سب گناہوں کی معافی مانگتا ہوں اے خدا---برائے اصلاح

ارشد چوہدری نے 'اِصلاحِ سخن' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 15, 2019

  1. ارشد چوہدری

    ارشد چوہدری محفلین

    مراسلے:
    881
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Brooding
    الف عین
    -----------
    فاعلاتن فاعلاتن فاعلاتن فاعلن
    -----------
    سب گناہوں کی معافی مانگتا ہوں اے خدا
    دل سے میرے اُٹھ رہیں ہے اب خدایا یہ صدا
    -----------------
    جب مصیبت آ پڑے تو یاد کرتے ہیں تمہیں
    بھول جانا بھول کو یا رب نہ دینا کچھ سزا
    ---------------------
    در پہ تیرے آ گئے ہیں اب معافی دے ہمیں
    شرمساری سے ہمارا سر بھی اب تو ہے جھکا
    -----------
    بد نصیبی ہے ہماری ہم جو تجھ سے دور ہیں
    تیری قربت چاہتے ہیں سُن ہماری اب دعا
    ------------
    برکتوں کا یہ مہینہ جو خدا نے ہے دیا
    اس میں رب سے مانگنی ہے اے خدایا دے رضا
    ---------- یا---
    اس میں ہم کو مانگنی ہے دوستو رب کی رضا
    ---------------
    سب مصائب ہیں ہمارے تجھ سے دوری کے سبب
    اب خدایا مانگتے ہیں بن کے تیرے ہم گدا
    -------------
    وہ تو دینا چاہتا ہے اس سے ارشد مانگ لو
    بخش میری ہر خطا کو مانگتا ہوں یہ دعا
     
  2. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    7,032
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    ہماری صلاح!!!

    پھر وہی مسئلہ ہے۔ جب آپ نے مطلع میں 'خدا' اور 'صدا' قافیوں کا اعلان کردیا اب ہر قافیے میں دا آنا چاہیے۔

    فی الوقت تو یوں کیجیے کہ مطلع میں صدا کو 'دعا' کردیجیے، باقی قافیے درست ہو جائیں گے۔

    نیز دوسرے شعر کے پہلے مصرع میں 'تمہیں' کو تجھے اور مقطع میں'مانگ لو' کو ''مانگ لے' کردیجیے ۔

    ایک مزید گزارش یہ کہ ہمیں ٹیگ کرنے کا یہ طریقہ درست نہیں۔ ہمیں یا کسی کو بھی ٹیگ کرنا ہو تو اسی طرح ٹیگ کیجیے جیسے آپ نے استادِ محترم کو مراسلے میں ٹیگ کیا ہے۔
    خوش رہیے!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  3. ارشد چوہدری

    ارشد چوہدری محفلین

    مراسلے:
    881
    جھنڈا:
    UnitedStates
    موڈ:
    Brooding
    الف عین
    محمّد خلیل الرحمن
    سب گناہوں کی معافی مانگتا ہوں اے خدا
    دل سے میرے اُٹھ رہی ہے اب خدایا یہ دعا
    -----------------
    جب مصیبت آ پڑے تو یاد کرتے ہیں تجھے
    بھول جانا بھول کو یا رب نہ دینا کچھ سزا
    ---------------------
    در پہ تیرے آ گئے ہیں اب معافی دے ہمیں
    شرمساری سے ہمارا سر بھی اب تو ہے جھکا
    -----------
    بد نصیبی ہے ہماری ہم جو تجھ سے دور ہیں
    تیری قربت چاہتے ہیں سُن ہماری اب دعا
    ------------
    برکتوں کا یہ مہینہ جو خدا نے ہے دیا
    اس میں رب سے مانگنی ہے اے خدایا دے رضا
    ---------- یا---
    اس میں ہم کو مانگنی ہے دوستو رب کی رضا
    ---------------
    سب مصائب ہیں ہمارے تجھ سے دوری کے سبب
    اب خدایا مانگتے ہیں بن کے تیرے ہم گدا
    -------------
    وہ تو دینا چاہتا ہے اس سے ارشد مانگ لے
    بخش میری ہر خطا کو مانگتا ہوں یہ دعا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    7,032
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    سبحان اللہ
     
  5. الف عین

    الف عین لائبریرین

    مراسلے:
    32,964
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Psychedelic
    سب گناہوں کی معافی مانگتا ہوں اے خدا
    دل سے میرے اُٹھ رہی ہے اب خدایا یہ دعا
    ----------------- درست

    جب مصیبت آ پڑے تو یاد کرتے ہیں تجھے
    بھول جانا بھول کو یا رب نہ دینا کچھ سزا
    --------------------- دوسرا مصرع سمجھ نہیں سکا

    در پہ تیرے آ گئے ہیں اب معافی دے ہمیں
    شرمساری سے ہمارا سر بھی اب تو ہے جھکا
    ----------- درست

    بد نصیبی ہے ہماری ہم جو تجھ سے دور ہیں
    تیری قربت چاہتے ہیں سُن ہماری اب دعا
    ------------ دعا کا قافیہ دہرانے کی بجائے لفظ بدل دیں کہ بھرتی کے 'اب' سے بھی بچ سکیں، جیسے 'التجا'

    برکتوں کا یہ مہینہ جو خدا نے ہے دیا
    اس میں رب سے مانگنی ہے اے خدایا دے رضا
    ---------- یا---
    اس میں ہم کو مانگنی ہے دوستو رب کی رضا
    --------------- 'ہے دیا' مجہول انداز بیان ہے، اور یہاں قافیے کی ضرورت بھی نہیں
    دوسرا مصرع رب کی رضا والا بہتر ہے

    سب مصائب ہیں ہمارے تجھ سے دوری کے سبب
    اب خدایا مانگتے ہیں بن کے تیرے ہم گدا
    ------------- بن کے ہم تیرے گدا..... بہتر ہے، مگر مانگتے کیا ہیں؟ دوری ختم کرنے کی دعا؟ مصرع عجز بیان کا شکار ہے

    وہ تو دینا چاہتا ہے اس سے ارشد مانگ لے
    بخش میری ہر خطا کو مانگتا ہوں یہ دعا
    ... 'مانگ لوں' سے شتر گربہ دور ہو جائے گا
     

اس صفحے کی تشہیر