1. اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں فراخدلانہ تعاون پر احباب کا بے حد شکریہ نیز ہدف کی تکمیل پر مبارکباد۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    $500.00
    اعلان ختم کریں

فیض کب ٹھہرے گا درد اے دل، کب رات بسر ہوگی

فرحان محمد خان نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 30, 2017

  1. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,095
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    کب ٹھہرے گا درد اے دل، کب رات بسر ہوگی
    سنتے تھے وہ آئیں گے، سنتے تھے سحر ہوگی

    کب جان لہو ہوگی، کب اشک گہر ہوگا
    کس دن تری شنوائی اے دیدۂ تر ہوگی

    کب مہکے گی فصلِ گل، کب بہکے گا میخانہ
    کب صبحِ سخن ہوگی، کب شامِ نظر ہوگی

    واعظ ہے نہ زاہد ہے، ناصح ہے نہ قاتل ہے
    اب شہر میں یاروں کی کس طرح بسر ہوگی

    کب تک ابھی رہ دیکھیں اے قامتِ جانانہ
    کب حشر معیّن ہے تجھ کو تو خبر ہوگی

    فیض احمد فیض
     
    مدیر کی آخری تدوین: ‏جولائی 31, 2017
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • نا پسندیدہ نا پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر