واصف میں کیا ہوں معلوم نہیں ۔ میں قاسم مقسوم نہیں۔۔۔۔حضرت واصف علی واصف رحمتہ اللہ علیہ

فیصل عزیز نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 10, 2014

  1. فیصل عزیز

    فیصل عزیز محفلین

    مراسلے:
    50
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    میں کیا ہوں معلوم نہیں ۔ میں قاسم مقسوم نہیں
    میں تسلیم کا پیکر ہوں ۔ میں حاکم محکوم نہیں

    میں نے ظلم سہے لیکن ۔ میں پھر بھی مظلوم نہیں
    میں مستی کا ساغر ہوں ۔ ہوش سے میں محروم نہیں

    تیری رحمت چھوڑے کون ۔ توبہ میں معصوم نہیں
    میرے تبریزی انداز ۔ میں مولائے روم نہیں

    میں مسجود ملائک ہوں ۔ میں راقم مرقوم نہیں
    میں مخلوق کا خادم ہوں ۔ کون میرا مخدوم نہیں

    جیتے جی مرجاتا ہوں ۔ مرکے میں معدوم نہیں
    میں نے کیا کیا دیکھا ہے ۔ میں یونہی مغموم نہیں

    میں صحرا کی جان ہوا ۔ میں بادِ مسموم نہیں
    میں مایوس نہیں لیکن ۔ امید موہوم نہیں

    واصف کیا نظمیں لکھے ۔ رنگِ جہاں منظوم نہیں

    حضرت واصف علی واصف رحمتہ اللہ علیہ
     
    • زبردست زبردست × 2

اس صفحے کی تشہیر