عربی نحو کی اولین کتاب ایک ایرانی نے لکھی تھی

حسان خان نے 'عربی کے اسباق' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏دسمبر 6, 2016

  1. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,612
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    "ہجرتِ نبوی کی دوسری صدی (تقریباً ۱۳۸ھ) میں ایک ایرانی ابوبِشر عَمرو بن عثمان بن قنبر پیدا ہوا اور ۱۸۰ ہجری میں کوئی بیالیس برس کے سن میں شیراز میں مرا اور وہیں دفن ہوا، ماں باپ نے پیار سے سِیبَوَیہ کہہ کر پکارا، اُسی لقب سے دنیا میں شہرت پائی، اُس کی تصنیف 'الکتاب' عربی نحو پر سب سے پہلی کتاب ہے اور مسلمانوں کے علمی عروج کے زمانے میں کلام اللہ کے بعد شاید امام سیبویہ کی 'الکتاب' ہی وہ کتاب ہے جو سب سے زیادہ پڑھی جاتی تھی، اُس زمانے کے بعض اہلِ نظر نے سچ کہا ہے کہ کسی علم پر ایسی جامع کتاب نہیں تالیف ہوئی جیسی ہیئت میں بطلیموس کی مجسطی، منطق میں ارسطاطالیس کی کتاب اور عربی نحو میں سیبویہ بصری کی "کتاب""۔ (۱)

    (ماخذ: المُبین پر تعقّب و تبصرہ، ڈاکٹر عبدالستار صدیقی، رسالۂ معارف، رمضان ۱۳۴۸ھ/مارچ ۱۹۳۰ء)

    (۱) یاقوت، ارشاد الاریب، ج ۶ ص ۸۲


    × لغت نامۂ دہخدا کے مطابق، 'ابن الندیم' لکھتے ہیں کہ 'سیبویہ' کی اصل 'سیب بویہ' یعنی 'بوئے سیب' ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  2. Ukashah

    Ukashah محفلین

    مراسلے:
    189
    جھنڈا:
    SaudiArabia
    موڈ:
    Busy
    اس طرح کہنا زیادہ مناسب ہے کہ کلام الہی کے بعد علم النحو میں یہ کتاب سب سے زیادہ پڑھی جاتی ہے ، کیونکہ علم النحو ہر علم کی بنیاد ہے ۔ اس کو حاصل کیے بغیر قرآن کو اہل عرب کے اسلوب پر سمجھنا مشکل ہے ۔ لیکن یہ علم النحوکی بڑی کتاب ہے ۔ابتدائی کلاسز کے لئے اہل علم نے آسان کتابیں لکھی ہیں ۔وہ بہتر ہیں ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر