اے صبا مصطفیٰ سے کہہ دینا غم کے مارے سلام کہتے ہیں الیاس عطار قادری

سیما علی نے 'حمد، نعت، مدحت و منقبت' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اپریل 16, 2021

  1. سیما علی

    سیما علی لائبریرین

    مراسلے:
    20,565
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    اے صبا مصطفیٰ

    سے کہہ دینا غم کے مارے سلام کہتے ہیں
    یاد کرتے ہیں تم کو شام وسحر دل ہمارے سلام کہتے ہیں

    اللہ اللہ حضور کی باتیں مرحبا رنگ ونور کی باتیں
    چاند جن کی بلائیں لیتا ہے اور ستارے سلام کہتے ہیں

    اللہ اللہ حضور کے گیسُو بھینی بھینی مہکتی وہ خوشبو
    جس سے معمور ہے فضا ہر سو وہ نظارے سلام کہتے ہیں

    جب محمد

    کا نام آتا ہے رحمتوں کا پیام آتا ہے
    لب ہمارے درود پڑھتے ہیں دل ہمارے سلام کہتے ہیں

    زائرِ کعبہ تو مدینہ میں پیارے آقا سے اتنا کہہ دیا
    آپ کی گردِ راہ کو آقا

    بے سہارے سلام کہتے ہیں

    ذکر تھا آخری مہینے کا تذکرہ چھڑِ گیا مدینے کا
    حاجیو مصطفیٰ

    سے کہہ دینا غم کے مارے سلام کہتے ہیں

    اے خدا کے حبیب پیارے رسول

    یہ ہمارا سلام کیجئے قبول
    آج محفل میں جتنے حاضر ہیں مل کے سارے سلام کہتے ہیں
     

اس صفحے کی تشہیر