1. اردو محفل سالگرہ پانزدہم

    اردو محفل کی یوم تاسیس کی پندرہویں سالگرہ کے موقع پر تمام اردو طبقہ و محفلین کو دلی مبارکباد!

    اعلان ختم کریں

گناہ گار پہ مجھ ایسے ہے، کرم اس کا

عظیم نے 'اِصلاحِ سخن' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اپریل 24, 2018

  1. عظیم

    عظیم محفلین

    مراسلے:
    6,628

    گناہ گار پہ مجھ ایسے ہے، کرم اُس کا
    تو پھر بھی کیوں نہیں لیتے ہیں نام ہم اس کا

    جسے وہ اپنی طرف کھینچتا ہے، دنیا میں
    اگر رکے، تو ہے ظاہر، رکے گا دَم اس کا

    جنہیں خوشی کی تمنا ہے، خوش رہیں وہ لوگ
    مجھے تو چاہیے، حزن و ملال، غم اس کا

    ابھی تو مجھ پہ فقط مہربان ہے وہ رحیم
    کہ میں نے دیکھا نہیں آج تک ستم اس کا

    اِس ایسی اور بھی خلقت وجود میں آ جائے
    تو ہو نہ پائے گا کچھ بھی خزانہ کم اس کا

    یہ چاند تارے، یہ دنیا، ہمارا، آپ کا تن
    ہر ایک چیز ہے اس کی، ہر ایک دَم اس کا

    عظیم پیتا ہے، خلقت کے پاؤں دھو دھو کر
    کہ آج ٹوٹا ہے، جھوٹا کوئی بھرم اُس کا


     
  2. مہدی نقوی حجاز

    مہدی نقوی حجاز محفلین

    مراسلے:
    4,889
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    واہ! کیا اچھے اشعار ہیں۔ کچھ نکات ویسے ہی اصلاح سخن میں ہونے کی وجہ سے اوپر نیلے سے لکھ دیے ہیں۔ اصلاح کا کام تو بہر حال استاد الف عین صاحب کا ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    34,637
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    یہ غزل اس دوسرے دھاگے کی غزلوں سے بہتر ہے۔ وہاں تو یہی مشکل ہو رہی تھی کہ کس غزل کی واقعی اصلاح کی ضرورت ہے، اور کس طرح اور کہاں تک اصلاح کی جائے!
    یہاں کچھ باتیں عزیزی مہدی نے کہہ ہی دی ہیں۔میں بھی متفق ہوں۔ 'ہو پانا' مجھے قابل گرفت نہیں لگا، ممکن ہے یہاں ایسا بولا جاتا ہے، کہیں اور ایسا روزمرہ نہ ہو۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر