اردو محفل سے لطفاً مذہبی کشیدگی کا خاتمہ کیجئے

حسان خان نے 'تجاویز، آراء و مسائل' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جون 25, 2013

  1. arifkarim

    arifkarim معطل

    مراسلے:
    29,828
    جھنڈا:
    Norway
    موڈ:
    Happy
    جناب یہ اردو محفل تو کیا ، قریباً ہر اردو فارم کا دائمی مسئلہ ہے! جب کچھ سال قبل مذہبی سیکشن کو ماڈریشن کے تحت لایا گیا تو خاکسار نے یہ تجویز پیش کی تھی کہ اس سیکشن کو مکمل آزاد کردیں یا بالکل حذف کر دیں کیونکہ پھر ماڈریشن کرنے والے کی اپنی مذہبی اور فرقہ ورانہ انسیت اسکی ماڈریشن کی خدمات میں مسائل بنیں گی۔ اسوقت میری ایک نہ سنی گئی اور آج اردو محفل کی مشتعل انگیز حالت آپکے سامنے ہے۔ محفل پر آج بھی کئی دھاگے قادیانی، اہل تشیع، بریلوی، بہائی سلسلہ وغیرہ کیخلاف بغض سے بھرے پڑے ہیں جبکہ دیگر دھاگے مذہب سے بیزاری میں اشتعال کی انتہاء کو چھو رہے ہیں۔ یہاں مسئلہ یہ ہے کہ اردو محفل کا ’’مشرقی‘‘ کلچر ہمیں دین اور مذہب پر دیگر سیکشنز کی بر عکس آزاد بحث و مباحثہ سے روکتا ہے۔ کیونکہ ہمارے مزاج کی وجہ سے اس موضوع پر بحث بہت جلدمشتعل ہو جاتی ہے اور پھر دھاگہ مقفل یا حذف ہو جاتا ہے! :(

    متفق! اور یہی رائے میں کئی سال قبل محفل کے ناظمین کو دے چکا ہوں! مکمل آزادی یا مکمل پابندی! اپنی مرضی کی پابندی اور آزادی دینے سے محفل طرفداری کا منظر پیش کرے گی اور یوں باقی فارمز کی طرح یہاں بھی ایک خاص مذہبی سوچ رکھنے والوں کا ٹھپہ لگ سکتا ہے۔

    کیونکہ یہ اردو کا فارم ہے، کسی خاص مذہب سے تعلق رکھنے والوں کا فارم نہیں ہے! مذہب کی شان میں قصیدے اگر اس زبان اردو سے لکھے جا سکتے ہیں تو اس پر جائز تنقید بھی اسی زبان کا حسن ہے۔ یا تو آپ مذہب کی شان میں قصیدے نہ لکھیں اور اگر لکھیں گے تو اسپر ہونے والی جائز تنقید کو برداشت کریں کیونکہ اردو محفل پر ہر قسم کی سوچ رکھنے والے اردو دان موجود ہیں۔

    یہ آپ ملحد، دین سے بیزار یا دیگر مذاہب سے تعلق رکھنے والے اردو دانوں پر کیسے ثابت کریں گے، ماسوائے اسکے کہ آپ اپنے ماڈریشن کے حقوق ایک خاص قسم کی مذہبی سوچ کی تبلیغ میں صرف کریں؟

    اسلامی تعلیمات کی بجائے اسکو مذہبی یا دینی تعلیمات کر دیں تو بہتر ہے کیونکہ پھر یہاں ہر مذہب کی تعلیمات کا اردو میں پرچار ہو سکے گا۔ یاد رہے کہ اردو صرف اسلامی زبان نہیں ہے۔ اردو میں بہت سا عیسائی اور دیگر مذاہب کا مواد بھی موجود ہے!

    ہاہاہا! یعنی مزید بیروکریسی! اب کیا ہر ذیلی سیکشن کیلئے الگ الگ قوانین بنانے پڑیں گے؟ انکو ماڈریٹ کون کرے گا؟ غیر جانبدار ملحد اور دہریہ؟ :lol:
    اوپر سے بعض اسلامی فرقے اور مسالک دیگر کے نزدیک دائرہ اسلام سے خارج ہیں۔ انکو جب اسلامی سیکشن میں داخل کیا جائے گا تو مزید شور شرابہ ہوگا۔ اسلحاظ سے آپکی یہ فرقہ ورانہ تجویز خاصی مضحکہ خیز ہے۔

    72 آفیشل اسلامی فرقے تو 1973 - 1974 میں تھے جب قادیانیوں کو دائرہ اسلام سے باہر پھینکا گیا۔ اس بات کو تو 40 سال گزر چکے ہیں۔ خدا کا خوف کریں۔ اب تو 72 سے کئی زیادہ اسلامی فرقے اور مسلک وجود میں آچکے ہیں۔ :atwitsend:
     
  2. محمد علم اللہ

    محمد علم اللہ محفلین

    مراسلے:
    5,832
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Daring

    واللہ اعلم بالصواب
    اور حسیب بھائی کیا بات ہے آج کل تو ایکدم فلسفیانہ باتاں کرنے لگ گئے :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. مہدی نقوی حجاز

    مہدی نقوی حجاز محفلین

    مراسلے:
    4,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    مذہب جو سکھاتا رہے۔ جو چیزیں 'فیکٹ' ہیں ان سے انکار قابلِ برداشت نہیں۔ اب وہ ٹھیک ہیں یہ عبث اس پر بحث نہیں۔ اور بات یہ بے ڈھنگی نہیں بلکہ مکمل ڈھنگ میں ہے کہ انسان اپنے فطری تقاضے کے مطابق کہیں نہ کہیں جانب داری سے کام لے ہی لیتا ہے۔ تو ثابت یہ ہوا کہ غیرجانبدار ہونا فی الوقت ممکن نہیں۔
     
  4. مہدی نقوی حجاز

    مہدی نقوی حجاز محفلین

    مراسلے:
    4,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    بھائی اس کا جواب تو بہت آسان رہا پھر۔ یہاں لوگوں کو تبلیغ کرنے سے یک بارگی منع کر دیا جائے کہ میاں اس فورم میں تم نے اپنے مذہب کی تبلیغ نہیں کرنی۔ ہلکی پھلکی اشتعال انگیزی قابل برداشت ہے لیکن پھر اس درجہ مذہبی کشیدگی پیدا نہ ہو گی!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. محمد علم اللہ

    محمد علم اللہ محفلین

    مراسلے:
    5,832
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Daring

    یہ کبھی ختم نہیں ہوگا بھائی جان یہ قوم مسلم کی گھٹی میں پڑی ہے اس کے بغیر اس قوم کو سکون اور قرار ہی نہیں ملے گا اور اس میں کوئی شک نہیں کہ اس قوم کے پسماندگی کی یہ ایک بہت بڑی وجہ ہے ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  6. محمد علم اللہ

    محمد علم اللہ محفلین

    مراسلے:
    5,832
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Daring
    ”سانپ اور بچھو ایک سوراخ میں جمع ہوجائیں گے علماءکبھی یکجا اکٹھے نہ ہوں گے، کتّوں کا مجمع ویسے تو خاموش رہتا ہے لیکن ادھر قصاءنے ہڈی پھینکی اور ادھر ان کے پنجے تیز اور دانت زہر آلود ہوگئے۔ یہی حال ان کا ہے۔ ساری باتوں میں متفق ہوسکتے ہیں لیکن دنیا کی ہڈی جہاں سڑ رہی ہو وہاں پہنچ کر اپنے پنجوں اور دانتوں پر قابو نہیں رکھ سکتے۔ فساق وفجار خرابات میں بھائیوں کی طرح ایک دوسرے کا جام تندرستی پیتے ہیں۔ چور اور ڈاکو مل جل کر راہ زنی کرتے ہیں مگر یہ گروہ !خداکی مسجد اور زہد وعبادت کے صومعہ وخانقاہ میں بیٹھ کر بھی متحد ویکدل نہیں ہوسکتا، ہمیشہ ایک دوسرے کو درندوں کی طرح چیر تا پھاڑتا اور پنجے مارتا ہے۔ مئے کدوں میں محبت کے ترانے اور پیار والفت کی باتیں سننے میں آجاتی ہیں، مگر عین محراب کے نیچے پیشواءامامت کے لیے ان میں سے ہر ایک کا ہاتھ دوسرے کی گردن پر پڑتا اورخونخواری کی ہرآنکھ دوسرے بھائی کے خون پر لگی ہوتی ہے۔حضرت مسیح نے احبارِ یہود سے فرمایا تھا تم نے داؤد کے گھر کو ڈاکوؤں کا بھٹ بنا دیا ہے۔ ڈاکوؤں کے بھٹ کا حال تو معلوم نہیں لیکن ہم نے مسجد کے صحن میں بھیڑیوں کو ایک دوسرے پر غرّاتے اور خوں آشام دانت مارتے دیکھا ہے“(مولانا ابوالکلام آزاد علیہ الرحمۃ)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
    • نا پسندیدہ نا پسندیدہ × 1
  7. محمد علم اللہ

    محمد علم اللہ محفلین

    مراسلے:
    5,832
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Daring
    عرصہ گذرا کہیں پڑھا تھا سرسید احمد خاں کا مشہور مضمون 'بحث و تکرار' جس میں انہوں نے انسان کی بحث و تکرار کی شروعات کا موازنہ کتوں کی لڑائی سے کیا ہے اور انہوں نے یہ بتانے کی کوشش کی ہے کہ جب دو آدمی بحث و تکرار شروع کرتے ہیں تو بالکل اسی طرح کرتے ہیں جیسے دو کتے۔ ایک کتا دوسرے کو دیکھ کر آہستہ آہستہ بھونکتا ہے اور پھر عجیب عجیب آوازیں نکال کر آہستہ آہستہ غراتا ہے اور پھر تھوڑی دیر بعد دونوں اپنی جگہ سے اٹھ کر ایک دوسرے سے گتھم گتھا ہوجاتے ہیں۔ سرسید کے مطابق انسانوں کی تکرار کی شروعات بھی ایسے ہی ہوتی ہے اور پھر جب یہ تکرار بڑھ جاتی ہے تو دونوں ایک دوسرے سے لپٹ۔ جاتے ہیں۔ اس کی ٹانگ اس کی گردن پر اور اس کی گردن اس کے شکنجے میں اور لپّا ڈگی ہونے لگتی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  8. مہدی نقوی حجاز

    مہدی نقوی حجاز محفلین

    مراسلے:
    4,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    اس پورے نظریے کی طرف میں نے یہاں فلسفیانہ اشارہ کیا ہے۔
     
  9. عثمان

    عثمان محفلین

    مراسلے:
    9,813
    موڈ:
    Cheerful
    بھئی اتنا گھمبیر مسئلہ نہیں ہے یہ۔ بس انتظامیہ حسب دستور وقتاً فوقتاً فسادی اراکین کا صفایا کرتی رہے۔ محفل پاک صاف رہے گی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  10. مہدی نقوی حجاز

    مہدی نقوی حجاز محفلین

    مراسلے:
    4,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    لیکن پھر وہ فضا برقرار جو نہ رہ سکے گی!
     
  11. عثمان

    عثمان محفلین

    مراسلے:
    9,813
    موڈ:
    Cheerful
    کیسی فضا ؟
    ناگوار فضا صاف کرنا ہی تو مقصود ہے۔ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. عسکری

    عسکری معطل

    مراسلے:
    18,520
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Daring
    ویسے جب سے عوام الناس نے کشیدگی کے خلاف احتجاج کیا ہے کشیدگی کرنے والے ارکان کہیں غائب ہیں یہ لوگ کچھ اور کشید کرتے تو ہمارا بھی بھلا ہوتا :grin:
     
    • پر مزاح پر مزاح × 2
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  13. عثمان

    عثمان محفلین

    مراسلے:
    9,813
    موڈ:
    Cheerful
    ایک کا تو بندوبست ہو چکا۔ پھر لوگوں کو خود بھی کچھ شرم آجاتی ہے۔ دیکھ لیجیے اب کیسا سکون ہے۔ :)
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  14. عسکری

    عسکری معطل

    مراسلے:
    18,520
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Daring
    کدھر دیکھوں ؟ مجھے تو کہیں نظر نہیں آ رہا :rolleyes:
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  15. مہدی نقوی حجاز

    مہدی نقوی حجاز محفلین

    مراسلے:
    4,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    لیکن ساتھ ساتھ خوشگوار فضا کی دھجیاں بھی تو اڑتی جائیں گی۔ قابل توجہ بات یہ ہے کہ ہر شخص کے کچھ نہ کچھ ایسے نظریات ہوتے ہیں جن سے دوسروں کو اعتراض ہو سکتا ہے۔ یوں تو پھر تمام محفلین کو ہی متروک کرنا پڑے گا۔ اور اگر ایسا نہیں ہے تو پھر انتظامیہ لزوماً جانبداری کا شیوہ اختیار کرے گی۔ پھر وہی ناں:
    روز از نو، روزی از نو​
     
  16. عثمان

    عثمان محفلین

    مراسلے:
    9,813
    موڈ:
    Cheerful
    انتظامیہ کے جانبدار ہونے نہ ہونے کا مسئلہ ہے ہی نہیں۔ محفل کے قوانین کا اطلاق مدیران کی صوابدید پر ہوتا ہے۔ مدیر جو فیصلہ کرے وہی تسلیم کیجیے۔ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  17. مہدی نقوی حجاز

    مہدی نقوی حجاز محفلین

    مراسلے:
    4,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    یہی تو جنجال ہے کہ مدیر بھی جانبداری سے ہی فیصلہ کرے گا۔ اس کے بغیر ممکن نہیں!
     
  18. محمد علم اللہ

    محمد علم اللہ محفلین

    مراسلے:
    5,832
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Daring

    ہاں بھائی جان وہ میں نے دیکھا تھا آپ نے اچھے نکات اٹھائے ہیں میں صرف پہلی قسط پڑھا تھا ابھی بقیہ بھی پڑھ لیا میری دعائیں آپ کے ساتھ ۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  19. عثمان

    عثمان محفلین

    مراسلے:
    9,813
    موڈ:
    Cheerful
    اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا۔ کسی کے لیے جانبدار تو کسی کے لیے غیر جانبدار۔ دنیا بھر کی محفلیں ایسے ہی چلتی ہیں۔ :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  20. مہدی نقوی حجاز

    مہدی نقوی حجاز محفلین

    مراسلے:
    4,893
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    جو چلتی ہیں ان سے سر و کار نہیں۔ ہم تو یہاں کشیدگیاں بر طرف کرنے بیٹھے ہیں۔ چار لوگوں کو اپنے مخالف کھڑا کرنے نہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر