1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $453.00
    اعلان ختم کریں

نصیر الدین نصیر پیر سید نصیر الدین نصیر گیلانی رحمتہ الله علیہ

محمد جاوید اختر نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ستمبر 15, 2012

  1. بےباک

    بےباک محفلین

    مراسلے:
    84
    ایک شعر کچھ غلط لکھا گیا ہے

    تیرے آگے وہ ہر اک منظرِ فطرت کا ادب

    چاند سورج کا وہ پہروں تجھے دیکھا کرنا
    تبِ اقدس کے مطابق وہ ہواؤں کا خیرام
    دھوپ میں دوڑ کے وہ ابر کا سایہ کرنا

    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    طبعِ اقدس کے مطابق وہ ہواؤں کا خرام
    دھوپ میں دوڑ کے وہ ابر کا سایہ کرنا
     
  2. بےباک

    بےباک محفلین

    مراسلے:
    84
    ماشاءاللہ ۔ایک ایک شعر اپنی جگہ شاندار ہے ،
    آپ نے بہت اچھا کیا ، سب نعتیں اور حمدیہ کلام اکٹھا کر دیا ،شکریہ
    جزاک اللہ
     
  3. قاضی شہزاد احمد

    قاضی شہزاد احمد محفلین

    مراسلے:
    2
    نصیرالدین نصیرؒ کی کمی پوری نہیں ھو سکتی،وہ قدرت کا انمول تحفہ تھے اھل حق کے لیے،،اللہ ان کی قبر انور پہ کروڑوں رحمتوں کا نزول فرمائے
     
    • متفق متفق × 2
  4. اوشو

    اوشو محفلین

    مراسلے:
    2,321
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Drunk
    واہ واہ
     
  5. کعنان

    کعنان محفلین

    مراسلے:
    865
    جھنڈا:
    England
    موڈ:
    Amused
    السلام علیکم

    دو مرتبہ وہاں جانا ہوا کسی کو ملنے کا بہت شوق تھا، مشائخ کرام کا میں بہت احترام کرتا ہوں مگر معذرت کے ساتھ مجھے ان کا اور ان کے بھائی کا طریقہ کار اچھا نہیں لگا تھا۔

    والسلام
     
  6. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,077
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    زُلف کی اوٹ سے چمکے وہ جبیں تھوڑی سی
    دیکھ لوں کاش ! جھلک میں کہیں تھوڑی سی

    میکدہ دُور ہے ، مسجد کے قریں ، تھوڑی سی
    میرے ساقی ہو عطا مجھ کو یہیں تھوڑی سی

    نا خوشی کم ہو تو ہوتا ہے خوشی کا دھوکا
    جھلکیاں "ہاں" کی دکھاتی ہے "نہیں تھوڑی سی

    پھر مرے سامنے آ ، اور حجابات اٹھا
    زحمتِ جلوہ پھر اے پردہ نشیں ! تھوڑی سی

    اُن کی ہر بات پہ میرا سرِ تسلیم ہے خم
    ہر اشارے پہ جُھکاتا ہوں جبیں تھوڑی سی

    میں یہ سمجھوں کہ مجھے مِل گئی جنت میں جگہ
    ان کے کُوچے میں جو مل جائے زمیں تھوڑی سی

    صحنِ گُلشن ہے، گُل و لالہ ہیں پیمانہ بہ دست
    مِل کے پی لیتے ہیں اب آؤ یہیں تھوڑی سی

    اُن کی قُربت کا وہ لمحہ ہی بہت ہے مجھ کو
    گفتگو ان سے ہوئی تھی جو کہیں تھوڑی سی

    ساقیِ بزم ! ادھر بھی ہو اُچٹتی سی نظر
    ہے طلب مَے کی ، زیادہ تو نہیں’’ تھوڑی سی ‘‘

    یوں بھی وہ ایک قیامت ہے دل و جاں کے لیے
    جانے کیا ہو، جو مروّت ہو کہیں تھوڑی سی

    عاقبت کوچۂ جاناں سے ہے وابستہ نصؔیر
    یار سے ہم نے بھی مانگی ہے زمیں،تھوڑی سی

    پیر نصیر الدین شاہ نصیر گولڑوی رحمۃ اللہ علیہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  7. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    23,909
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    بہت عمدہ، سبحان اللہ

    اس مصرع میں کچھ کمی ہے۔ کہیں نسخہ ہو تو دیکھ لیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  8. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,077
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    مِری زیست پُر مسرت کبھی تھی نہ ہے نہ ہو گی
    کوئی بہتری کی صورت کبھی تھی نہ ہے نہ ہو گی

