تو ا س کا سوچ یا خیال کے موضوع پر نظریات و تجربات پر بحث کرنا اور کسی نتیجے پر نہ پہنچ سکنا اور اسے ہائپو تھیسس کہہ دینا صرف اسی وجہ سے ہے کہ یہ اس کی سمجھ کی حدود سے باہر کی چیز ہے
    باوجود اس کے کہ
    سائنس کا وجود بھی سوچ کا محتاج ہے لیکن سوچ کو بیان کرنا اس کے اپنے ہی قوانین و نظریات سے ممکن نہیں ہے۔

    کیا ہم اس یا ایسی کسی بات پر متفق ہو سکتے ہیں تاکہ آگے بڑھا جائے۔۔؟؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  7. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,177
    جھنڈا:
    Pakistan
    بچپن سے تو خیر نہیں البتہ میٹرک کے بعد طویل چھٹیوں میں اس طرح کے مشاغل کی لت لگ گئی۔۔۔
    وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ ایک کے بعد دیگر علوم سیکھتے رہے، آگے بڑھتے رہے۔۔۔
    ایک علم کی دنیا میں داخل ہوئے تو دیکھا اس سے آگے ایک اور نئی دنیا ہے۔۔۔
    اس میں داخل ہوئے تو تیسری۔۔۔
    بس آج تک آگے بڑھنے کا عمل جاری ہے۔۔۔
    اب اپنے ان تجربات کو انسانی صحت کے لیے مختص کرلیا۔۔۔
    یہاں اس کا تذکرہ نہیں کرتے۔۔۔
    کیوں کہ بغیر علم کے کٹ حجتی کرنے والے پنڈورا باکس کھول دیتے ہیں!!!
    ویسے آپ لڑی کھولنے کے بعد غائب کہاں ہوگئیں؟؟؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  8. نور سعدیہ شیخ

    نور سعدیہ شیخ مدیر

    مراسلے:
    5,059
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    واہ، بہت خوب جواب دیا ... تو سوچ رحمان کی جانب سے بھی ہے اور سوچ وساوس بھی ہے نفسانی بھی ہے ..بندہ کشمکش میں گھرا ... رحمان کی دوڑ کھینچ لیتی ہے اور لگام اسکے ہاتھ میں سوچ کی ہو تو مستقیم راہ مل جاتی ہے مگر یہ سب کیسے ہو؟
     
  9. نور سعدیہ شیخ

    نور سعدیہ شیخ مدیر

    مراسلے:
    5,059
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    ہم اس پر اتفاق تو کرسکتے ہیں. دل جانے کہاں ہے مگر خیال تو عین صدر میں ظہور ہوتا ہے. بے چینی بھی خوشی بھی، سوچ بھی، خیال بھی، وجدان کی تحریک بھی، نسیان بھی .... دماغ بس بھول جاتا ہے یا یاد رکھتا ہے. دماغ احساس سے عاری
     
  10. نور سعدیہ شیخ

    نور سعدیہ شیخ مدیر

    مراسلے:
    5,059
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    ماشاء اللہ! آپ اپنی فہم و فراست سے سبھی محفلین کے لیے مشعل راہ ہوسکتے ہیں ...اس لیے ان دنیاؤں کے بارے میں کچھ آگہی دیجیے ..... تجربات یعنی صحت کی بہتری کے لیے کے لیے اس جانب متوجہ ہوتے ہیں ........ میں اصل میں مہمانوں کے لیے نئی چائے تیار کر رہی ہوں تاکہ یہ شکوہ نہ کریں کہ مہمان نوازی میں کمی رہ گئ. ...:) :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. نور سعدیہ شیخ

    نور سعدیہ شیخ مدیر

    مراسلے:
    5,059
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    گفتگو، کہیں میرے سوالات کے بیچ میں رک گئی، حرف حیرت میں رہے جوابات کی سازش پر:)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • متفق متفق × 1
  12. فیصل عظیم فیصل

    فیصل عظیم فیصل محفلین

    مراسلے:
    3,479
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    کچھ بھی ایسا تو نہیں ہے کہ گماں ہو تم کو
    حیرتیں سوچ کے پہلو پہ جمی بیٹھی ہیں

    بٹیا ۔ سب کی رائے مل کر چلے تو زیادہ اچھا لگتا ہے دوسری صورت میں اختلاف رائے کو جگہ نہیں ملتی اور جنہیں اختلاف ہو وہ تنہا محسوس کرتے ہیں۔ اس کے علاوہ متفق الرائے کو بھی کچھ اضافت و تقویت کا موقع میسر ہو جاتا ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  13. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    13,528
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    چند بے ربط باتیں۔۔۔

    انسان صرف جسم نہیں بلکہ عارضی طور پر روح کو رکھنے کی جگہ ہے۔
    دل اور دماغ اور باقی عضلات سب مادہ ہیں اور ان کا روح سے کچھ ایسا "بائیو سپریچویل" تعلق ہے کہ اس کی جسم میں موجودگی سے انسان کا جسم گلتا سڑتا نہیں۔
    اب سوال یہ ہے کہ انسان کا جسم سوچتا ہے یا اس کی روح سوچتی ہے؟

    مادہ(جسم) اور روح
    کے مقابل

    مغربی نظریات میں
    مائنڈ اور باڈی (میٹر)
    ہیں۔
    مائنڈ باڈی ثنویت کے مطابق ذہنی فی نامیناز "نان فزیکل" ہیں۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  14. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,177
    جھنڈا:
    Pakistan
    یہ سب علم سے ہو۔۔۔
    جب صحیح غلط کا علم ہوگا تبھی سمجھ میں آئے گا کہ کیا رحمٰن کی طرف سے ہے، کیا انسان کی اپنی سوچ اور کیا شیطان کے وساوس!!!
     
  15. فیصل عظیم فیصل

    فیصل عظیم فیصل محفلین

    مراسلے:
    3,479
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    مطلب یوزر مینوئل اور مثالی نمونہ۔۔۔؟؟؟
     
  16. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,177
    جھنڈا:
    Pakistan
    مطلب؟؟؟
     
  17. فیصل عظیم فیصل

    فیصل عظیم فیصل محفلین

    مراسلے:
    3,479
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    کیا یہ اشارہ اسی ہدایت نامہ کی طرف ہے جو خالق کل نے اپنے بہترین پیغمبر ابوالقاسم سیدنا و مولانا محمد مصطفےٰ صلی اللہ علیہ و اٰلہ وسلم کے ذریعے ہمیں بھیجا اور ان کی حیات طیبہ مبارکہ کو ہمارے لیئے مثالی نمونہ قرار دیا۔۔؟؟؟
    وہ ہدایت نامہ جسے اس تخلیق کی یوزر مینوئیل کے نام سے بھی پکارا گیا قرآن کریم فرقان حمید ہے
    اور
    وہ مثالی نمونہ محبوب رب کائنات سرکار دوعالم قاسم خزائن العرفان سیدنا و مولانا حضرت محمد مصطفےٰ مدینۃ العلم صلی اللہ علیہ و اٰلہ وسلم کی ذات اقدس اور حیات طیبہ ہے۔

    کیا اب واضح ہے۔۔؟؟ کہ مقصد آپ سے اسی بات کی تصدیق طلب کرنا تھا آیا آپ کا اشارہ اسی جانب تھا یا کسی اور جانب
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  18. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,177
    جھنڈا:
    Pakistan
    آپ نے تو بہت ہی ہائی پروفائل کی بات کردی۔۔۔
    ہم تو عام انسان کی سوچ کی بات کررہے ہیں۔۔۔
    انبیاء کرام پر تو نفسانی و شیطانی سوچ کا گزر ہی محال ہے!!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  19. فیصل عظیم فیصل

    فیصل عظیم فیصل محفلین

    مراسلے:
    3,479
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    میرے پیارے بھائی انبیاء کرام معصوم ہوتے ہیں اور نفسانی سوچ اور وساوس کا گزر محال نہیں بلکہ ناممکن ہے کیونکہ وہ اللہ تعالیٰ کی خصوصی حفاظت میں ہوتے ہیں۔ البتہ ہم لوگوں کے لیئے وہ ہدایت نامہ جسے ہمارے بنانے والے نے ہم پر مہربانی فرماتے ہوئے ہمیں بھیجا اس ہدایت نامہ کی پیروی کرنا اور اس مرکزی نمونہ کی تقلید کرنا ہی کسی بھی صفائی،ترقی،اصلاح کا واحد ذریعہ ہے

    معذرت چاہتا ہوں کہ پچھلی پوسٹس میں آپ کو اپنی بات سمجھا نہ سکا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  20. سید عمران

    سید عمران محفلین

    مراسلے:
    7,177
    جھنڈا:
    Pakistan
    اس ہدایت نامے کے بارے میں آپ نے جو فرمایا، کسی مسلمان کی اس بارے میں دو رائے نہیں ہیں!!!
     

اس صفحے کی تشہیر