ایٹمی جھنم کی طرف

الف نظامی نے 'ماحولیات' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 4, 2008

  1. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    13,517
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    ایٹمی جھنم کی طرف
    Towards Atomic Hell
    علامہ یوسف جبریل 1982
    یہ باتیں علامہ محترم نے 1982 میں بیان فرمائیں مگر آج Physical World اور زمینی حقائق عملا ان کا نقشہ پیش کر رہے ہیں جو ہماری آنکھوں کے سامنے ہے۔ موجودہ سیاست عالمی میں امریکہ و ہندوستان کا سول ایٹمی سٹرٹیجیک معاہدہ علامہ محترم کی تحریروں کی عملا تصدیق کرتے نظر آتے ہیں۔

    اقتباس از "علامہ یوسف جبریل حیات و خدمات" از ڈاکٹر تصدق حسین راجہ


    *از بریگیڈیر ٹیپو سلطان سابق ڈائریکٹر جنرل تخفیف اسلحہ رزارت خارجہ پاکستان ، بحوالہ روزنامہ جنگ 4 اکتوبر 2008
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 12
    • زبردست زبردست × 1
  2. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    13,517
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    ہمیں اس دنیا کو تباہی سے بچانے کے لیے ماحول دوست توانائی کے ذرائع استعمال کرنے پر زور دینا چاہیے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
  3. arifkarim

    arifkarim معطل

    مراسلے:
    29,832
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
    ماحول دوست توانائی کو پیدا کرنے کیلئے جتنی توانائی کی ضرورت ہے، اس وجہ سے یہ کام کافی ناممکن ہے!:(
    ماحول دوست توانائی:
    شمسی توانائی،
    پانی سے حاصل کر دہ توانائی،
    ہوا سے حاصل کر دہ توانائی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  4. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,840
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    کیا امریکہ خود این پی ٹی پر دستخط کر چکا ہے؟ اگر نہیں تو پھر اسے کون روک سکتا ہے؟ اگر کر چکا ہے تو بھی اسے کون روک سکتا ہے؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  5. طالوت

    طالوت محفلین

    مراسلے:
    8,357
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Bashful
    کسی زمانے میں چیچک اور طاعون موت کا دوسرا نام تھا ، یہ لاعلاج مرض جان لیئے بنا نہیں چھوڑتے تھے لیکن آج یہ صرف کتابوں میں ہی نطر آتے ہیں ۔۔۔ انسانی ترقی نے جہاں مسائل پیدا کیئے وہاں ان کا حل بھی پیش کیا دیر سے ہی سہی لیکن بالاآخر پیش کیا ۔۔۔ ایٹمی توانائی کا درست استمعال اور اس پر چند قوموں کی اجارہ داری کا خاتمہ ہمیں زیادہ بہتر نتائج دے سکتا ہے لیکن حضرت انسان سدھرنے کا نام لے تو !
    وسلام
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  6. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    13,517
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool

    Books written by Allam Yousaf Gabriel:

    The First Eruption of Gabriel's Argument against the Atomic Hell

    Quran Predictis , Characterizes and averts the atomic Hell

    Atomic Energy for peace , a curse

    Quran versus Atomism , Ancient and Modern

    An Essay on Bacon's Life in Reference to his Philosphy

    Unscientific Philosphy of Scientist and the Quran

    Democritus enkindles ,Abraham Extinguishes the Atomic Hell

    Quran Sounds its nuclear warning about Atomic Hell

    A quranic Design of Nutralizer of the atomic Hell and my mission therein

    The Case of the atomic energy for peace in the court of Lord Justice Science

    Atomic Hell the Logical consequence of Baconian Philosphy

    Atomic Hell , Baconian Philosphy , Anti Christ , Quran and Abraham

    Relation between Quran and Bible

    The Quran Corrects a Philosphy confined to the present day science.
    .....​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  7. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce

    فواد ، زیک اور خرم صاحب ۔۔ ہی صحیح بتاسکیں گے۔
    امید ہے وہ اس میں بھی ہم ایسی جاہل قوم کو موردِ الزام
    ٹھہرائیں گے کہ ہم امریکہ بہاد پر انگشت نمائی ہی کرتے
    رہتے ہیں ۔۔ یعنی ۔۔ مردم مردم ٹک دیدم
     
  8. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    13,517
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    یہ مراسلہ بلیٹن آف اٹامک سائنٹسٹ کے مدیر کے نام علامہ یوسف جبریل نے ارسال کیا تھا۔
    سائنس دانوں سے اپیل​
    مجھے آپ کے موقر اخبار کی وساطت سے اٹامک سائنس دانوں سے یہ اپیل کرنی ہے کہ ایٹمی توانائی کو بنی نوع انسان کی خدمت کے لئے اس وقت تک نہ دیا جائے جب تک ری ایکٹروں کے قریب بسنے والے لاکھوں انسانوں کو تحفظ فراہم نہیں کر دیا جاتا۔ تابکاری کو کنٹرول کرنے کی ضرورت ہے۔ تابکاری سے پھیلنے والی بیماری کا علاج دریافت نہیں کرلیا گیا ہے اور اس کا سراغ لگانے کے ذرائع بھی انسانی علم کی دسترس میں نہیں آچکے ہیں۔ نیز تبدیل شدہ جین کو تباہ کرنے کے‌ ذرائع کا بھی پتہ نہیں چلا لیا گیا ہے۔ سائنس دانوں کو اس بات کا احساس ہونا چاہیے کہ انہوں نے سائنس کے عام قوانین کی خلاف ورزی کی ہے کہ انہوں نے انسانی خدمت کے لیے ایک قدرتی طاقت کو دینے سے قبل اس پر کنٹرول کو موثر نہیں بنایا۔
    یوسف جبریل
    راولپنڈی پاکستان

    بحوالہ علامہ محمد یوسف جبریل ، حیات و خدمات از ڈاکٹر تصدق حسین راجا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  9. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    شکریہ نظامی صاحب۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. ابوشامل

    ابوشامل محفلین

    مراسلے:
    3,253
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    مغل صاحب! سوائے پاکستان، ہندوستان، اسرائیل اور شمالی کوریا کے دنیا کے تمام ممالک، بشمول دیگر چار جوہری قوتیں، این پی ٹی کو تسلیم کرتی ہیں۔
    چرنوبل حادثہ کے بعد واقعتاً یہ بہت ضروری ہے کہ جوہری بجلی گھر آبادی والے علاقوں میں قائم نہ کیے جائیں تاکہ دوسرا سانحہ رونما نہ ہو۔
    آخری بات توانائی حاصل کرنے کے محفوظ اور ماحول دوست طریقے بہت مہنگے ہیں اور اگر نہیں بھی ہیں تو ان کی بہت مہنگی قیمت چکانی پڑے گی جیسے ایندھن بنانے کے لیے غذا کا استعمال حیاتیاتی ایندھن یا Bio-fuel کہا جاتا ہے اس کی وجہ سے دنیا نئے غذائی بحران کی جانب جا ری ہے۔ جبکہ شمسی اور پون بجلی پیدا کرنے پر اخراجات بہت زیادہ ہیں اور بجلی بھی بہت بڑی مقدار میں حاصل نہیں ہو پا رہی یہی وجہ ہے کہ کچھ ممالک میں آج بھی کوئلے سے بجلی حاصل کی جا رہی ہے، جیسے چین، جو ماحولیاتی آلودگی میں اضافے کا بہت بڑا سبب ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  11. مغزل

    مغزل محفلین

    مراسلے:
    17,597
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    شکریہ شامل کے ابا جان !!
     
  12. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    13,517
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    غیر ملکی سفیروں سے خطاب
    حضرت علامہ محمد یوسف جبریل نے 1968 میں اسلام آباد کے شہرزار ہوٹل میں دنیا بھر کے معزز سفیروں کے سامنے
    Quran is the only power to avert the atomic danger from mankind
    کے موضوع پر تقریر کی تھی۔ تقریر انگریزی زبان میں ڈیڑھ گھنٹہ متواتر ہوتی رہی۔ ایک نہایت ہی دلچسپ بات یہ ہوئی کہ تقریر کے دوران وسطی یورپ کے ایک سفیر سامنے والی کرسی پر براجمان تھے۔ انہوں نے سگار سلگایا۔ علامہ صاحب نے دل میں تہیہ کرلیا کہ ان کو یہ سگار نہیں پینے دیں گے۔
    "ایک پوائنٹ"
    اس نے سوچا کہ یہ پوائنٹ سن کر کش لگاوں گا۔
    "دوسرا پوائنٹ"
    اس نے سوچا یہ پوائنٹ سن کر کش لگاوں گا۔
    "تیسرا پوائنٹ"
    اس نے سوچا یہ پوائنٹ سن کر کش لگاوں گا۔

    حتی کہ مسلسل پوائنٹ چلتے رہے اور سگار بھی سلگتا رہا حتی کہ جب سگار اختتام پر پہنچا اور یکدم اس سفیر کے ہاتھ کو چنگاری لگی تو اس نے زور سے ہاتھ جھٹکا۔ دیکھا تمام سگار راکھ بن چکا تھا۔
    تقریر کامیاب رہی۔ ان میں اکثر غیر مسلم کمیونسٹ ممالک سے تعلق رکھتے تھے ، لیکن موضوع کی دلچسپی کے حوالے سے سویڈن کے سفیر بہت متاثر ہوئے اور انہوں نے کہا کہ وہ ہر ممکن طریقہ سے اسلام کے اس پیغام کو دنیائے انسانیت تک پہنچائیں گے۔ تقریر سننے کے بعد روس کے سفیر نے علامہ صاحب سے آکر مصافحہ کیا اور کہا
    the most thought provoking lecture , i have heard in my life
    ایسی فکر انگیز تقریر میں نے زندگی میں پہلی بار سنی ہے۔
    پھر امریکی سفیر نے بھی آکر یہی الفاظ دھرائے۔
    اس موضوع پر علامہ صاحب کے امریکہ کے رسالے Bulletin of the atomic scientists کے علاوہ بڑے بڑے اخبارات اور جرائد میں مضامین شائع ہوئے۔ مثلا
    Newsweek, Time , Concept , Pakistan Times
    اس کے علاوہ سینکڑوں رسائل اور اخبارات میں ان کے مضامین سرخیوں سے ساتھ شائع کئے گئے۔
    اقتباس از "علامہ یوسف جبریل حیات و خدمات" از ڈاکٹر تصدق حسین راجا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  13. طالوت

    طالوت محفلین

    مراسلے:
    8,357
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Bashful
    اسے ہماری بد قسمتی سمجھیئے کہ کم از کم میں علامہ موصوف سے بالکل واقف نہیں ، تاہم آپ کی اس تحریر سے محسوس ہوتا ہے کہ یقیننا قابل قدر شخصیت ہیں ۔۔۔ کیا ہی اچھا ہو اگر آپ ان کی تحریریں یہاں شئیر کریں اور اگر اس تقریر کو بھی یہاں پیش کر دیں تو یہ صدقہ جاریہ ہو گا ۔۔۔ مگر اردو زبان کی شرط برقرار رہے گی کہ انگریزی کا اردو ترجمہ کرنا اور اسے صحیح طور پر سمجھنا کم از کم میرے بس کی بات نہیں ۔۔۔
    وسلام
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    13,517
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    *از بریگیڈیر ٹیپو سلطان سابق ڈائریکٹر جنرل تخفیف اسلحہ رزارت خارجہ پاکستان ، بحوالہ روزنامہ جنگ 4 اکتوبر 2008[/QUOTE]
    تیسرے جاپانی ایٹمی پلانٹ میں ہائیڈروجن دھماکہ
    ٹوکیو(مانیٹرنگ ڈیسک)جاپان میں آج صبح آنے والے آفٹر شاکس کی ریکٹر سکیل پر شدت 5.8 ریکارڈ کی گئی جبکہ ساحلی شہر میاگی سے 2,000 افرا د کی لاشیں بھی ملی ہیں جبکہ تیسرے ایٹمی پلانٹ میں بھی دھماکہ ہوگیاہے۔ آج آنے والے 5.8شدت کے زلزلے کے کا مرکز فوکوشیما سیکٹر بتایاجارہاہے جبکہ آج آنے والے آفٹر شاکس کے بعد جاپانی حکومت نے ایک بار پھر سونامی کی وارننگ جاری کی تھی تاہم وہ جلد ہی واپپس لے لی گئی۔ زلزلے کے فوراً بعد سہمے ہوئے شہریوں میں ایک بار پھر خوف و ہراس پھیل گیا اورلوگ دوڑ کر سڑکوں اور کھلے مقامات پر نکل آئے۔ دوسری طرف فوکوشیما کے تین نمبر پلانٹ میں بھی پلانٹ کو ٹھنڈا رکھنے کے نظام میں خرابی پید اہونے کے باعث گیسوں کا پریشر بڑھنے کے بعد دھماکہ ہوگیاہے۔ حکام کے مطابق تیسرے پلانٹ میں ہائیڈروجن دھماکہ ہواہے جس کی شدت نارمل ایٹمی دھماکے سے زیادہ ہوتی ہے۔ حکام نے پہلے پلانٹ سے تابکاری کے جاری اخراج کے باعث متوقع بارش سے شہریوں کو بچنے کی ہدایات جاری کی ہیں کیونکہ اس بارش کے اثرات انسانی صحت کے لیے انتہائی خطرناک ہوسکتے ہیں۔ پلانٹ سے تابکاری کے اخراج کے بعد اب تک 200افراد متاثر ہوچکے ہیں اورپلانٹ کے اطراف سے دو لاکھ افراد کو منتقل کیاجاچکاہے۔ حکام کے مطابق ساحلی علاقے میاگی سے 2,000افراد کی لاشیں ملی ہیں لیکن ابھی تک شہر کے میئر اور کئی اہم شخصیات سمیت 20,000 لوگ لاپتہ ہیں۔ حکام کی طرف سے تاحال 12,000 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی گئی ہے۔ دوسری طرف جاپان کے دارالحکومت ٹوکیو سمیت مختلف علاقوں میں بجلی،پانی اور گیس کے ساتھ ساتھ پٹرول اور اشیائے خوردونوش کی کمی پیدا ہوگئی ہے۔ جاپانی وزیر اعظم نے کہاکہ وہ دوسری جنگ عظیم کے بعد سب سے خطرناک تباہی کا شکار ہیں۔ واضح رہے کہ روس اور امریکہ کی امدادی ٹیمیں جاپان پہنچ گئی ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  15. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    13,517
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
  16. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    14,867
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    خانجی۔۔ پهر جنگ کرانی ہے ؟
    ایچ اے خان
     
  17. ایچ اے خان

    ایچ اے خان معطل

    مراسلے:
    14,183
    موڈ:
    Cool
    پرا
    میں جنگ کا شدید مخالف اں
     
  18. الف نظامی

    الف نظامی لائبریرین

    مراسلے:
    13,517
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool

اس صفحے کی تشہیر