    مجھے حُسن نے ستایا ، مجھے عشق نے مِٹایا
    کسی اور کی یہ حالت کبھی تھی نہ ہے نہ ہوگی

    وہ جو بے رُخی کبھی تھی وہی بے رُخی ہے اب تک
    مِرے حال پر عنایت کبھی تھی نہ ہے نہ ہو گی

    وہ جو حکم دیں بجا ہے ، مِرا ہر سُخن خطا ہے
    اُنہیں میری رُو رعایت کبھی تھی نہ ہے نہ ہو گی

    جو ہے گردشوں نے گھیرا ، تو نصیب ہے وہ میرا
    مجھے آپ سے شکایت کبھی تھی نہ ہے نہ ہو گی

    تِرے در سے بھی نباہے ، درِ غیر کو بھی چاہے
    مِرے سَر کو یہ اجازت کبھی تھی نہ ہے نہ ہو گی

    تِرا نام تک بُھلا دوں ، تِری یاد تک مٹا دوں
    مجھے اِس طرح کی جُرات کبھی تھی نہ ہے نہ ہو گی

    میں یہ جانتے ہوئے بھی ، تیری انجمن میں آیا
    کہ تجھے مِری ضرورت کبھی تھی نہ ہے نہ ہو گی

    تُو اگر نظر ملائے ، مِرا دَم نکل ہی جائے
    تجھے دیکھنے کی ہِمت کبھی تھی نہ ہے نہ ہو گی

    جو گِلہ کِیا ہے تم سے ، تو سمجھ کے تم کو اپنا
    مجھے غیر سے شکایت کبھی تھی نہ ہے نہ ہو گی

    تِرا حُسن ہے یگانہ ، تِرے ساتھ ہے زمانہ
    مِرے ساتھ میری قسمت کبھی تھی نہ ہے نہ ہو گی

    یہ کرم ہیں دوستوں کا ، وہ جو کہہ رہے ہیں سب سے
    کہ نصیر پر عنایت ، کبھی تھی نہ ہے نہ ہو گی

    پیر سید نصیر الدین نصیر
     
  9. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,077
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    میرا پاس کچھ اسی طرح ہے
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  10. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,077
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    ہم گنہ گاروں کو سرکار سنبھالے ہوں گے
    حشر میں اُن کی شفاعت کے حوالے ہوں گے

    نور آنکھوں میں تو چہروں پہ اُجالے ہوں گے
    مصطفےٰ والوں کے انداز نرالے ہوں گے

    نکتہ چیں شانِ رسالت کے ، چُھپے موذی ہیں
    آستینوں میں کبھی سانپ تو پالے ہوں گے؟

    خُلد میں بھیڑ نظر آتی ہے خوش باشوں کی
    میرے آقاؐ کے یہ سب ماننے والے ہوں گے

    پیر سید نصیر الدین نصیر
     
  11. محمد تابش صدیقی

    محمد تابش صدیقی منتظم

    مراسلے:
    23,909
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    نیٹ پر کافی جگہ تلاش کرنے پر کچھ اس طرح ملا ہے یہ مصرع. اور میرا اپنا گمان بھی یہی ہے. کیونکہ پیر صاحب جس پائے کے شاعر تھے. ان سے عروضی غلطی کا امکان کم ہے. البتہ نیٹ پر زیادہ کاپی پیسٹ چلتا ہے. جس طرح کسی نے ایک دفعہ لکھ دیا اور پھیل گیا. تو وہی ہر جگہ کاپی پیسٹ ہو جاتا ہے.

    دیکھ لوں کاش جھلک میں بھی کہیں تھوڑی سی

    مناسب ہو گا کہ چھپے ہوئے کلام سے ویریفائی ہو جائے.
    الف نظامی ابو المیزاب اویس
     
    • متفق متفق × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,077
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    جی لفظ "بھی" کی ہی غلطی ہے
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  13. عبد الرحمٰن

    عبد الرحمٰن محفلین

    مراسلے:
    2,617
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    سبحان اللہ
    سلامت رہیں
     
  14. عبد الرحمٰن

    عبد الرحمٰن محفلین

    مراسلے:
    2,617
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    سبحان اللہ
     
  15. جیلا

    جیلا محفلین

    مراسلے:
    1
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Aggressive
    بھائی پیر نصیرالدین کی بک نیٹ پر ہیں پڑیں
     

اس صفحے کی تشہیر