1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $453.00
    اعلان ختم کریں

لیفٹیننٹ جنرل کو قید با مشقت، بریگیڈئیراورحساس ادارے کے افسر کو سزائے موت کی توثیق

جاسم محمد نے 'آج کی خبر' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 30, 2019

  1. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,690
    لیفٹیننٹ جنرل کو قید با مشقت، بریگیڈئیراورحساس ادارے کے افسر کو سزائے موت کی توثیق
    [​IMG]
    مجرمان نے حساس معلومات دوسرے ملکوں کو لیک کی تھیں: آئی ایس پی آر

    پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے پاک فوج کے دو اعلیٰ افسران اور حساس ادارے کے سویلین افسر کو سزاؤں کی توثیق کر دی۔

    پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی افسران اور سویلین افسران کو جاسوسی کے الزام میں سزا دی گئی تھی۔

    آئی ایس پی آر کے مطابق مجرمان نے حساس معلومات دوسرے ملکوں کو لیک کی تھیں۔

    پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق سزا پانے والوں میں لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ جاوید اقبال کو 14 سال قید بامشقت کی سزا دی گئی۔

    آئی ایس پی آر کے مطابق بریگییڈئیر ریٹائرڈ راجہ رضوان کو سزائے موت دی گئی جب کہ حساس ادارے کے سویلین افسر ڈاکٹر وسیم اکرم کو سزائے موت دی گئی۔

    آئی ایس پی آر کے مطابق تنیوں افسران کا پاکستان آرمی ایکٹ اور آفیشل سیکرٹ ایکٹ کے تحت ٹرائل کیا گیا۔

    خیال رہے کہ رواں برس فروری میں ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے اپنی پریس کانفرنس کے دوران اس بات کی تصدیق کی تھی کہ آرمی کے دو سینئر افسران جاسوسی کے الزام میں زیر حراست ہیں اور آرمی چیف نے ان کا فیلڈ جنرل کورٹ مارشل آرڈر کیا ہوا ہے۔
     
    • غمناک غمناک × 1
  2. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,690
    فوجیوں کا اس ملک میں احتساب نہیں ہوتا والی بریگیڈ اب کدھر ہے؟
     
  3. آصف اثر

    آصف اثر محفلین

    مراسلے:
    2,900
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    بھائی یہ احتساب نہیں، وقتا فوقتا قربانی کے بکرے ذبح کرنا پڑتے ہیں۔
     
    • متفق متفق × 1
    • مضحکہ خیز مضحکہ خیز × 1
  4. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,690
    ناشکری قوم ہے۔ بہرحال اچھی شروعات ہیں۔
     
  5. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,690
    [​IMG]
    [​IMG]
     
    • غمناک غمناک × 1
  6. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,088
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    کیا یہ کسی کرپشن کا احتساب ہے ؟
     
    • متفق متفق × 1
  7. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,088
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    پبلک فورمز پر ریاستی سلامتی کے متعلق اجنبی و انجان لوگوں سے کھل کر بات کرنا سنگین احمقانہ بات ہو گی۔

    اس احتساب کی تیزی اور درستی اتنی شاندار ہے کہ اوپر والے صاحب نے 2004 میں کرتوت فرمایا۔ پھر ہم نے اسے جی ایچ کیو کی سب سے حساس پوسٹ ڈی جی ایم او پر تعینات کیا، پھر کور کمانڈر بنایا اور پھر باعزت ریٹائرمنٹ دی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  8. چودھری مصطفی

    چودھری مصطفی محفلین

    مراسلے:
    405
    دیکھیں اس پہ عمل بھی ہوتا ہے کہ نہیں۔ ایک جنرل ظہیر الاسلام ہوتے تھے، اور ایک بریگیڈئیر مستنصر باللہ۔ انہوں نے پلان بنایا کہ کورکمانڈرز کانفرنس کے دوران ساری آرمی کی کمان کا صفایا کر کے اقتدار پہ قبضہ کر لیا جائے۔ دونوں پکڑے گئے اور عمر قید کی سزا ہوئی۔ ۹۹ میں سید مشرف تشریف لائے تو انہوں نے دونوں کی سزا معاف کر دی۔ چند سال کی قید کاٹ کر دونوں گھروں کو چلے گئے۔ قید کا زیادہ حصہ بھی اسپتال میں گزارا اور جہاں تک یاد پڑتا ہے کہ ان میں سے ایک نے اپنی خدمت پہ مامور نرس سے شادی بھی کی، قید کے دوران۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,690
    نہیں۔ کسی دوسرے ملک سے پیسے لے کر اپنے ملک کے راز بیچنے پر احتساب کا نشانہ بنایا گیا ہے۔
     
  10. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,690
    احتساب نہ ہونے سے تو بہتر ہے دیر آئے پردرست آئے۔ قوم ابھی بھی ناشکری ہی کر رہی ہے۔
     
  11. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,690
    مشرف کا بھی اسی لئے احتساب ہو رہا ہے۔ ریاست جسکی لاٹھی اس کی بھینس کے اصولوں پر نہیں چل سکتی۔
    اپنے اختیارات سے تجاوز کرنے والے کو خواہ اس کا تعلق ریاست کے کسی بھی ستون سے رہا ہو کو سخت سے سخت سزا ملنی چاہئے۔
    جس ملک میں جزا سزا باقی نہیں رہتی وہ پاکستان جیسے بن جاتے ہیں۔
     
    • مضحکہ خیز مضحکہ خیز × 1
  12. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,690
  13. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,088
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed

    سرمد سلطان کی ٹویٹس کا مکمل تھریڈ

    وطن عزیز میں سیاستدانوں کوکرپشن کامنبع بتایاجاتا ہے۔ان پرکرپشن کےبےشمار الزامات لگتےہیں۔مشترکہ تحقیقات ٹیمیں بنتی ہیں۔تفتش ہوتی ہےمنتخب نمائندوں کی، سرعام توہین کی جاتی ہے، دوسری طرف کسی جنرل کاکیس آئےتوبےگناہی کی مہم شروع ہوتی ہے۔انکی کرپشن پربات کرنے والا غدارہے۔۔

    پاکستان کےپہلےمسلمان آرمی چیف جنرل ایوب خان کےخلاف کرپشن کیس کسی سویلین نےنہیں جنرل یحیی خان نےبنائے۔ایوب دورمیں گندھارا انڈسٹری کی کرپشن وہ منظرعام پرلائے۔ایوب دورکے303کرپٹ افسروں معطل ہوئے، 191کاٹرائل ہوا، جن میں88ریٹائرافسران شامل تھے۔بقول یحیی ایوب کرپٹ تھے۔

    گندھارا انڈسٹریزمختلف کاروبار سےوابستہ صنعتی ادارہ تھا جس کی بنیادجنرل حبیب اللہ اورگوہرایوب نے رکھی، ایوب نےاپنے اقتدار میں اسے خوب پھولنے پھلنے دیا، نیز ایوب نےفوج کوتجارتی مقاصدکیلئے سب سے پہلے استعمال کیا۔کینٹ علاقوں میں پلاٹوں کی فروخت انہی کاکارنامہ ہے۔

    جنرل گل حسن کی کرپشن کاانکشاف کسی سویلین نے نہیں بلکہ جنرل عثمان مٹھا نےکیا۔جنرل مٹھا کےبقول جنرل گل حسن لاھور کینٹ میں کئی پلاٹوں کے مالک تھے مگر اسکے باوجودمیڈیا میں یہ تاثر دیتے رہے کہ وہ بہت ایماندار ہیں جنرل مٹھا نےانکو بدترین آرمی چیف قرار دیا۔

    حنرل ضیا الحق اوجھڑی کیمپ سانحہ کسے یادنہیں یہ بات کئی امریکی مصنفین نے لکھی کہ موصوف امریکہ کااسلحہ جوافغان جہاد کیلئےملتاتھا اسے ایران کوغیرقانونی طور پرفروخت کرتے رھےاس بات کےگواہ عارف حسینی تھےجن کو نامعلوم افرا نےقتل کردیا منشیات کادھندہ بھی انکاکاروبارتھا۔

    جنرل ضیانےسیاست کوکرپشن آلودکیاانہوں نےپیسوں کایہ دھندہ سیاستدانوں کو سکھایا جنرل ضیاتحفےتحائف کےشوقین تھےاورایسے لوگوں کاخیال رکھتےجو انکوتحفے دیتے تھے۔نوازشریف کےوزیراعلی پنجاب بننےکاسبب تھے۔حسن محموداورملک اللہ یارنےضیاکوتحفےنہیں دیئے۔

    جنرل اسلم بیگ کی کرپشن کا انکشاف نیویارک ٹائمزنےکیا ایٹمی ٹیکنالوجی کی سمگلنگ میں وہ ملوث رھے۔ بیگ اور قدیر کافرنٹ مین بی-ایس-طاھر تھا جوبعدمیں ملائشیاء سےگرفتار ہوا۔ اس کے انکشاف کے بعددنیاکومعلوم ہواکہ پاکستان سے ایٹمی ٹیکنالوجی کی سمگنگ کادھندہ شدومد سےجاری ہے۔

    8جولائی2018کواسلام آباد ہائی کورٹ میں انعام رحیم ایڈوکیٹ نے رٹ دائرکی۔جس میں مشرف کی کرپشن کاذکر تھا۔انکےناجائزاثاثوں کامفصل بیان تھا۔ دبئی، ترکی، انگلینڈ کی جائیدادوں کےعلاوہ اندرون ملک کئی اثاثوں کاذکرتھا، جن کی مجموعی مالیت 1000ارب روپےتھی اس کیس کی صرف ایک سماعت ہوئی۔

    نوازشریف کو امریکی اخبارنے بحری قذاق لکھا تومیڈیا نےکرپشن کاشور مچایا۔ گارڈین نے 2016 میں جنرل کیانی کےخلاف میڈیکل سکینڈل کی خبرلگائی۔انکومعصوم جانوں کاقاتل بتایا۔کیس میں کیانی نےاربوں روپےکمائے۔جنکی تفصیل بھارتی نشریاتی ادارے ANIنےجاری کی یہ برصغیرکابڑاکرپشن کیس تھا۔

    12جولائی2018انعام رحیم نےجنرل کیانی کےخلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں رٹ دائر کی، جس میںRanches ہاؤسنگ سکیم کاتذکرہ تھا۔ دستاویزات کےمطابق جنرل کیانی نےمبینہ طور پر50ارب روپےکمائےسکیم فراڈ تھی۔رحیم نےاس سکیم کاشکارمظلوم لوگوں کی مکمل فہرست بھی جمع کروائی۔

    مشرف کیانی کیسوں سے جڑاایک تلخ سچ۔
    مقدمات دائر کرنے والےانعام رحیم پر تین قاتلانہ حملے ہوئے۔جن میں وہ بری طرح زخمی ہوئے۔اسکے بعدبھی وہ اپنے مقصدسےپیچھے نہ ہٹے۔اگست2018میں انکے بیٹے کاپراسرار طور پر قتل کردیاگیا اب یہ وکیل اپنے بیٹے کےقاتلوں کوڈھونڈ رہا ہے۔

    1995نیول چیف منصورالحق نےاگسٹا90آبدوزکامعاہدہ کیا، 1997میں انکشاف ہوا۔ انہوں نےاس معاہدےمیں 3.369ملین$ کمیشن لیاتھا نوازشریف نےانکو ملازمت سے فوراً برطرف کیا۔ 1999میں مارشل لاکا ایک سبب جنرلوں کااحتساب بھی تھا۔۔منصورسےتفتیش ہوئی، پلی بارگین ہوا۔2013مراعات بحال ہوگئیں۔
     
    • زبردست زبردست × 1
    • معلوماتی معلوماتی × 1
    • غمناک غمناک × 1
  14. جان

    جان محفلین

    مراسلے:
    1,740
    موڈ:
    Dead
    ڈکٹیٹر باجوہ صاحب کی کرپشن کی داستان سامنے آنے میں تھوڑا وقت رہ گیا ہے۔ فاشسٹ عمران خان کو کوئی سمجھائے کہ جرنیل کسی کے سگے نہیں ہیں، اگر اسی طرح چلتے رہے تو ممکنہ پانچ سالہ حکومت کے بعد ذلیل ہونے کے لیے تیار ہو جائیں۔
     
    • متفق متفق × 1
  15. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,690
    بھٹو، بینظیر،زرداری، نواز شریف نے باری باری اور اکٹھے مل کر فوج کا کیا اکھاڑ لیا؟ میثاق جمہوریت میں سے کیا نکلا؟ عدلیہ بحالی تحریک کدھر گئی؟مشرف غداری کیس کا کیا بنا؟ اصغر خان کیس کا انجام کیا ہوا؟
    باتیں کروڑوں کی، دکان پکوڑوں کی۔ اب اپوزیشن اپنا دھڑن تختہ کروانے کے بعد چاہتی ہے کہ تحریک انصاف بھی فوج کے خلاف کھڑی ہو جائے اور اپنا انجام ان کے جیسا کروا لے۔ سبحان اللہ۔
     
  16. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,690
    یہ سب بتانے کا مقصد؟ ظاہر ہے جس ملک کا ہر ادارہ اور محکمہ چپڑاسی سے لے کر افسر شاہی تک کرپشن اور بدعنوانی میں ملوث ہے۔ وہاں فوجی ادارہ کیسےپاک صاف رہ سکتا ہے؟
    یہ طرز دفاع اپوزیشن جماعتوں کا پرانا طریقہ واردات ہے۔اپنی کرپشن کی داستانیں سامنے آنے پر بجائے اپنا نام صاف کرنے کہ کہتے ہیں کہ اگر ہم کرپٹ ہیں تووہ بھی تو کرپٹ ہیں۔ اس گھٹیا دفا ع کو انگریزی محاورہ میں کس خوبصورت انداز میں بیان کیا گیا ہے:
    You scratch my back I scratch yours
    یعنی جب تک کرپٹ فوجیوں کا احتساب نہیں ہوتا، کرپٹ سیاست دانوں، ججوں کا بھی احتساب نہ کرو۔ اور جیسا نظام چل رہا ہے چلنے دو۔ سبحان اللہ۔
     
  17. جان

    جان محفلین

    مراسلے:
    1,740
    موڈ:
    Dead
    قبلہ آپ میری بات سمجھے بغیر باتوں کے تیر چلا دیتے ہیں اور پوری بات ہی آؤٹ آف کنٹکسٹ ہو جاتی ہے۔ آپ میرے مراسلے پہ تبصرہ کرتے ہیں یا نواز شریف اور زرداری کے؟ اگر میرے مراسلے پہ تبصرہ کرتے ہیں تو پھر تبصرہ بھی میرے مراسلے کے متعلق کریں، ہر مراسلے میں آپ کا یہی رویہ ہے کہ اپوزیشن کی رائے کو زبردستی نتھی کر دیتے ہیں۔ اس سے ثابت یہ ہوتا ہے کہ آپ نواز شریف اور زرداری سے اتنے اوبسیسڈ ہیں کہ جو بھی آپ کی حکومت کی کارکردگی پہ سوال کرتا ہے آپ فوراً رٹی رٹائی کہانی سنا شروع کر دیتے ہیں کہ نواز شریف یوں، اپوزیشن یوں ہے وغیرہ وغیرہ۔ میرے مراسلوں کا کسی سیاسی جماعت سے کوئی تعلق نہیں۔ اپوزیشن کیا چاہتی ہے، میرا اس مراسلے سے ان کا کوئی تعلق نہیں۔ اگر کوئی بندہ آپ کو سپورٹ نہیں کرتا تو کیا لازم ہے وہ اپوزیشن کا ترجمان ہے؟ آپ کے اسی رویے کی وجہ سے آپ سے بحث کرنے کو جی نہیں کرتا۔
    دوم یہ ہے کہ میں نے کہیں بھی نہیں لکھا کہ فوج حکومت کے خلاف کھڑی ہو جائے، آپ اپنی دوسروں کے متعلق فرض کردہ رائے زبردستی ان سے منسوب کر دیتے ہیں اور ایسا ہی آپ نے پچھلے مراسلے میں کیا ہے، فوج کے خلاف کھڑے ہونا ایک بات ہے اور ان کو کھلی چھوٹ دے دینا دوسری بات، یہاں تک کہ وہ کھلم کھلا بدمعاشی پہ اتر ہیں اور ہر ادارے پہ اپنی رائے دینا شروع کر دیں اور آپ ان کے اقدامات کو مزید تقویت بخشیں، یہ کام درست نہیں ہے۔ ادارے چلانا آپ کا کام ہے، پالیسی بنانا آپ کا کام ہے لیکن جس طرح آپ نے فری ہینڈ دے رکھا ہے اس سے اوپریشن واضح طور پر حد سے بڑھتا جا رہا ہے۔
    وہ اگر کچھ اکھاڑ نہیں سکے تو ان کا انجام آپ کے سامنے ہے، آپ کا اس سے بھی برا ہونا ہے بس یہ ذہن میں رکھیں۔ آپ ماضی بہت جلدی بھلا دیتے ہیں ورنہ میں تو پہلے دن سے یہی کہہ رہا ہوں کہ ان سیاستدانوں کا حال ذہن میں رکھ کر حکومت کریں لیکن آپ کو یہ بات اس وقت سمجھ میں آئے گی جب واپسی کی راہ بند ہو گی۔
     
    آخری تدوین: ‏جون 1, 2019
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  18. آصف اثر

    آصف اثر محفلین

    مراسلے:
    2,900
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Busy
    بھئی اعتراض یہ نہیں کہ سیاست دانوں کا احتساب نہ ہو بلکہ یہ ہے کہ اسٹیبلشمنٹ کے چور اور کرپٹ آفیسرز احتساب کی ڈور اپنے ہاتھ میں نہ لیں بلکہ چپ چاپ اپنے احتساب کا انتظار کریں۔ چاہے سیاستدانوں سے پہلے احتساب ہو، یا بعد میں۔
     
  19. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    11,690
    تو جناب آپ ہی کوئی حل تجویز کر دیں پھر۔ جہاں حکومت فوج سے اختلاف کرے گی وہیں ان کا بوریا بستر گول کر کے گھر بھیج دیا جائے گا۔ اس کا حل کیا ہے؟ مسئلہ تو سب کو 70 سالوں سے معلوم ہی ہے۔
     
  20. جان

    جان محفلین

    مراسلے:
    1,740
    موڈ:
    Dead
    سبحان اللہ کرنے سے قبل اپنے پچھلوں مراسلوں پہ غور کریں آپ اسی دلیل کا سہارا لیتے آئے ہیں، جب آپ سے ججوں کے ریفرنسز کی بابت بات ہوتی ہے آپ فوراً دفاع کے لیے نواز شریف کی حملے کی داستان لے آتے ہیں، یعنی اپنے غلط کام کی تاویل ان کے کام سے دیتے ہیں۔ پہلے اپنا قبلہ تو درست کریں پھر شوق سے پوری تسبیح پڑھیں۔
    دوم یہ سب بتانے کا وہی مقصد ہے جو آپ کا مقصد ہوتا ہے نواز شریف یا دیگر سیاسی پارٹیوں کے متعلق کرپشن کی داستانیں گرم رکھنا۔ قوم کو تصویر کے دونوں رخ پتہ ہونے چاہئیں۔
     
    آخری تدوین: ‏جون 1, 2019
    • متفق متفق × 1

اس صفحے کی تشہیر