ایک سلام برائے اصلاح

محمد فائق نے 'اِصلاحِ سخن' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 3, 2019

  1. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    315
    آج بالکل مختلف رن کی کہانی ہوئے گی
    تیغ و خنجر پر گُلو کی حکمرانی ہوئے گی

    ہوئیں گے تشنہ دہن پر اطمینان و پر سکوں
    مضطرب، بے چین دریا کی روانی ہوئے گی

    حرّیت کی نگہبانی ہوگی قیدوبند سے
    بے ردائی سے ردا کی پاسبانی ہوئے گی

    حسن ہوئے گا تصدق اک سیاہ فام پر
    شوق سے قرباں ضعیفی پر جوانی ہوئے گی

    اک ہنسی آئے گی دامن میں کئی مطلب لیے
    بے زبانی سے زباں کی ترجمانی ہوئے گی

    ظلمتِ بیعت کا ہو جائے گا یکسر خاتمہ
    اک شمعِ انکار سے یوں ضوفشانی ہوئے گی

    یاد رکھا جائے گا مظلوم کے کردار کو
    ظلم کی لکھی ہوئی گرچہ کہانی ہوئے گی

    اس طرح ٹوٹے گا کچھ مظلوموں پہ کوہِ ستم
    سہل ہوگی موت، مشکل زندگانی ہوئے گی

    کم سنوں کے سر بھی نیزوں پر اٹھائے جائیں گے
    شرم سے تہذیبِ مقتل پانی پانی ہوئے گی

    تین دن مہمانوں کو بے آب رکھا جائے گا
    کیا ستم ہے، اس طرح بھی میزبانی ہوئے گی

    ورنہ فائق تُو کہاں اور یہ سخن سازی کہاں
    ہے یقیں تجھ پرکسی کی مہربانی ہوئے گی
     
  2. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    315
  3. عمران سرگانی

    عمران سرگانی محفلین

    مراسلے:
    338
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    ہوئے گی کی جگہ ہو گی لفظ درست ہو گا۔

    فاعلاتن فاعلاتن فاعلاتن فاعلن

    آج بالکل مختلف رن کی کہانی ہوئے گی
    تیغ و خنجر پر گُلو کی حکمرانی ہوئے گی
    فاعلن کو فعلن سے اور ہوئے گی کو ہو گی سے بدل دیں۔
    ہوئیں گے تشنہ دہن پر اطمینان و پر سکوں
    مضطرب، بے چین دریا کی روانی ہوئے گی
    اطمینان کا وزن م س م س م س م ہے۔
    حرّیت کی نگہبانی ہوگی قیدوبند سے
    بے ردائی سے ردا کی پاسبانی ہوئے گی
    حریت کی ی پر بھی شد ہے۔
    حسن ہوئے گا تصدق اک سیاہ فام پر
    شوق سے قرباں ضعیفی پر جوانی ہوئے گی
    ہوئے کو ہو سے بدل دیں ، سیاہ کا وزن م م س م ہے
    اک ہنسی آئے گی دامن میں کئی مطلب لیے
    بے زبانی سے زباں کی ترجمانی ہوئے گی

    ظلمتِ بیعت کا ہو جائے گا یکسر خاتمہ
    اک شمعِ انکار سے یوں ضوفشانی ہوئے گی
    شمع انکار کا وزن م س م م م س م س م ہے
    یاد رکھا جائے گا مظلوم کے کردار کو
    ظلم کی لکھی ہوئی گرچہ کہانی ہوئے گی
    گرچہ ؟؟؟
    اس طرح ٹوٹے گا کچھ مظلوموں پہ کوہِ ستم
    سہل ہوگی موت، مشکل زندگانی ہوئے گی
    مظلوموں کا و ساکن نہیں کیا جا سکتا
    کم سنوں کے سر بھی نیزوں پر اٹھائے جائیں گے
    شرم سے تہذیبِ مقتل پانی پانی ہوئے گی

    تین دن مہمانوں کو بے آب رکھا جائے گا
    کیا ستم ہے، اس طرح بھی میزبانی ہوئے گی
    بے آب کی جگہ پیاسا ۔۔۔
    ورنہ فائق تُو کہاں اور یہ سخن سازی کہاں
    ہے یقیں تجھ پرکسی کی مہربانی ہوئے گی

    باقی استاد جانیں اور انکا کام
     
    آخری تدوین: ‏اکتوبر 3, 2019
  4. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    315
    ہوئے گا
    ہوئے گی
    کا استعمال استاد شعرا نے کیا ہوا ہے
    اور سلام کی اصلاح کی جہاں تک بات ہے اس کے لیے الف عین سر کا انتظار کرنا بہتر ہے
     
  5. عمران سرگانی

    عمران سرگانی محفلین

    مراسلے:
    338
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    جدید شاعری میں اس طرح ال
    جدید شاعری میں یہ لفظ مستعمل نہیں ہے۔۔۔ پہلے استعمال ہوتے رہے ہیں۔۔۔
     
  6. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    315
    کلاسیکل رنگ میں کلام کہنے کے لیے رثائی ادب میں ان الفاظ کا استعمال آج بھی ہوتا ہے
     
  7. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,727
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    ہوئے گی ردیف قبول کی جا سکتی ہے لیکن سب کو پسند آئے، اس کی ضمانت نہیں دی جا سکتی! ہو گی میں بدلنے سے تو نئی بحر بن جاتی ہے جو گوارا نہیں کی جا سکتی
    تفصیلی اصلاح بعد میں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  8. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    315
    بہت شکریہ سر
     
  9. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,727
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    آج بالکل مختلف رن کی کہانی ہوئے گی
    تیغ و خنجر پر گُلو کی حکمرانی ہوئے گی
    .... مختلف رن کی کہانی... مختلف رن سے متعلق محسوس ہوتا ہے جب کہ شاید یہ مراد نہیں ہے۔ شاید درمیان میں کاما دینے سے واضح ہو، یا الفاظ بدلنے سے
    آج کچھ سب سے الگ رن.... ایک ممکنہ صورت

    ہوئیں گے تشنہ دہن پر اطمینان و پر سکوں
    مضطرب، بے چین دریا کی روانی ہوئے گی
    ... اطمینان کی ی کا اسقاط گوارا ہے لیکن ثقہ طور پر غلط۔
    دوسرے مصرعے میں 'لیکن' لانے سے بہتر ہو گا

    حرّیت کی نگہبانی ہوگی قیدوبند سے
    بے ردائی سے ردا کی پاسبانی ہوئے گی
    ... نگہبانی میں گ مفتوح ہے، ساکن باندھا گیا ہے

    حسن ہوئے گا تصدق اک سیاہ فام پر
    شوق سے قرباں ضعیفی پر جوانی ہوئے گی
    ... پہلا مصرع بحر سے خارج، سیاہِ فام سے تقطیع کر رہے ہو کیا؟

    اک ہنسی آئے گی دامن میں کئی مطلب لیے
    بے زبانی سے زباں کی ترجمانی ہوئے گی
    .. درست

    ظلمتِ بیعت کا ہو جائے گا یکسر خاتمہ
    اک شمعِ انکار سے یوں ضوفشانی ہوئے گی
    ... شمع محض شم تقطیع ہونا غلط ہے

    یاد رکھا جائے گا مظلوم کے کردار کو
    ظلم کی لکھی ہوئی گرچہ کہانی ہوئے گی
    .. درست
    باقی ذیل کے اشعار درست لگ رہے ہیں
    اس طرح ٹوٹے گا کچھ مظلوموں پہ کوہِ ستم
    سہل ہوگی موت، مشکل زندگانی ہوئے گی

    کم سنوں کے سر بھی نیزوں پر اٹھائے جائیں گے
    شرم سے تہذیبِ مقتل پانی پانی ہوئے گی

    تین دن مہمانوں کو بے آب رکھا جائے گا
    کیا ستم ہے، اس طرح بھی میزبانی ہوئے گی

    ورنہ فائق تُو کہاں اور یہ سخن سازی کہاں
    ہے یقیں تجھ پرکسی کی مہربانی ہوئے گی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  10. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    315
    بہت شکریہ سر رہمنائی کے لیے، کچھ غلطیاں درست کرنے کی کوشش کی ہے دیکھیے ٹھیک ہے یا نہیں

    ہوئیں گے تشنہ دہن پر اطمینان و پر سکوں
    اس کی جگہ
    ہوئیں گے تشنہ دہن پر مطمئن و پر سکون

    حریت کی نگہبانی ہوگی قیدوبند سے
    اس کی جگہ
    حریت کی پاسداری ہوگی قیدوبند سے


    حسن ہوئے گا تصدق اک سیاہ فام پر
    اس کی جگہ
    خوب روئی اک سیاہ فام پر ہوگی نثار
    اصل میں مجھے "سیاہ فام " کا درست وزن معلوم نہیں ہو رہا


    اک دیا انکار کا ایسا جلایا جائے گا
    بے نشاں ظلماتِ بیعت کی نشانی ہوئے گی
     
  11. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,727
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    ہوئیں گے تشنہ دہن پر مطمئن و پر سکون
    پر کی جگہ مگر یا لیکن کہیں تو بہتر ہو گا
    ہوئیں گے تشنہ دہن لیکن وہ ہوں گے مطمئن/ پر سکون
    زیادہ رواں لگتا ہے
    دوسرا اور چوتھا شعر درست ہے
    سیاہ فام میں ہ ساکن ہے، تم نہ جانے کیوں اسے 'سیاہے فام' تقطیع کر رہے ہو!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. بافقیہ

    بافقیہ محفلین

    مراسلے:
    363
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Volatile
    فائق بھائی! شعری محاسن و قبائح بر طرف۔ وزن و غیر وزن ، فنی اور لغوی مباحث سے کنارہ کرتے ہوئے

    ایک حقیقت یہ ہے کہ کلام میں بہت سی خوبیاں ہیں۔آپ کا کلام تحریک و انقلاب، محبت و رومان اور جذباتیت سے سرشار نظر آتا ہے۔

    میرا حقیر مشورہ ہے کہ اگر مسلسل مطالعہ جاری رکھتے ہوئے آپ لکھتے رہے تو آپ کی شاعری اپنے خاص آہنگ سے ہر ایک کو محظوظ کرے گی۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  13. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    315
    بہت شکریہ سر
    یہ مصرع دیکھیں درست ہے یا نہیں

    خوب روئی اک سیاہ چہرے پہ ہوئے گی نثار
     
  14. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    315
    حوصلہ افزائی کے لیے اور اپنا قیمتی مشورہ دینے کے لیے بہت شکریہ سلامت رہیں:in-love:
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  15. عمران سرگانی

    عمران سرگانی محفلین

    مراسلے:
    338
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Shh
    سیاہ کو سیہ کر دیں تو بہتر رہے گا کیونکہ سیاہ کا وزن علا نہیں علان ہے۔۔۔
    جیسے راہ کو رہ بھی لکھا جاتا ہے۔۔۔ نگاہ کو نگہ بھی۔۔۔
    اساتذہ سے مشورہ کر لیں۔۔۔
    یہ صرف میری رائے ہے ۔۔۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
    • متفق متفق × 1
  16. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,727
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    'سیہ' کے ساتھ درست ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  17. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    315
    شکریہ بردار
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  18. محمد فائق

    محمد فائق محفلین

    مراسلے:
    315
    بہت شکریہ سر
     
  19. فاخر رضا

    فاخر رضا محفلین

    مراسلے:
    2,747
    بہتر زبردست.
    میں اسے کسی مجلس میں پڑھوں گا انشاءاللہ
    بہت اچھ لگا
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  20. فاخر رضا

    فاخر رضا محفلین

    مراسلے:
    2,747
    ایک دفعہ اصلاح کے بعد مکمل پیش کردیجیے
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر