آج کی حدیث

جاسمن نے 'سیرتِ سرورِ کائنات' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 27, 2019

ٹیگ:
  1. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    12,466
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    سنن ابی ماجہ
    780

    حَدَّثَنَا إِبْرَاهِيمُ بْنُ مُحَمَّدٍ الْحُلَبِيُّ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ الْحَارِثِ الشِّيرَازِيُّ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا زُهَيْرُ بْنُ مُحَمَّدٍ التَّمِيمِيُّ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَبِي حَازِمٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ سَهْلِ بْنِ سَعْدٍ السَّاعِدِيِّ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ:‏‏‏‏ لِيَبْشَرِ الْمَشَّاءُونَ فِي الظُّلَمِ إِلَى الْمَسَاجِدِ بِنُورٍ تَامٍّ يَوْمَ الْقِيَامَةِ .

    رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: تاریکیوں میں ( نماز کے لیے ) چل کر جانے والے خوش ہو جائیں کہ ان کے لیے قیامت کے دن کامل نور ہو گا ۔
    صحیح حدیث
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  2. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    12,466
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    سنن ابی ماجہ
    933

    حَدَّثَنَا هِشَامُ بْنُ عَمَّارٍ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا سُفْيَانُ بْنُ عُيَيْنَةَ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ الزُّهْرِيِّ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَنَسِ بْنِ مَالِكٍ، ‏‏‏‏‏‏أَنَّ ّرَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ:‏‏‏‏ إِذَا وُضِعَ الْعَشَاءُ وَأُقِيمَتِ الصَّلَاةُ فَابْدَءُوا بِالْعَشَاءِ .

    رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: جب شام کا کھانا سامنے رکھ دیا جائے، اور نماز بھی شروع ہو رہی ہو تو پہلے کھانا کھاؤ ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  3. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    12,466
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    سنن ابی ماجہ(960)

    حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ عُبَيْدٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ الْأَعْمَشِ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَبِي صَالِحٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ كَانَ النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يُعَلِّمُنَا أَنْ لَا نُبَادِرَ الْإِمَامَ بِالرُّكُوعِ وَالسُّجُودِ، ‏‏‏‏‏‏وَإِذَا كَبَّرَ فَكَبِّرُوا، ‏‏‏‏‏‏وَإِذَا سَجَدَ فَاسْجُدُوا .

    نبی اکرم صلی اللہ علیہ و سلم ہمیں سکھاتے کہ ہم رکوع اور سجدے میں امام سے پہل نہ کریں اور (فرماتے ) جب امام "اللہ اکبر" کہے تو تم بھی "اللہ اکبر" کہو، اور جب سجدہ کرے تو تم بھی سجدہ کرو ۱؎۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    12,466
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    سنن ابی ماجہ
    987

    حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا إِسْمَاعِيل ابْنُ عُلَيَّةَ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ إِسْحَاق، ‏‏‏‏‏‏عَنْ سَعِيدِ بْنِ أَبِي هِنْدٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْمُطَرِّفِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ الشِّخِّيرِ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ سَمِعْتُ عُثْمَانَ بْنَ أَبِي الْعَاصِ، ‏‏‏‏‏‏يَقُولُ:‏‏‏‏ كَانَ آخِرُ مَا عَهِدَ إِلَيَّ النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ حِينَ أَمَّرَنِي عَلَى الطَّائِفِ قَالَ لِي:‏‏‏‏ يَا عُثْمَانُ تَجَاوَزْ فِي الصَّلَاةِ، ‏‏‏‏‏‏وَاقْدِرِ النَّاسَ بِأَضْعَفِهِمْ، ‏‏‏‏‏‏فَإِنَّ فِيهِمُ الْكَبِيرَ، ‏‏‏‏‏‏وَالصَّغِيرَ، ‏‏‏‏‏‏وَالسَّقِيمَ، ‏‏‏‏‏‏وَالْبَعِيدَ، ‏‏‏‏‏‏وَذَا الْحَاجَةِ .

    میں نے عثمان بن ابی العاص رضی اللہ عنہ کو کہتے سنا کہ جب نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے مجھ کو طائف کا امیر بنایا، تو آپ نے میرے لیے آخری نصیحت یہ فرمائی: عثمان ! نماز ہلکی پڑھنا، اور لوگوں ( عام نمازیوں )کو اس شخص کے برابر سمجھنا جو ان میں سب سے زیادہ کمزور ہو، اس لیے کہ لوگوں میں بوڑھے، بچے، بیمار، دور سے آئے ہوئے اور ضرورت مند سبھی قسم کے لوگ ہوتے ہیں ۔
     
  5. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    12,466
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    سنن ابی ماجہ
    988

    حَدَّثَنَا عَلِيُّ بْنُ إِسْمَاعِيل، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا عَمْرُو بْنُ عَلِيٍّ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا يَحْيَى، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا عَمْرُو بْنُ مُرَّةَ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ سَعِيدِ بْنِ الْمُسَيَّبِ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ حَدَّثَ عُثْمَانُ بْنُ أَبِي الْعَاصِ، ‏‏‏‏‏‏أَنَّ آخِرَ مَا قَالَ لِي رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ:‏‏‏‏ إِذَا أَمَمْتَ قَوْمًا فَأَخِفَّ بِهِمْ .

    عثمان بن ابی العاص رضی اللہ عنہ نے بیان کیا کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے آخری بات جو مجھ سے کہی وہ یہ تھی: لوگوں کی جب امامت کرو تو نماز ہلکی پڑھاؤ ۔
     
  6. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    12,466
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    سنن ابی ماجہ
    987

    حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا إِسْمَاعِيل ابْنُ عُلَيَّةَ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ إِسْحَاق، ‏‏‏‏‏‏عَنْ سَعِيدِ بْنِ أَبِي هِنْدٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْمُطَرِّفِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ الشِّخِّيرِ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ سَمِعْتُ عُثْمَانَ بْنَ أَبِي الْعَاصِ، ‏‏‏‏‏‏يَقُولُ:‏‏‏‏ كَانَ آخِرُ مَا عَهِدَ إِلَيَّ النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ حِينَ أَمَّرَنِي عَلَى الطَّائِفِ قَالَ لِي:‏‏‏‏ يَا عُثْمَانُ تَجَاوَزْ فِي الصَّلَاةِ، ‏‏‏‏‏‏وَاقْدِرِ النَّاسَ بِأَضْعَفِهِمْ، ‏‏‏‏‏‏فَإِنَّ فِيهِمُ الْكَبِيرَ، ‏‏‏‏‏‏وَالصَّغِيرَ، ‏‏‏‏‏‏وَالسَّقِيمَ، ‏‏‏‏‏‏وَالْبَعِيدَ، ‏‏‏‏‏‏وَذَا الْحَاجَةِ .

    میں نے عثمان بن ابی العاص رضی اللہ عنہ کو کہتے سنا کہ جب نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے مجھ کو طائف کا امیر بنایا، تو آپ نے میرے لیے آخری نصیحت یہ فرمائی: عثمان ! نماز ہلکی پڑھنا، اور لوگوں ( عام نمازیوں )کو اس شخص کے برابر سمجھنا جو ان میں سب سے زیادہ کمزور ہو، اس لیے کہ لوگوں میں بوڑھے، بچے، بیمار، دور سے آئے ہوئے اور ضرورت مند سبھی قسم کے لوگ ہوتے ہیں ۔
     
  7. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    12,466
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    سنن ابی ماجہ
    993

    حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ بَشَّارٍ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا يَحْيَى بْنُ سَعِيدٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ شُعْبَةَ . ح وحَدَّثَنَا نَصْرُ بْنُ عَلِيٍّ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا أَبِي، ‏‏‏‏‏‏ وَبِشْرُ بْنُ عُمَرَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَا:‏‏‏‏ حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ قَتَادَةَ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَنَسِ بْنِ مَالِكٍ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ:‏‏‏‏ سَوُّوا صُفُوفَكُمْ، ‏‏‏‏‏‏فَإِنَّ تَسْوِيَةَ الصُّفُوفِ مِنْ تَمَامِ الصَّلَاةِ .

    رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: اپنی صفیں برابر کرو، اس لیے کہ صفوں کی برابری تکمیل نماز میں داخل ہے.
     
  8. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    12,466
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    سنن ابی ماجہ
    992

    حَدَّثَنَا عَلِيُّ بْنُ مُحَمَّدٍ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا وَكِيعٌ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا الْأَعْمَشُ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ الْمُسَيَّبِ بْنِ رَافِعٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ تَمِيمِ بْنِ طَرَفَةَ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ جَابِرِ بْنِ سَمُرَةَ السُّوَائِيِّ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ:‏‏‏‏ أَلَا تَصُفُّونَ كَمَا تَصُفُّ الْمَلَائِكَةُ عِنْدَ رَبِّهَا ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ قُلْنَا:‏‏‏‏ وَكَيْفَ تَصُفُّ الْمَلَائِكَةُ عِنْدَ رَبِّهَا؟ قَالَ:‏‏‏‏ يُتِمُّونَ الصُّفُوفَ الْأُوَلَ، ‏‏‏‏‏‏وَيَتَرَاصُّونَ فِي الصَّفِّ .

    رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: تم اس طرح صفیں کیوں نہیں باندھتے جس طرح فرشتے اپنے رب کے پاس باندھتے ہیں؟ ، ہم نے عرض کیا: اللہ کے رسول! فرشتے اپنے رب کے پاس کس طرح صف باندھتے ہیں؟ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: پہلی صفوں کو مکمل کرتے ہیں، اور صف میں ایک دوسرے سے خوب مل کر کھڑے ہوتے ہیں ۔
     

اس صفحے کی تشہیر