سعود عثمانی غزل - سعود عثمانی

چوہدری لیاقت علی نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جنوری 30, 2015

  1. چوہدری لیاقت علی

    چوہدری لیاقت علی محفلین

    مراسلے:
    305
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    نہیں ہے اب کوئی منزل 'نہیں ہے جادہ کوئی
    ارادے توڑ کے نکلا ہے بالارادہ کوئی

    یہ بات اس کو خبر بھی نہیں مگر سچ ہے
    کہ چاہتا ہے مجھے اس سے بھی زیادہ کوئی

    میں رفتگاں کے بنائے مکاں میں رہتا ہوں
    کسی کے خواب سے کرتا ہے استفادہ کوئی

    ہوائے تند کو شاید کبھی خبر بھی نہ ہو
    یہیں کہیں تھا چراغوں کاخانوادہ کوئی

    اسی خیال سے پھر عمر بھر سکوت کیا
    پکارتا ہو مجھے دور سے مبادا کوئی

    جلے بغیر گزارا بھی اور کیا ہے سعود
    نباہنا بھی تو ہے روشنی سے وعدہ کوئی

    (سعود عثمانی)
     
  2. نظام الدین

    نظام الدین محفلین

    مراسلے:
    1,005
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    بہت عمدہ۔۔۔۔۔ زبردست
     
  3. ادب دوست

    ادب دوست معطل

    مراسلے:
    3,429
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    بہت خوب واہ واہ
     

اس صفحے کی تشہیر