اصلاح کی گزارش۔ غزل

منذر رضا نے 'اِصلاحِ سخن' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 27, 2019

  1. منذر رضا

    منذر رضا محفلین

    مراسلے:
    333
    جھنڈا:
    Pakistan
    السلام علیکم، اساتذہ سے اصلاح کی درخواست ہے
    الف عین
    سید عاطف علی
    محمد خلیل الرحمٰن

    ترے جمال کی آتش میں جل رہے ہیں ہم
    غذائے سوزِ نہانی پہ پل رہے ہیں ہم
    ہمیں تو چاند کی مانند یاں چمکنا تھا
    مگر یہ کیا کہ سرِ شام ڈھل رہے ہیں ہم
    ترے فراق میں حالت ہماری ایسی یے
    کہ دل کو ہاتھ میں لے کر مسل رہے ہیں ہم
    نگاہِ مست سے پھر ہم کو مست کر ساقی!
    کہ دھیرے دھیرے نشے سے سنبھل رہے ہیں ہم
    سپردگی کی یہ منزل ہمیں مبارک ہو
    کہ آج اپنی انا کو کچل رہے ہیں ہم
    بوقتِ مرگ یہ حالت ہماری دیکھ ذرا
    غذائے زیست کے لقمے اگل رہے ہیں ہم

    شکریہ!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  2. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,621
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    اچھی غزل ہے
    بس دو اشعار کے بارے میں کچھ کہوں گا
    ہمیں تو چاند کی مانند یاں چمکنا تھا
    مگر یہ کیا کہ سرِ شام ڈھل رہے ہیں ہم
    یاں واں متروک ہیں آج کل اور رواں بھی نہیں
    ہمیں تو چاند کی صورت یہاں....
    کر دو
    سپردگی کی یہ منزل ہمیں مبارک ہو
    کہ آج اپنی انا کو کچل رہے ہیں ہم
    ... مبارک کیوں ہو؟ اس کی وضاحت نہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 5
  3. منذر رضا

    منذر رضا محفلین

    مراسلے:
    333
    جھنڈا:
    Pakistan
    شکریہ الف عین صاحب۔

    انا والا شعر اگر یوں کر دیا جائے

    کسی کے عشق میں ہوش و حواس کھو چکے ہیں
    کہ آج اپنی انا کو کچل رہے ہیں ہم

    یہ ٹھیک ہے؟
     
  4. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    33,621
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    ہوش و حواس کھونے کا ربط بھی انا کچلنے سے سمجھ میں نہیں آتا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر