1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $453.00
    اعلان ختم کریں

ناز خیالوی پھیر لیں یاروں نے آنکھیں بخت ڈھل جانے کے بعد

فرحان محمد خان نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جون 4, 2017

  1. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,077
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    پھیر لیں یاروں نے آنکھیں بخت ڈھل جانے کے بعد
    تتلیاں آتیں نہیں پھولوں پہ، مرجھانے کے بعد

    باعثِ مرگِ اَنا میری یہی پستی بنی
    خود کو قاتل لگ رہا ہوں ہاتھ پھیلانے کے بعد

    باغ میں ٹھمکے لگاتی پھرتی ہے فصلِ بہار
    سرخ جھمکے نوجواں شاخوں کو پہنانے کے بعد

    کر دیا دل لے کے اس نے مجھ کو پابندِ وفا
    قید بھی گویا سنا دی اس نے جرمانے کے بعد

    شہر کے ماحول میں بھی سانپ سو قسموں کے ہیں
    جوگیو! پھیرا ادھر بھی ایک ویرانے کے بعد

    چھو رہے تھے ظالموں کے سر مرے پیروں کے ساتھ
    کس قدر اونچا تھا میں سولی پہ چڑھ جانے کے بعد

    نازؔ میں خود کو نجانے کیوں برہنہ سا لگا
    آرزو کو لفظ کی پوشاک پہنانے کے بعد

    ٭٭٭
    نازؔ خیالوی
     
    مدیر کی آخری تدوین: ‏جون 4, 2017
  2. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,077
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
  3. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    7,269
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    کردیا دل لے کے اس نے مجھ کو پابندِ وفا
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  4. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    7,269
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
     
  5. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,077
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    سر
    جوگیو! پھیرا ادھر بھی ایک ویرانے کے بعد
     

اس صفحے کی تشہیر