جھاڑ کھنڈ میں اردو بطور دوسری سرکاری زبان

الف عین نے 'اردو نامہ' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 17, 2007

  1. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,986
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    ہندوستان کے صوبے بہار میں تو عرصے سے اردو کو دوسری سرکاری زبان کا درجہ حاصل ہے، لیکن جھاڑ کھنڈ جب سے اس ریاست سے ٹوٹ کر بنا ہے، اب تک محض ہندی ہی سرکاری زبان تھی۔ کل ایک نوٹفکیشن جاری کر دیا گیا ہے جس کی رو سے اب اردو بھی اس صوبے کی دوسری سرکاری زبان ہوگی۔
    اردو دنیا کو عمومی طور پر اور خصوصی طور پر جھاڑ کھنڈ والوں کو مبارک ہو۔ کوشش کریں کہ سرکاری خطوط اردو میں لکھیں، خطوط پر اردو میں پتے تحریر کریں۔ سرکاری عمارات میں اردو میں بھی سائن بورڈس لگائے جائیں۔ اور جہاں عوام کو اردو نظر نہ آئے، سرکار کو متوجہ کریں کہ اردو بھی استعمال کی جائے۔
     
  2. دوست

    دوست محفلین

    مراسلے:
    13,081
    جھنڈا:
    Germany
    موڈ:
    Fine
    آہ۔ ادھر بھی اردو اگر دوسری سرکاری زبان ہی بن جائے تو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔:rolleyes:
     
  3. شاکرالقادری

    شاکرالقادری لائبریرین

    مراسلے:
    2,696
    موڈ:
    Cheerful
    ناممکن ہے بھائي آپ يہ کيا کہہ رہے ہيں
     
  4. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,986
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    اس طرح یہاں ان صوبوں میں اردو کو دوسری زبان کا درجہ حاصل ہے:
    آندھرہ پردیش
    مہاراشٹر
    بہار
    اتر پردیش
    جھار کھنڈ
    اور جموں کشمیر کو بھی شامل کیا جا سکتا ہے جہاں کی سرکاری زبان ہی اردو ہے۔
     

اس صفحے کی تشہیر