غزل برائے اصلاح

فیضان قیصر نے 'اِصلاحِ سخن' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 14, 2020

  1. فیضان قیصر

    فیضان قیصر محفلین

    مراسلے:
    293
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    مدعا دل کا کب کہا کیجے
    اتنی مصروفیت ہے کیا کیجے
    آپ نے کھو دیا ہے کب کا مجھے
    میں کہاں ہوں میرا پتہ کیجے
    مجھ کو چارہ گری نہیں درکار
    بس مجھے ہمدمی عطا کیجے
    آپ احباب کے لیے میرا
    دل نہ دھڑکے اگر تو کیا کیجیے
    کوئی بھی عقلِ کل نہیں ہے میاں
    صرف اپنی ہی مت سنا کیجے
    روک لیتی ہے جب انا مجھ کو
    آپ سینے سے آ لگا کیجے
    گھر میں فیضان حبس ہے بے حد
    کھڑکیاں کھول کے رہا کیجے
     
  2. فیضان قیصر

    فیضان قیصر محفلین

    مراسلے:
    293
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
  3. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    34,534
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    درست ہے غزل، بس آخری شعر میں 'کے' مجھے اچھا نہیں لگا۔ 'کھول کر رہا' میں تنافر ہوتا ہے اس لیے بہتر متبادل 'کھول کر کھڑکیاں' ہو گا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. فیضان قیصر

    فیضان قیصر محفلین

    مراسلے:
    293
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    بہت شکریہ سر
     

اس صفحے کی تشہیر