1. اردو محفل سالگرہ پانزدہم

    اردو محفل کی یوم تاسیس کی پندرہویں سالگرہ کے موقع پر تمام اردو طبقہ و محفلین کو دلی مبارکباد!

    اعلان ختم کریں

نظیر اکبر آبادی::::::گُل رنگی و گُل پیرَاہَنی گُل بَدَنی ہے::::::Nazeer Akbarabadi

طارق شاہ نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏دسمبر 14, 2018

  1. طارق شاہ

    طارق شاہ محفلین

    مراسلے:
    10,645
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm

    غزل
    نظیؔر اکبر آبادی

    گُل رنگی و گُل پیرَہَنی گُل بَدَنی ہے
    وہ نامِ خُدا حُسن میں سچ مُچ کی بنی ہے

    گُلزار میں خُوبی کے اب اُس گُل کے برابر
    بُوٹا ہے نہ شمشاد نہ سرو چَمَنی ہے

    انداز بَلا، ناز، سِتم، قہر، تبسّم
    اور تِس پہ غضب کم نگہی، کم سُخَنی ہے

    اُس گورے بدن کا کوئی کیا وصف کرے آہ !
    ختم اُس کے اوپر گُلرُخی و سیمتَنی ہے

    مُنہ چاند کا ٹُکڑا ہے، بدن چاند کی تختی
    دنداں ہیں گُہر، ہونٹ عقیقِ یَمَنی ہے

    بلوّر کی پُتلی کہوں یا موتی کا دانہ
    یا، چِین میں اِک چینی کی مُورت یہ بنی ہے

    نرمی میں، صفائی میں، نزاکت میں تن اُس کا
    ریشم ہے نہ گُلبرگ، نہ برگِ سَمَنی ہے

    گر پُھول کی پتّی کی بِنا پہنے وہ پوشاک
    چِھل جاوے بدن اُس کا، یہ نازک بَدَنی ہے

    کل میں کسی شخص سے، نام اُس کا جو پُوچھا
    یعنی، یہ پری یا کہ غزالِ ختَنی ہے

    وہ بولا کہ اِس شوخ کے تئیں کہتے ہیں ہیرا
    کام اِس کا سدا دِلبَری و دِل شِکَنی ہے

    تب مَیں نے وہیں ہنس کے کہا اُس سے نظیؔر، آہ !
    ہیرا نہ کہو اِس کو، یہ ہیرے کی کنی ہے

    نظیؔر اکبرآبادی

     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1

اس صفحے کی تشہیر