نیشنل بک فاؤنڈیشن

محب علوی نے 'مطالعہ کتب' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جون 5, 2006

  1. تلمیذ

    تلمیذ لائبریرین

    مراسلے:
    3,914
    موڈ:
    Cool
    سرکاری اداروں میں جب تک دو چار جنونی افراد نہ ہوں ، کم ہی چلتے ہیں۔
     
  2. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    پھر بھی یار، دیکھو تو سہی کہ ہر سال کتب چھپتی ہیں، بیچی جاتی ہیں، ملازمین کو تنخواہ ملتی ہے، دفاتر منتقل کئے جاتے ہیں۔ صرف ایک کام کی طرف توجہ نہیں دی جاتی، جو سب سے اہم ہے، یعنی پبلسٹی
    قیصرانی
     
  3. آصف

    آصف محفلین

    مراسلے:
    568
    آج میں فرینکفرٹ کتاب میلہ میں گیا اور بڑے شوق سے پاکستان کے سٹالز کی تلاش شروع کی۔ ایک ویران سا، اجڑا ہوا سٹال نظر آیا جس پر ایک صاحب بیٹھے کتابوں سے گرد جھاڑتے نظر آئے۔ پاس میں ایک ہاتھ سے لکھا ہوا کارڈ بورڈ نظر آیا جس پر نیشنل بک فاؤنڈیشن لکھا ہوا تھا۔ دل کو ایک دھچکا سا لگا۔ پھر سوچا کوئی بات نہیں شاید اور سٹال ہوں گے۔ دریافت کرنے پر معلوم ہوا کہ پورے پاکستان کی نمائندگی صرف یہی سٹال کر رہا تھا۔ کل تقریبا 100 سے 150 کتب ہوں گی۔ جن میں سے اکثر پر دھبے پڑے ہوئے تھے اور تقریبا سب کے سرورق کے رنگ اڑے ہوئے تھے۔ تقریبا سب بغیر جلد کی کتابوں کے صفحات کے کنارے مڑے ہوئے تھے۔ یہ تھا پاکستان کا سٹال۔

    اب ذرا ہندوستان کی طرف نظر دوڑائیے۔ کم از کم 150 سٹال ہوں گے جن میں ہزاروں نہیں بلکہ لاکھوں کتب بھری ہوئی تھیں۔ ہندوستان اس دفعہ اس میلے کا گیسٹ آف آنر بھی تھا۔ سینکڑوں لوگ ثقافتی پروگرام پیش کر رہے تھے۔ کہیں کوئی خاتون جرمنوں کو مہندی لگا رہی ہے، کہیں کوئی پھول کاڑھ کر دے رہی ہے، کوئی صاحب چاندی کا کام کر کے اپنا ہنر دکھا رہے ہیں۔ ہندوستان کے ادیب ایک بڑے ہال میں لائیو لوگوں کو اپنا کلام سنا رہے تھے۔ اپنی کتب دستخط کر کر کے دے رہے تھے۔ ٹرینوں میں، بسوں میں ہر جگہ جرمنوں نے ہندوستان کے پوسٹر اٹھائے ہوئے تھے۔ ہر کوئی ہندوستانی کھانوں کی تعریف کر رہا تھا جس کو چکھنے کیلئے تقریبا 300 لوگ لائن بنائے کھڑے تھے۔

    پاکستانی سٹال پر ایک محترمہ ان صاحب کو اپنا رابطہ نمبر دینا چاہ رہی تھی تو وہ ٹوٹی پھوٹی جرمن میں جواب میں فرمانے لگے کہ میرے پاس پہلے ہی 500 کارڈ ہیں، ہم آپ سے رابطہ نہیں کر سکتے!!!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    35,863
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    آصف ہندوستان کے سٹالس میں اردو کے بھی ضرور ہوں گے۔ مکتبہ جامعہ یا فروغ اردو زبان والوں کے رہے ہوں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. آصف

    آصف محفلین

    مراسلے:
    568
    جی اعجاز صاحب اردو کتب بھی تھیں ہندوستانی سٹالز پر۔ جامعہ ملیہ کے بارے میں چند کتب کی ورق گردانی کی میں نے۔
     
  6. تلمیذ

    تلمیذ لائبریرین

    مراسلے:
    3,914
    موڈ:
    Cool
    آصف کیا ہی اچھا ہو اگر اپنی اس پوسٹ کی ایک نقل نیشنل بک فاؤندیشن کے کسی کرتا دھرتا کو ای میل کر دیں، کیا پتہ کسی کے کان پر (بے شمار جؤوں میں سے) کسی ایک حسّاس جُوں پر کوئی
    اثر ہو ہی جائے !!!!! :lol:
     
  7. قیصرانی

    قیصرانی لائبریرین

    مراسلے:
    45,875
    جھنڈا:
    Finland
    موڈ:
    Festive
    اردو میں‌ ٹھیک ٹھاک سنا دینی تھیں لیکن مسکراتے ہوئے۔ تاکہ محترم کو بات سمجھ بھی آجاتی اور کسی کو پتہ بھی نہ چلتا
     
  8. AMERICAN

    AMERICAN محفلین

    مراسلے:
    318
    یہ ڈسکشن پڑھ کر علم میں اضافہ ہوا۔
     
  9. حماد

    حماد محفلین

    مراسلے:
    550
    موڈ:
    Brooding
    کسی زمانے میں ، میں نشنل بک فاونڈیشن شادمان لاہور سے کتابیں خریدا کرتا تھا . کافی معیاری اور کم قیمت کتابیں ملتی تھیں .اب شاید یہ ادارہ ختم ہو چکا ہے !؟!
     
  10. تلمیذ

    تلمیذ لائبریرین

    مراسلے:
    3,914
    موڈ:
    Cool
    ادارہ تو ختم نہیں ہوا البتہ رعایتی قیمتوں (پچاس فیصد رعایت) پر کتابوں کی خریداری کی سہولت ختم کر دی گئی ہے۔ ان کے زیر اہتمام کتابوں کی اشاعت اب بھی جاری ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر