سائنس مسلسل خاموش کیوں؟

فاخر رضا

محفلین
میں زیک کی بات سے متفق ہوں کہ فلسفہ جوانی میں ضرور پڑھنا چاہیے

میرے خیال میں یہ سوالات اہم ہیں
وجود کسے کہتے ہیں
وجود کی فلسفی اعتبار سے کتنی قسمیں ہیں
خدا کا وجود ہمارے وجود سے کس طرح مختلف ہے
عرفانیات میں وجود کی کیا تعریف ہے اور کیا قسمیں ہیں

اس کے علاوہ جہاں بینی کسے کہتے ہیں اور اس کی کتنی قسمیں ہیں

جوانی کے آغاز میں ان سوالوں کا جواب معلوم کر لینا چاہئے. اس طرح بنیادیں مضبوط ہوجاتی ہیں اور دماغ ایک طرف ہو جاتا ہے
 

عباس رضا

محفلین
یہاں جنوں پر ایمان لانے کے لیے تو نہیں کہا گیا۔
یہاں بھی جادو پر ایمان لانے کا کوئی مطالبہ نہیں۔
ایضا
فے کاف کیا ہر بات بچوں کی طرح سمجھانی ہوگی؟
  1. آیت میں فرمایا گیا ”ہم نے جہنم کے لیے پیدا کیے بہت جن“ معلوم ہوا جن کا وجود ہے لہٰذا ان کا وجود ماننا ایمان کا حصہ ہے۔
  2. فرمایا گیا ”لوگوں کی نگاہوں پر جادو کردیا اور انہیں ڈرادیا اور بڑا جادو لائے۔“ معلوم ہوا جادو کا وجود ہے لہٰذا اس کا وجود ماننا ایمان کا حصہ ہے۔
  3. حدیث میں فرمایا گیا ”بے شک الله تعالى نے زمین پر حرام کیاہے کہ پیغمبروں کے بدن کھائے۔“ معلوم ہوا زمین کا جسموں کو نہ کھانا اسلام میں ہے۔
 
آخری تدوین:

فے کاف

محفلین
فے کاف کیا ہر بات بچوں کی طرح تو سمجھانی ہوگی؟
  1. آیت میں فرمایا گیا ”ہم نے جہنم کے لیے پیدا کیے بہت جن“ معلوم ہوا جن کا وجود ہے لہٰذا ان کا وجود ماننا ایمان کا حصہ ہے۔
  2. فرمایا گیا ”لوگوں کی نگاہوں پر جادو کردیا اور انہیں ڈرادیا اور بڑا جادو لائے۔“ معلوم ہوا جادو کا وجود ہے لہٰذا اس کا وجود ماننا ایمان کا حصہ ہے۔
  3. حدیث میں فرمایا گیا ”بے شک الله تعالى نے زمین پر حرام کیاہے کہ پیغمبروں کے بدن کھائے۔“ معلوم ہوا زمین کا جسموں کو نہ کھانا اسلام میں ہے۔
انتہائی عجیب دلیل ہے۔
اب کوئی اس آیت کو پکڑلے

وَلَا تُؤْتُوا السُّفَھَاۗءَ اَمْوَالَكُمُ الَّتِىْ جَعَلَ اللّٰهُ لَكُمْ قِيٰ۔مًا وَّارْزُقُوْھُمْ فِيْھَا وَاكْسُوْھُمْ وَقُوْلُوْا لَھُمْ قَوْلًا مَّعْرُوْفًا
اور اپنے وہ مال جنہیں اللہ نے تمہارے لیے قیامِ زندگی کا ذریعہ بنایا ہے ،بے وقوف لوگوں کے حوالہ نہ کرو ، البتہ انہیں کھانے اور پہننے کے لیے دو اور انہیں نیک ہدایت کرو (النساء : آیت 5)

اور کہے کہ قرآن میں بے وقوفوں کا ذکر ہے اس لیے اسلام میں بے وقوف ہوتے ہیں اور ان پر ایمان لانا ضروری ہے۔
 

محمد وارث

لائبریرین
بقول ستم ظریفے، جنوں پر یقین رکھنے کے لیے تو پانی کا ایک قطرہ ہی کافی ہے، کیونکہ اس ایک قطرے میں بھی کم از کم تین جن ہوتے ہیں، دو ہائیڈرو جن اور ایک آکسی جن۔
 

عباس رضا

محفلین
انتہائی عجیب دلیل ہے۔
اب کوئی اس آیت کو پکڑلے
وَلَا تُؤْتُوا السُّفَھَاۗءَ اَمْوَالَكُمُ الَّتِىْ جَعَلَ اللّٰهُ لَكُمْ قِيٰ۔مًا وَّارْزُقُوْھُمْ فِيْھَا وَاكْسُوْھُمْ وَقُوْلُوْا لَھُمْ قَوْلًا مَّعْرُوْفًا
اور اپنے وہ مال جنہیں اللہ نے تمہارے لیے قیامِ زندگی کا ذریعہ بنایا ہے ،بے وقوف لوگوں کے حوالہ نہ کرو ، البتہ انہیں کھانے اور پہننے کے لیے دو اور انہیں نیک ہدایت کرو (النساء : آیت 5)
اور کہے کہ قرآن میں بے وقوفوں کا ذکر ہے اس لیے اسلام میں بے وقوف ہوتے ہیں اور ان پر ایمان لانا ضروری ہے۔
تو؟ بے وقوفوں کا وجود تو ہے۔ شریعت کا ایک پورا موضوع ہے بے وقوفوں پر تصرفاتی پابندی کا۔
 

فاخر رضا

محفلین
انتہائی عجیب دلیل ہے۔
اب کوئی اس آیت کو پکڑلے

وَلَا تُؤْتُوا السُّفَھَاۗءَ اَمْوَالَكُمُ الَّتِىْ جَعَلَ اللّٰهُ لَكُمْ قِيٰ۔مًا وَّارْزُقُوْھُمْ فِيْھَا وَاكْسُوْھُمْ وَقُوْلُوْا لَھُمْ قَوْلًا مَّعْرُوْفًا
اور اپنے وہ مال جنہیں اللہ نے تمہارے لیے قیامِ زندگی کا ذریعہ بنایا ہے ،بے وقوف لوگوں کے حوالہ نہ کرو ، البتہ انہیں کھانے اور پہننے کے لیے دو اور انہیں نیک ہدایت کرو (النساء : آیت 5)

اور کہے کہ قرآن میں بے وقوفوں کا ذکر ہے اس لیے اسلام میں بے وقوف ہوتے ہیں اور ان پر ایمان لانا ضروری ہے۔
ف کاف
اب مزہ آیا
جب یہ میرے پیچھے پڑا ہوا تھا تو کوئی بچانے نہیں آیا
اب دیکھو کیا کرتا ہے یہ
ہنسی سے لوٹ پوٹ والی ایموجی (لگانی نہیں آتی)
 

زیک

تقریباً غائب
بقول ستم ظریفے، جنوں پر یقین رکھنے کے لیے تو پانی کا ایک قطرہ ہی کافی ہے، کیونکہ اس ایک قطرے میں بھی کم از کم تین جن ہوتے ہیں، دو ہائیڈرو جن اور ایک آکسی جن۔
ایک قطرے میں تو اس سے بہت زیادہ ہائیڈروجن اور آکسیجن ایٹم ہوں گے
 

فاخر رضا

محفلین
بھائی یہ ملک ایک failed state بن چکا ہے یا بننے والا ہے
اس کا کوئی حل نہیں ہے
جلد وہ وقت آنے والا ہے کہ ایٹم بم متشدد گروہ کے ہاتھ میں ہوگا.
زندہ بچ کر بھاگ والی پالیسی پر عمل کرنے میں ہی عافیت ہے
 
Top