زیادتی کےمجرموں کوسرعام پھانسی یا جنسی صلاحیت سے محروم کردیناچاہیے، وزیراعظم

جاسم محمد نے 'سیاست' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏ستمبر 14, 2020 11:50 شام

  1. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    23,058
    زیادتی کےمجرموں کوسرعام پھانسی یا جنسی صلاحیت سے محروم کردیناچاہیے، وزیراعظم
    ویب ڈیسک 4 گھنٹے پہلے
    [​IMG]
    کوئی گارنٹی نہیں کہ موجودہ آئی جی پنجاب بھی چل پائےگا، عمران خان فوٹو: فائل


    اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ خواتین اور بچوں سے زیادتی کے مجرموں کو سر عام پھانسی دینی چاہیے یا پھر انہیں جنسی صلاحیت سے ہی محروم کردینا چاہیے۔

    نجی ٹی وی دیئے گئے انٹرویو میں وزیر اعظم نے کہا کہ موٹر وے پر زیادتی کے واقعے نے پوری قوم کو ہلا دیا ہے۔ اس واقعے میں ملوث ایک ملزم ماضی میں گینگ ریپ میں ملوث رہ چکا ہے، اس طرح کے لوگوں سے نمٹنے کے لیے تازہ قانون سازی کی ضرورت ہے، میرے خیال میں تو انہیں چوک پر لٹکانا چاہیے۔ وہ حکومت میں آئے تھے تو ملک میں بڑھتے ہوئے جنسی جرائم کے تناظر میں وہ سرِعام پھانسی کے حق میں تھے تاہم انہیں مشورہ دیا گیا کہ ایسا کرنے سے عالمی ردعمل ہوسکتا ہے۔ میرے خیال میں قتل کی طرح قانون میں جنسی جرائم کی بھی درجہ بندی ہونی چاہیے اور زیادتی کے مجرموں کو جنسی طور پر ناکارہ بنا دیا جانا چاہیے۔

    وزیر اعظم نے کہا کہ اقتدار سنبھالا تو آئی جیز کی بریفنگ سے حیران ہوا کہ زیادتی کے کئی کیسز تو رپورٹ ہی نہیں ہوتے۔ معاشرے میں فحاشی بڑھے تو اس طرح کے جرائم بڑھتے ہیں، جس سے خاندانی نظام تباہ ہو جاتا ہے۔ زیادتی کرنیوالے جیل سے باہر آ کر پھر وہی کام کرتے ہیں، ایسے ملزمان پولیس کے پاس رجسٹرڈ ہونے چاہییں اور ان کی نگرانی کی جانی چاہیے، واقعے میں ملوث عابد علی جرائم پیشہ گینگ کا سرغنہ تھا جو کئی سال سے وارداتیں کر رہا تھا اگر اسے 2013 میں سخت سزا دی جاتی تو شاید موٹروے والا افسوس ناک واقعہ نہ ہوتا۔

    پاکستان اور بھارت میں کورونا کی صورتحال

    ملک میں کورونا کی صورت حال سے متعلق پوچھے گئے سوال پر وزیر اعظم نے کہا کہ بھارت نے کورونا کے معاملے پر وہی غلطی کی جو ہماری سیاسی جماعتیں مجھے کرنے کا کہہ رہی تھیں، جب کورونا وائرس شروع ہوا تو ابتدائی 2 ماہ کے دوران اپوزیشن مجھے مسلسل کہا کہ یورپ اور چین کی طرح مکمل لاک ڈاؤن کیا جائے جب کہ میرا یہ موقف تھا کہ ہمارا ایک بڑا طبقہ دیہاڑی دار ہے جو صبح کماتے ہیں تو ان کے گھر میں شام میں چولہا جلتا ہے، بڑے شہروں میں بڑے پیمانے پر کچھی آبادیاں ہیں اگر ہم یورپ جیسا لاک ڈاؤن کرتے ہیں تو ان کا کیا ہو گا۔ ہم نے بہت جلدی فیصلہ کیا کہ سخت لاک ڈاؤن نہیں کریں گے، ہم نے زراعت کھول دی، تعمیراتی صنعت کھول دی، پھر ہم نے ڈیٹا اکٹھا کر کے ہاٹ اسپاٹس دیکھے اور اسمارٹ لاک ڈاؤن کرتے ہوئے ہاٹ اسپاٹس کو بند کرنے کی کوشش کی اور اس کی بدولت ہم قابو پانے میں کامیاب رہے لیکن سردیوں میں کورونا کی ایک اور لہر آ سکتی ہے لہٰذا ابھی بھی ہمیں احتیاط کرنی ہے۔

    پی ٹی آئی میں کچھ لوگ وزیراعلیٰ بننا چاہتے ہیں

    وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی کاکردگی اور ان کی تبدیلی سے متعلق پوچھے گئے سوال پر وزیر اعظم نے کہا کہ عثمان بزدارکی صرف ایک کمزوری ہے کہ میڈیا پر خود کو پروموٹ نہیں کرسکے ، وہ شہباز شریف کی طرح اربوں روپے خرچ نہیں کرتے، پی ٹی آئی میں بھی کچھ لوگ وزیراعلیٰ بننا چاہتے ہیں وہ عثمان بزدار کو کم سمجھتے ہیں۔

    آئی جی پنجاب کارکردگی دکھائیں گےتب ہی رہیں گے

    آئی جی پنجاب کی تبدیلی اور سی سی پی او لاہور کی تعیناتی سے متعلق وزیر اعظم نے کہا کہ کوئی گارنٹی نہیں کہ موجودہ آئی جی پنجاب بھی چل پائیں گے، وہ کارکردگی دکھائیں گے تب ہی رہیں گے۔

    ہرملک کی اپنی خارجہ پالیسی

    اسرائیل کو تسلیم کرنے سے متعلق وزیر اعظم نے کہا کہ ہرملک کی اپنی خارجہ پالیسی اور اپنے مفادات ہوتے ہیں، اسرائیل کو پوری دنیا تسلیم کرلے لیکن جب تک فلسطینی خود اسے تسلیم نہیں کرتے کوئی فرق نہیں پڑے گا۔
     
  2. یاسر حسنین

    یاسر حسنین محفلین

    مراسلے:
    262
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
     
    • متفق متفق × 1
  3. نور وجدان

    نور وجدان مدیر

    مراسلے:
    6,270
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Asleep
    اسکا مطلب ہے عوام پڑھی لکھی نہیں!
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  4. یاسر حسنین

    یاسر حسنین محفلین

    مراسلے:
    262
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    خدا جانے۔ شاید اسی وجہ سے ایک کروڑ نوکریاں امیدواروں کی منتظر ہیں کیونکہ عوام ”پڑھے لکھے“ نہیں ہیں۔
    ویسے یہ تضاد دکھانے کی کوشش تھی کہ ایک طبقہ سزاؤں پر متفق ہے جبکہ دوسرا اسے تشدد اور نہ جانے کیا کیا سمجھتا ہے۔
    ویسے بھی یہاں قانون صرف کمزور کے لیے ہے۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  5. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    9,618
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    خدا جانے نیازی صاحب کب کنٹینر پر سے نیچے اتریں گے۔ لگتا ہے ان کی نصف بہتر بھی انہیں یقین نہیں دلاسکیں کہ اب وہ وزیراعظم ہیں۔چوہدری فوادحسین نے درست کہا کہ ناگن چورنگی پر کھڑے عوام تو یہ باتیں کہہ سکتے ہیں، نام نہاد پڑھے لکھے لوگ دس پانچ ہزار لوگوں کو لٹکانے کی بات کریں تو یہ بات درست نہیں۔ قانون موجود ہے عدالتیں موجود ہیں۔ ایسے میں کسی کو قانون اپنے ہاتھ میں لینے یا مجرم کی سزا سے ذاتی تسکین حاصل کرنے کی کوشش نہیں کرنی چاہیے۔
     
    • متفق متفق × 1
  6. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    23,058
    [​IMG]
    [​IMG]
    وزیر اعظم سزائے موت کے حق میں نہیں ہیں۔
     
  7. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    23,058
    تحریک انصاف میں بیک وقت لبرل اور قدامت پسند سوچ پائی جاتی ہے۔ فواد چوہدری اور شیریں مزاری پارٹی کا لبرل دھڑا ہے۔
     
  8. ابو ہاشم

    ابو ہاشم محفلین

    مراسلے:
    870
    ایسے مجرموں پر دواؤں کے تجربات کرنے چاہئیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  9. سید رافع

    سید رافع محفلین

    مراسلے:
    1,233
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
  10. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    23,058
    آپ کی پارٹی نے مخالفت کر دی۔۔۔
    پیپلزپارٹی نے زیادتی کیس کے مجرم کو سرعام پھانسی دینے کی مخالفت کردی
    ویب ڈیسک 3 گھنٹے پہلے
    [​IMG]
    آمر ضیاالحق نے سرعام پھانسی دی تو کیا اس سے زیادتی اور دیگر جرائم ختم ہو گئے تھے، سینیٹر رضاربانی


    اسلام آباد: ایوان بالا میں بھی سانحہ موٹروے کی گونج سنائی دی۔ پیپلزپارٹی کی سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ واقعے سے توجہ ہٹانے کیلئے پھانسی کی سزا کی بحث چھیڑی گئی۔

    سانحہ موٹروے پر وفاقی کابینہ کے اجلاس میں بھی بحث کی گئی، وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ زیادتی کیس میں ملوث مجرم کسی رعایت کے مستحق نہیں ہیں، کابینہ اراکین نے بھی سنگین سزاؤں کے لیے قانون سازی کا مطالبہ کردیا۔

    دوسری جانب چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کی زیرصدارت سینیٹ اجلاس میں وقفہ سوالات کے بعد معمول کی کارروائی معطل کرکے سانحہ لاہور موٹروے پر بحث کی گئی۔

    پیپلزپارٹی کی سینیٹر شیری رحمان نے کہا سی سی پی او کو شاباشی کی تھپکی دے کر عورتوں کو پیغام دیا گیا کہ نئے پاکستان میں آپ محفوظ نہیں، عورت نے 130 پر کال تو ایک گھنٹے تک پولیس کیوں نہ آئی؟ انہوں نے کہا واقعے سے توجہ ہٹانے کے لیے پھانسی کی سزاوں کی بحث چھیڑ دی گئی ہے۔

    پیپلزپارٹی کے سینیٹر رضا ربانی نے سینیٹ اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ریاست ماں تو نہ بن سکی، ڈائن بن گئی ہے، ظلم کے خلاف بات کرنے والوں کو غائب کر دیا جاتا ہے، کہا جاتا ہے کہ ہم سرعام پھانسی دیں گے کیا آمر ضیاالحق نے سرعام پھانسی دی تو اس سے ریپ اور جرائم ختم ہو گئے تھے۔

    پی ٹی آئی سینیٹر فیصل جاوید نے کہا زیادتی کے واقعات کو روکنے کیلئے قوانین میں ترامیم وقت کی ضرورت ہے، جنسی درندوں کی پشت پناہی کرنے والوں کو بھی مثالی سزا دینی ہو گی۔
     
  11. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    9,618
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    عقلمندی اور سمجھداری کا تقاضا یہی ہے کہ بھپرے ہوئے عوام کے جذبات کو مزید بھڑکا کر قوم کے شدت پسندانہ رویوں کو مزید بڑھاوا نہ دیا جائے۔ پولیس مقابلوں میں بے گناہوں کو مار کر گنتی پوری کرنے کے بجائے درست تفتیش کرکے تمام ثبوت عدالت میں پیش کیے جائیں اور وہاں سے سزاؤں کا اعلان کروایا جائے۔

    نیازی صاحب کو چاہیے سستی شہرت حاصل کرنے کے بجائے مجرموں کو بمع ثبوت عدالت کے حوالے کریں۔ نہ ان کا کام دس پانچ ہزار لوگوں کو کو پھانسی پر لٹکانا ہے اور نہ ملزموں کی اعضاء بریدگی ان کا مینڈیٹ ہے۔

    جب ان کے کام جنرل صاحب اور ان کی ٹیم سرانجام دیں گے اور یہ خود ان خرافات میں وقت ضائع کریں گے تو ملک کا خدا ہی حافظ ہے۔
     
    • زبردست زبردست × 1
  12. یاسر حسنین

    یاسر حسنین محفلین

    مراسلے:
    262
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    تمام ثبوت عدالت میں پیش کیے جائیں اور وہاں ان ثبوتوں کو ناکافی قرار دے کر ملزمان کو بری کر دیا جائے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  13. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    9,618
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    جو آپ نے کہا ہر درد مند شہری یہی کہتا ہے۔ ہم تو ٹھہرے عوام، ہم یہی سوچتے ہیں کیونکہ ہم نہیں جانتے کہ اندر آنے کیا ہورہا ہے۔

    ہم پاکستانی نظام، عدالت ، آئین و قانون میں یقین کیوں نہیں رکھتے۔ ہم ہی میں سے کچھ طاقتور اور بااثر لوگ اسی آئین و قانون، عدالت اور نظام کو پائمال کرتے ہیں اور عوام میں اس تاثر کو بھی ہوا دیتے ہیں کہ اصل قصور اس نظام، عدالت قانون اور آئین کا ہے۔

    اس ملک کی بہتر سالہ تاریخ میں تین مرتبہ آئین کو روندا گیا۔ پولیس آئے دن ماورائے عدالت ملزموں کو قتل کرتی ہے تاکہ گنتی پوری کی جاسکے۔ جن لوگوں کو عدالت سے بچانا مقصود ہوتا ہے ان کے خلاف پورے ثبوت پیش نہیں جاتے ۔ جج کا کام پیش کردہ حقائق کی روشنی میں فیصلہ کرنا ہوتا ہے۔ بعض فیصلوں میں چمک بھی آڑے آتی ہوگی لیکن یہ سب کچھ نظام میں یقین نہ رکھنے کا نتیجہ ہے۔

    یہ بھی یاد رکھیے کہ بہت سے مجرموں کا چھوٹ جانا ایک بے گناہ کے پھانسی چڑھ جانے سے بہتر ہے۔

    جو کچھ آپ نے کہا اسی وجہ کو استعمال کرتے ہوئے کچھ لوگ قانون کو ہاتھ میں لے لیتے ہیں ۔ اس کا نتیجہ انارکی ہوتا ہے۔ لاقانونیت ہوتا ہے۔ ہمارا معاشرتی اس لاقانونیت کے نتیجے میں افغانستان بن جائے گا جو ہم میں سے کسی کے لیے گوارا صورتحال نہ ہوگی۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • متفق متفق × 1
  14. بابا-جی

    بابا-جی محفلین

    مراسلے:
    198
    یک رُخی سوچ فوجی قربت کا نتیجہ ہے۔ یہاں اپنے مُخالفین کو رگیدنے کے لیے غلط مُقدمے بنا کر پھانسی دی جا سکتی ہے۔ شواہد عدالت میں ٹھیک طرح پیش کر کے عُمدہ انداز میں مُقدمہ لڑنا چاہیے اور ایسے کیسز میں مُلزم کو صفائی کا بھرپُور موقع مِلنا چاہیے۔ عدالتیں ایسے مُقدمات کو جلد نپٹائیں۔
     
    • متفق متفق × 2
  15. ظفری

    ظفری لائبریرین

    مراسلے:
    11,769
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Question
    اس پر تو ویک اینڈ پر بیٹھ کر لکھنا پڑے گا ۔ :thinking:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  16. آورکزئی

    آورکزئی محفلین

    مراسلے:
    1,570
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    عورتوں اور بچوں کے ساتھ زیادتی کرنے والے درندوں کو سرعام پھانسی دے کر عبرت بنایا جا سکتا ہے۔ نامرد بنا کر اُنہیں معاشرہ میں چھوڑ دینا اُنہیں عبرت نہیں بناتا بلکہ وہ معاشرہ کے لیے زندہ رہنے تک خطرہ ہی بنے رہیں گے۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  17. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    23,058
    اگر سارے جج ایسے انصاف کرنے لگے تو نظام عدل ٹھیک ہو جائے گا۔ مسئلہ یہ ہے کہ زیادہ تر ججز خود ہی مظلوموں کو انصاف دلوانے کی کوشش نہیں کرتے۔ کیونکہ وہ صلح صفائی کے چکروں میں پڑ جاتے ہیں۔
     
    • متفق متفق × 1
  18. سید ذیشان

    سید ذیشان محفلین

    مراسلے:
    7,306
    موڈ:
    Asleep
    یہ چول پھر مارکیٹ میں آ گیا ہے:
     
    • غمناک غمناک × 1

اس صفحے کی تشہیر