شیخ ایاز کے دوہے ترجمہ آفاق صدیقی

فرخ منظور نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جون 11, 2019

  1. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,515
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    شیخ ایاز کے دوہے ترجمہ آفاق صدیقی

    ہیر جلی اور بجھ گیا رانجھا ، سارا جھنگ تباہ
    راکھ میں اپنی کافی ڈھونڈے بیٹھا وارث شاہ

    پاؤں ہوئے پنوں کے اوجھل ، راکھ ہوا بھنبھور
    ہائے سسی یہ تیرے دکھڑے اور ہوا کا شور

    سانجھ ہوئی اور پنچھی گھر لوٹے، کبیرا رووئے
    اپنی اپنی جنم بھوم سے پریم سبھی کو ہووئے

    سمجھ کے میرے مدھ کو میلا جام مرا ٹھکرایا
    اپنے من کے میلے پن کا دھیان تجھے کب آیا ؟

    پھر نہ ملے گی اس مورت کو مٹی میں مت رول
    مندر کے در کھول پجاری ، مندر کے در کھول

    مہک پون میں برکھا رت کی اور نہ گھٹا گھنور
    کہیں کہیں اس اجڑے تھر میں بول رہا ہے مور

    کوٹھی کھول کلال پیارے من ہے مالا مال
    پیار نہ ہو تو گلی گلی میں ملیں گے سب کنگال

     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  2. سید عاطف علی

    سید عاطف علی محفلین

    مراسلے:
    6,879
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Cheerful
    کیا کہیں سے اصلی بھی مل سکے گا یہ دوہا ؟
     

اس صفحے کی تشہیر