1. اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں فراخدلانہ تعاون پر احباب کا بے حد شکریہ نیز ہدف کی تکمیل پر مبارکباد۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    $500.00
    اعلان ختم کریں

ابر و باراں ہی نہ تھے بحر کی یورش میں شریک۔۔۔ "اے عشق جنوں پیشہ" سے انتخاب

محمد بلال اعظم نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اگست 29, 2014

  1. محمد بلال اعظم

    محمد بلال اعظم لائبریرین

    مراسلے:
    10,219
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    ابر و باراں ہی نہ تھے بحر کی یورش میں شریک
    دکھ تو یہ ہے کہ ہے ملاح بھی سازش میں شریک

    تا ہمیں ترکِ تعلق کا بہت رنج نہ ہو
    آؤ تم کو بھی کریں ہم اِسی کوشش میں شریک

    اک تو وہ جسم طلسمات کا گھر لگتا ہے
    اس پہ ہے نیتِ خیاط بھی پوشش میں شریک

    ساری خلقت چلی آتی ہے اُسے دیکھنے کو
    کیا کرے دل بھی کہ دنیا ہے سفارش میں شریک

    اتنا شرمندہ نہ کر اپنے گنہگاروں کو
    اے خدا تُو بھی رہا ہے مری خواہش میں شریک

    لفظ کو پھول بنانا تو کرشمہ ہے فرازؔ
    ہو نہ ہو کوئی تو ہے تیری نگارش میں شریک


    (احمد فراز)
    (اے عشق جنوں پیشہ، ص170)
     

اس صفحے کی تشہیر