ناز خیالوی ""تان سازِ درد کی درد آشنا تک جائے گی"" ناز خیالوی

فرحان محمد خان نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 7, 2017

  1. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,113
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    تان سازِ درد کی درد آشنا تک جائے گی
    بات بندے کی بہر صورت خدا تک جائے گی

    جان سے جائے گا میرے ساتھ جو بھی آئے گا
    میری غیرت مجھ کو لے کر کربلا تک جائے گی

    بات میری سرخئی خوں کی سرِ بزمِ وفا
    جب بھی چل نکلی ترے رنگِ حنا تک جائے گی

    خسرِو شہرِ جمال آئے گا سوئے گلستاں
    خیر مقدم کے لیے بادِ صبا تک جائے گی


    "ہر کمال را زوال و ہر زوال را کمال"
    یعنی جو بھی ابتدا ہے انتہا تک جائے گی
    نازؔ خیالوی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر