عدم وقت اُس حسیں کے پاس کچھ اتنا قلیل تھا - عبد الحمید عدمؔ

فرحان محمد خان نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 20, 2017

  1. فرحان محمد خان

    فرحان محمد خان محفلین

    مراسلے:
    2,125
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheeky
    وقت اُس حسیں کے پاس کچھ اتنا قلیل تھا
    قصّہ اک آہ میں بھی سمٹ کر طویل تھا

    عہدِ بہار تھا کہ کوئی وحشتِ حسیں
    جس پھول کو ٹٹول کے دیکھا علیل تھا

    موت آئی اور دیکھ کے واپس چلی گئی!
    جو تھا وہ زندگی کی ادا کا قتیل تھا

    میں میکدے کی راہ سے ہو کر نکل گیا!
    ورنہ سفر حیات کا کافی طویل تھا

    سمجھی نہ گو کسی نے مری بات اے عدمؔ
    میرا سکوت حرفِ خرد کی دلیل تھا​
    عبد الحمید عدمؔ
     

اس صفحے کی تشہیر