پاکستانی معیشت کا دھڑن تختہ

زیرک نے 'آپ کے کالم' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏دسمبر 7, 2019

  1. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    4,555
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    پاکستانی معیشت کا دھڑن تختہ
    پتہ نہیں حکومتی حلقوں میں کون یہ کام کر رہا ہے کہ ملک میں کرنسی کی فری فلو کو روکا جائے۔ نئی درفطنی یہ چھوڑی جا رہی ہے کہ جو پاکستانی ملک سال بھر کی مدت کے دوران دو بار ملک سے باہر گیا ہے اسے بھی فائلر کی لسٹ میں ڈالا جائے۔ چند دن پہلے بنکوں سے کہا گیا ہے کہ وہ 50 ہزار یومیہ رقوم نکلوانے والے نان فائلرز کا ڈیٹا دیں تاکہ ان کو فائلر بنایا جائے۔ اس اقدام سے اوورسیز پاکستانی جو ملک میں معیشت کی بحالی میں آج تک خاموش کردار ادا کرتے آ رہے ہیں وہ بھی یہ سوچنے پر مجبور ہو جائیں گے کہ اب وقت آ گیا ہے کہ ہمیں باہر کی شہریت لے لینی چاہیے۔ ایسے اقدامات تو پاکستانی معیشت کو جام کر کے رکھ دیں گے۔ حکومت ایسا کر کے لوگوں کو ملک کی معیشت کو بہتر بنانے سے دور کرنا چاہتی ہے، پاکستانی بنکنگ کے استعمال سے روکنے کا مطلب پاکستان کو کیش لاکڈ ملک بنانے سے کیا حاصل ہو گا؟۔ اگر حکومت کا یہی چلن رہا تو یہ ہو گا کہ اکاؤنٹ ہولڈرز تھوڑا تھوڑا کر کے اپنا پیسہ بنکوں سے نکال لیں گے اس کے نتیجے میں پاکستان کا بنکنگ سسٹم کریش کر جائے گا۔ پہلے ہی حکومت نان فائلرز پر کاریں اور جائیدادیں خریدنے جیسے چیک لگا کر معیشت کو رول بیک کر چکی ہے۔ ملک میں ریونیو پہلے ہی کم ترین سطح پر پہنچ چکا ہے، گروتھ ریٹ ٪2.4 پر پہنچ چکا ہے جو جنوبی ایشیا میں سب سے کم ہے۔ زیادہ دور مت جائیں، دبئی کو ہی دیکھ لیں کہ اس کی کامیابی کی کیا وجہ ہے؟ ان کی کامیابی یہ ہے کہ انہوں نے انویسٹرز کو ویلکم کہا، یہ نہیں پوچھا کہ پیسہ کہاں سے آیا، انہیں مکمل سہولیات فراہم کیں، ان پر پیسے کے معاملے میں کوئی قدغن نہیں لگائی، جس کا نتیجہ ہے کہ آج کا دبئی ہم سے معیشت کے میدان میں بہت آگے ہے۔ مجھے کیا سبھی کو یہی لگتا ہے کی ان سے معیشت نہیں چل رہی، وہ جانے سے پہلے پاکستانی معیشت کا دھڑن تختہ کرنے کے موڈ میں ہیں۔
     
    • زبردست زبردست × 2
    • متفق متفق × 1
  2. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    24,672
    معیشت پر بے جا کنٹرول اسے ختم کرنے کے مترادف ہے۔ 72 سالوں میں جو چھوٹ دی گئی تھی وہ رفتہ رفتہ کم کرنی چاہئے۔ اس طرح یکدم شدید اقداما ت کرنے سے کوئی بھی سرمایہ کار اپنا پیسا کہیں نہیں لگائے گا۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  3. زیرک

    زیرک محفلین

    مراسلے:
    4,555
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Buzzed
    یہی میں کہنا چاہ رہا ہوں کہ اسے بتدریج بدلنا ہو گا، ایک دم تبدیلی سے کاروبارِ حکومت ہی نہیں عام ملکی کاروبار بھی ٹھپ ہو کر رہ گیا ہے، ہم نے اسے زندہ رکھ کر بدلنا ہے نہ کہ ہاتھی کے پاؤں تلے دے کر مارنا ہے۔
    ٭وقت آ گیا ہے کہ نیلسن منڈیلا کے جنوبی افریقہ کے ماڈل کو تھوڑی تبدیلی کے ساتھ اپنانا ہو گا۔ جس کے تحت جرم ماننے والی پارٹی یا افراد کو پہلے مرحلے پر جرم ماننے کی شرط پر عام معافی دی جائے، اسے پابند کیا جائے کہ وہ جرمانے کی مخصوص رقم پہلے اور بقیہ ایک معینہ مدت میں واپس کریں گے۔ لیکن جرم ماننے والوں کو دوبارہ سیاست میں حصہ لینے کی اجازت نہیں ہونی چاہیے۔ جو جرم نہ مانے اس پر قانون کے تحت مقدمات چلنے چاہییں۔ اس سے یہ ہو گا کہ کاروبارِ حکومت بھی چلتا رہے گا اور عام کاروبار بھی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  4. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    24,672
    جنرل مشرف نے این آر او کے تحت یہی کوشش کی تھی لیکن انتہائی بھونڈے اندا ز میں۔
     

اس صفحے کی تشہیر