1. اردو محفل سالگرہ پانزدہم

    اردو محفل کی پندرہویں سالگرہ کے موقع پر تمام اردو طبقہ و محفلین کو دلی مبارکباد!

    اعلان ختم کریں

لاہور میں وکلاء کا امراض قلب کے اسپتال پر حملہ، آپریشن تھیٹر میں توڑ پھوڑ

جاسم محمد نے 'آج کی خبر' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏دسمبر 11, 2019

  1. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    15,734
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    وکیلوں کی لڑائی ڈاکٹروں کے ساتھ تھی۔ قانون کیوں توڑا۔ تشدد کی اجازت کہاں سے ملی؟
    پاکستان کی عوام بار کونسل اور سپریم کورٹ سے جواب مانگتی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  2. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,521
    پھر حکومت۔ او بھئی یہ تنازع ایک ہسپتال کے ڈاکٹروں اور وکلا تنظیم کے ساتھ ماضی میں ہوئی مار کٹائی پر شروع ہوا تھا۔ حکومت نے بیچ میں پڑ کر صلح صفائی کر وا دی تھی۔ البتہ ڈاکٹر رضوان نے مصالحت کے وقت ہونے والی کاروائی کا بعد میں مذاق اڑایا جس پر وکلا مشتعل ہو گئے اور آج اچانک حملہ کر دیا۔
    اس تفصیل کے بعد بھی میں دوبارہ حکومت کا نام سنو تو یہی سمجھوں گا کہ آپ بغض عمران کا شکار ہیں۔ ملک میں ہونے والے ہر مسئلہ کا ذمہ دار حکومت نہیں ہوتی۔
     
  3. جان

    جان محفلین

    مراسلے:
    1,932
    موڈ:
    Dead
    یہی بات جب فرقان بھائی نے کہی تھی تو آپ کو سمجھ نہیں آ رہی تھی، بات جب حکومتی 'اہلیت' پہ آئی تو آپ کا بیانیہ بدل گیا ہے!
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  4. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,521
    حکومت ڈاکٹروں اور وکیلوں کے درمیان صلح صفائی کر وا کر معاملہ ختم کر چکی تھی۔ اب ایک سر پھرے ڈاکٹر نے صلح صفائی کے دوران ہونے والی میٹنگ کا احوال سوشل میڈیا پر ڈال کر وکیلوں کی تضحیک کر دی تو اس میں حکومتی نا اہلی کہاں سے آگئی؟ کیا حکومت کو پارٹیز کے درمیان صلح صفائی نہیں کرنی چاہیے تھی؟
    بار بار نااہلی کا رونا رونے کی بجائے یہ کیوں نہیں بتاتے حکومت کو تنازعہ ختم کرنے کیلئے کیا کرنا چاہیے تھا؟
     
  5. جان

    جان محفلین

    مراسلے:
    1,932
    موڈ:
    Dead
    حکومت نے اگر ایسا کیا تھا تو بلاشبہ اچھا کام کیا تھا، لیکن پروپیگنڈہ ونگ ہمیشہ کی طرح اصل مسئلہ سے توجہ ہٹانے، حکومتی رٹ پہ نااہلی چھپانے اور کیش کرانے کے لیے 'ن لیگ' کا رونا بیچ میں لے آیا، اصل سوال تو یقیناً 'حکومتی رٹ' پہ بنتا ہے نہ کہ 'ن لیگ' پہ!
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  6. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,521
    لائیو پریس کانفرنس سن لیں۔ صوبائی وزیر برائے اطلاعات فیاض چوہان بتا رہے ہیں کہ بہت سے پکڑے گئے وکلا شہباز شریف کے قریبی ساتھی ہیں۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  7. جان

    جان محفلین

    مراسلے:
    1,932
    موڈ:
    Dead
    میرے ذہن میں سٹیٹ لکھتے وقت سول حکومت ہی تھی! حکومت، اس کے حامیوں اور مجھ میں صرف اسی سوچ کا 'فرق' ہے! :)
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  8. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,521
    اس وقت ۳۹ وکلا زیر حراست ہیں، وزیر قانون پنجاب
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  9. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,521
    پھر حکومت لکھتے نا۔ حکومت بھی اسٹیٹ کا ایک استون ہے :)
     
  10. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,521
    پی آئی سی حملہ، وکلا کے خلاف کریک ڈاؤن، بار کونسل کے صدر سمیت 15 گرفتار
    2019-12-11

    پنجاب پولیس نے انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی پر دھاوا بولنے والے وکلا کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کردیا۔

    پولیس نے وکلا کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کرتے ہوئے اب تک 15 سے زائد وکیلوں کو حراست میں لے لیا۔ رپورٹ کے مطابق پولیس نے لاور بار کے صدر عاصم چیمہ کو بھی گرفتار کرلیا جبکہ بقیہ کو بھی جلد حراست میں لیے جانے کا امکان ہے۔

    دوسری جانب پنجاب بارکونسل نے وکلا کی گرفتاریوں کے کل کل صوبےبھرمیں ہڑتال کااعلان کردیا۔ پنجاب بار کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ صوبے بھر میں وکلا عدالتوں کا بائیکاٹ کریں گے اور احتجاجی ریلیاں نکالی جائیں گی۔

    یاد رہے کہ وکلا نے آج پنجاب اسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی پر دھاوا بولا اور شدید توڑ پھوڑ بھی کی جس کے نتیجے میں اسپتال کا انتظام درہم برہم ہوگیا جبکہ ڈاکٹرز نے بھی احتجاجاً کام روک دیا۔

    مشتعل وکلا نے پولیس موبائل کو بھی نذر آتش کیا جبکہ پنجاب کے وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان کو بھی اغوا کرنے کی کوشش کی اور ناکامی پر انہیں شدید تشدد کا نشانہ بنایا۔

    وزیراعظم عمران خان نے لاہور پی آئی سی واقعے کا سخت نوٹس لیتے ہوئے چیف سیکرٹری پنجاب اورآئی جی سے رپورٹ طلب کی، ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعظم کو اجلاس کے دوران واقعے سے متعلق آگاہ کیا گیا جس پر انہوں نے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے رابطہ کرکے 48 گھنٹوں میں واقعے کی رپورٹ طلب کی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    15,734
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
  12. فرقان احمد

    فرقان احمد محفلین

    مراسلے:
    10,184
    المیہ تو یہی ہے کہ یہاں بعض معزز ارکان وکلاء گردی کی پُرزور الفاظ میں مذمت کرنے کی بجائے سیاست بازی میں مصروف ہیں۔ ان وکلاء کی حمایت میں کوئی ایک لفظ نہیں بول سکتا۔ خدارا، کم از کم حساس معاملات کے حوالے سے پارٹی بازی اور سیاست بازی کو ترک کیجیے اور ظلم کو ظلم کہنا سیکھیے۔ یہ لعن طعن کا رویہ کیا ہمیں زیب دیتا ہے اور وہ بھی بلا تحقیق؟ خوش گمانی رکھی جائے تو اس ملک کا ہر طبقہ، بشمول سنجیدہ وکلاء اور ججز کے، اس طرح کے سانحات کی مذمت ہی کر رہا ہو گا۔ کیا یہ بہتر رویہ نہیں کہ اس سانحے میں ملوث ہر ایک فرد کو قانون کے حوالے کیا جائے اور انہیں نشانِ عبرت بنا دیا جائے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  13. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    15,734
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    لاہور:وکلاء گردی کی پرزورمذمت کرتے ہیں‌، کالے کوٹ کواستعمال کرکے دہشت گردی کی گئی ،اطلاعات کےمطابق پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن پنجاب کے صدرڈاکٹرصاحبزادہ سید مسعودالسید نے لاہور کے ہسپتال پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی (پی آئی سی) پر وکلاء کی جانب سے دھاوہ بولنے ڈاکٹرز پیرا میڈیکل سٹاف مریض اور لواحقین کو تشدد کا نشانہ بناکر قتل اور زخمی کرنےپر پرزور اور شدید الفاظ میں مذمت کی ہے ۔

    پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن پنجاب اور ملک بھر کی میڈیکل کی تنظیمیں مل کر وکلاء کےجن شرپسند عناصر نے یہ بہیمانہ اقدام کیا ہے، ان کے خلاف بھرپور قانونی کاروائی کرے گی۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ ان کے خلاف وکلاء کی تنظیمیں کاروائی کرتے ہوئےایسے وکلاءکے لائسنس معطل کرکے ان کو قرار واقعی سزادیں۔اور ان کا بار میں داخلہ پر پابندی لگائی جائے۔ایسے غنڈوں کے خلاف مقدمہ درج کروایا جائے۔ ان سب کو فوری گرفتار کر کے سخت سزا دی جائے۔

    پی ایم اے پنجاب کے صدر نےوکلاء کے سرکردہ رہنمائوں سے یہ بھی مطالبہ کیا ہے کہ ایسے غنڈوں اور شر پسند وکلاءکے خلاف فوری کاروائی کرواکر اپنی لاتعلقی کااظہار کریں۔اور ایسے شرپسند وکلاء کو نکیل ڈال کر رکھیں ۔بصورت دیگر تشدد کےاس کیس میں ان کو بھی مقدمے میں نامزد کرنے کی درخواست دی جاسکتی ہے۔کیونکہ ہم سمجھتے ہیں کہ یہ تشددوکلاء کے تنظیمی رہنماءوں کی ایماءپر کیا گیا اور یہ سارا واقعہ ان کی سرپرستی میں پیش آیا ہے ۔

    انہوں نے کہا ہےکہ آج مسیحاؤں کو ان وکلاءکی جانب سے زدو کوب اور تشدد کا نشانہ بنا کر عدم برداشت کی بدترین مثال قائم کی ہے۔انہوں نے کہا ہےکہ ڈاکٹرز غیر جانبدار رہ کر اپنی پیشہ وارانہ ذمے داریاں پوری کرتے ہیں اور اگر آئندہ ایسا کوئی واقعہ پیش آیا تو پی ایم اے پنجاب پورے پاکستان کی میڈیکل کی تنظیموں کے ساتھ ملکر ملک بھر میں وکلاء تنظیموں اوران کے رہنماﺅں کے خلاف ریلیاں نکالےگی۔ اوراس مسئلہ پر ملک بھر کی تمام میڈیکل تنظیمیں تشدد کا نشانہ بننے والے ڈاکٹرز پیرامیڈیکل ورکرز اور مریضوں کے شانہ بشانہ کھڑی ہے۔ ڈاکٹر صاحبزادہ سید مسعودالسید نے اس مسئلے پر پی ایم اے پنجاب کی ایمرجنسی میٹنگ پی ایم اے آفس لاہور میں بروز ہفتہ چودہ دسمبر دن ایک بجے طلب کر لی ہے
     
    • زبردست زبردست × 1
  14. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,521
    عدلیہ کے نام پر سیاست تحریک انصاف حکومت نہیں ن لیگ کرتی رہی ہے۔ یہ دیکھیں ۲۰۰۹ میں جب عدلیہ بحالی تحریک میں ن لیگ نے بڑھ چڑھ کر حصہ لیا تھا۔ آج یہی ن لیگی وکلا ملک کا ناسور بن چکے ہیں۔ ان وکلا کو غنڈہ گردی کی شہہ اس سیاسی احتجاجی مظاہرے کے بعد ملی تھی۔
    [​IMG]
     
  15. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    15,734
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
  16. فرقان احمد

    فرقان احمد محفلین

    مراسلے:
    10,184
    یہ کیا جواز ہوا۔ جناح بھی اسی طبقے سے تعلق رکھتے تھے اور وکلاء قریب قریب ہر تحریک میں ہراول دستہ رہے۔ آپ شاید بھول گئے کہ قبلہ خان صاحب بھی اس تحریک میں بذاتِ خود شامل تھے۔ تاہم، جب کچھ غلط ہو گا، تو اسے غلط کہا جائے گا۔ پوری وکلاء برادری کو سیاسی مفادات کے لیے معطون کرنا غلط طرز عمل اور خلافِ عقل رویہ ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  17. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,521
    ٹھیک ہے بہرحال اب وقت آگیا ہے کہ وکلا کی غنڈہ گردی اور معاشی کو لگام ڈالی جائے۔ ان کا جب دل کرتا ہے پولیس والوں پر تشدد کرتے ہیں، ججوں کو کرسیاں دے مارتے ہیں۔ اب ایسا نہیں چلے گا۔
     
  18. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,521
    لاہور سے اطلاعات آ رہی ہیں کہ ن لیگی وکلا لوہار ہائی کورٹ کے چیف جسٹس سے ملے ہیں اور چاہتے ہیں کہ آج پکڑے گئے وکلا کے خلاف مقدمات ختم کئے جائیں۔ اور اس سارے معاملہ کو رفع دفع کیا جائے :)
     
  19. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    15,734
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Amused
    وکلا برادری اپنے اندر موجود ایسے دہشت گردوں کے خلاف جب آواز نہ اٹھائے گی تو ان کی منافقت واضح ہو جاتی ہے کہ سب مفادات کی گیم ہے۔ عوام کا درد کسی کو نہیں۔ بار کونسل اِس واقعہ کی مذمت اِس لیے نہیں کرے گی کیوں کہ اُس نے ووٹ لینے ہیں انہی بدمعاش غنڈہ گرد وکیلوں سے۔
     
    • زبردست زبردست × 1
  20. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    21,521
    اس وقت بار کونسل اور لوہار ہائی کورٹ کے چیف جسٹس باہم مشاورت سے آج کے سارے سانحہ پر مٹی ڈالنے کی پلاننگ کر رہے ہیں :)
     

اس صفحے کی تشہیر