اسکین دستیاب رقعات عالمگیری

جاسمن نے 'ورکنگ زون' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 20, 2018

  1. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    10,428
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    صفحہ نمبر1

    فہرست مضامین عالمگیر
    ولادت 10
    شاہجہان کی علالت اور حصول سلطنت کے لئے دارا شکوہ کی جدوجہد 10
    شاہجہان کا انتقال مکانی دہلی سے اکبر آباد میں شجاع سے لڑنے کے لئے لشکر بھیجنا اور شجاع کا فرار 12
    دارا شکوہ کا لشکر مالوہ میں 13
    اورنگ زیب کو دارالشکوہ سے کیوں نفرت تھی 15
    عالمگیر اورنگ زیب کا پیام مراد بخشش کے نام 17
    راجہ جسونت سنگھ کی نقل و حرکت 19
    اورنگ زیب اور راجہ جسونت سنگھ کی لڑائی عالمگیر فتح کی فتح داراشکوہ کی نقل و حرکت 21
    داراشکوہ کی نقل و حرکت 23
    داراشکوہ محمد امین خاں کو قید کرتا ہے 25
    دریائے چنبل پر اورنگ زیب کے لشکر روکنے کے لئے داراشکوہ کا فوج بھیجنا 26
    اکبر الہ آباد کے قریب داراشکوہ اور اورنگ زیب کی لڑائی 27
    دارا کا شکست پاکر دہلی بھاگنا اور دہلی سے لاہور جانا 27
    دارا شکوہ کی نقل و حرکت 33
    عالمگیر کی نقل و حرکت اکبر الہ آباد سے دہلی میں 35
    مراد بخش کو قید کرنا 37
     
  2. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    10,428
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    صفحہ نمبر 2
    مراد قید ہوتا اورنگ زیب اس کے ملازموں کو اپنے ساتھ گانٹھ لیتا ہے اور مراد کو سلیم گڈھ کے قلعہ میں بھیجتا ہے 39
    داراشکوہ سلیمان شکوہ اور مراد بخش کے امراء و افسران اعلیٰ اورنگ زیب کی خدمت میں 48
    دہلی سے لاہور تک داراشکوہ کی نقل و حرکت کے حالات اور عالمگیر کی عزمیتِ پنجاب 49
    اورنگ زیب کا تخت سلطنت پر بیٹھنا۔ داراشکوہ و سلیمان شکوہ کے لئے لشکر بھیجنا۔ خود پنجاب کی طرف جانا اور ستلج سے پار ہونا 51
    سلیمان شکوہ کے حالات 53
    غلیل اللہ خاں و بہادر خاں کے لشکروں کے حالات 58
    عالمگیر کی نقل و حرکت 60
    داراشکوہ کے حالات لاہور سے فرار ہونے کے بعد 63
    عالمگیر شیخ میر کو داراشکوہ کے تعاقب میں بھیجتا ہے 65
    عالمگیر ملتان سے دہلی میں اور شاہزادہ شجاع کے معاملات 66
    اورنگ زیب و شجاع کے مابین محبت و اتحاد کی مراسلت 67
    شجاع کا ورود الہ آباد میں 68
    جشن وزن شمسی سال چہل و دوم 70
    اورنگ زیب شجاع سے مقابلہ کرنے کے لئے روانہ ہوتا ہے 71
    شجاع اور عالمگیر کے لشکروں کی معرکہ آرائی اور راجہ جسونت سنگھ کی دغابازی 72
    شیخ میر صف شکن خاں کے لشکروں کے حالات جو داراشکوہ کے تعاقب میں گئے تھے اور داراشکوہ کی پریشانی 80
     
  3. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    10,428
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    صفحہ نمبر 3
    عالمگیر کچھوہ سے اکبر آباد میں اور قلعہ الہ آباد کا فتح ہونا 85
    راجہ جسونت سنگھ کی گوشمالی اور مراد بخش کا قلعہ گوالیار میں مقید ہونا 86
    راجہ جسونت سنگھ کے متعلق ڈاکٹر برنیر انگریز کا بیان 87
    داراشکوہ کی نقل و حرکت 89
    داراشکوہ اور راجہ جسونت سنگھ کے معاملات 91
    عالمگیر کی نقل و حرکت 100
    عالمگیر کا جلوس ثانی سِکہ،خطبہ اور لقب کا تقرر 100
    مال و رسال کا حساب تبدیل ہونا اور نو روز کے جشن کا موقوف ہونا 102
    تعین محتسب و منع مہنیات و مُسکرات 102
    کل ممالکِ محروسہ میں غلہ اور اجناس کے باج کا بخشنا اور حاصلِ راہداری کا موقوف کرنا 102
    داراشکوہ کا عبرتناک انجام 103
    رعایا کے لئے سہولتیں بہم پہنچانا 103
    قلعہ شاہجہان آباد (دہلی کے لال قلعہ) میں آرامگاہ کے پاس ایک مسجد (موتی مسجد) کا بنانا 113
    شجاع کے لیے سولہ مہینے کے حالات بنارس سے بھاگنے سے رخنک تک بھاگنے میں 114
    شاہزاد محمد سلطان کا شجاع کے پاس جانا اور اس کی بیٹی سے نکاح کرنا 123
     
  4. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    10,428
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    صفحہ نمبر 4
    اکبرنگر پر شجاع کا قبضہ 126
    عالمگیر کی نقل و حرکت 134
    پادشاہزادہ محمد سلطان کی مراجعت شجاع کے پاس سے راجہ کرن بہورسہ کی تنبیہ کے لئے امیر خاں کا بھیجنا 140

    مرہٹوں کے حالات اور ان کے علاقے
    دکن 141

    سیواجی کی ولادت اور تعلیم
    سیواجی کا لٹیرا پن 149
    سیواجی کے یار اور مددگار 150
    پہاڑی قلعوں پر سیواجی کا قبضہ 151
    باپ کی جاگیر پر قبضہ 152
    سیواجی کی پہلی بغاوت اور والی بیچاپور کا خزانہ لوٹنا 154
    شاہ جی کا قید ہونا اور رہائی حاصل کرنا 154
    سیواجی کے نئے حملے اور عالمگیر سے معاملات 157
    افضل خاں کا سیواجی سے مقابلہ کے لئے روانہ ہونا 157
    علی عادل شاہ کی دو دفعہ اور فوج کشی 159
    سیواجی کی صلح والی بیجاپور سے 163
    قلعہ چاکنہ کی فتح 162
    جشن وزن شمسی سال 41 مطابق سنہ جلوس و قلعہ پریندہ کی فتح 170
     
  5. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    10,428
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    صفحہ نمبر 5
    سری نگر سے سلیمان شکوہ کو حضور میں لانا 171
    ایلچوں کی آمد 171
    گرانی غلہ 172

    واقعات سال چہارم 1071ھ 1661ء
    بذاق بیگ سفیر ایران 173
    تسخیر قلعہ کہاتا کہری 173
    چنپت بندیلہ 174
    تسخیر ولایت پلاؤں (پالامئو) واقعہ صوبہ بہار 175
    شاہزادہ محمد معظم کی شاہزادی 174
    اورنگ زیب کی نقل و حرکت 174
    خانخاناں عرف معظم خاں کی تمہیدات۔ ملکِ آسام کی فتح 174
    کوچ بہار کے حالات 184
    فتح آسام کے قصد سے لشکر کا کوچ 188
    ملک آسام میں لشکر اسلامی کا ورود 193
    قلعہ سما گڈھ کا محاصرہ 194
    قلعہ سملہ گڈھ کی فتح 195
    نوارہ کے حالات لکھو گر میں لشکرِ سلطانی کی آمد 198
    لشکر شاہی کا کوچ لکھوگر سے اور کہرگا نو کا فتح ہونا 202
    آسامیوں کی قید سے ہندو مسلمانوں کی رہائی 202
    آسام کی غنیمت 205
     
  6. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    10,428
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    صفحہ نمبر 6
    ملک آسام کے طول و عرض و خصائص اور اہل اسلام کے حالات 206
    کہرگانو سے متھراپور میں لشکر کا ورود اور تھانوں کا مقرر ہونا 212
    برسات کا آنا اور بغاوتوں کا اُٹھنا 214
    کوچ بہار پر راجہ نرائن کا دوبارہ تصرف 216
    لکھوگھر کی جانب فرہاد خاں کا جانا، عجیب واقعت کا نمودار ہونا اور اس کی مراجعت 217
    راہوں کا مسدور ہونا، تھانوں کا اُٹھنا و دیگر قضئے 219
    کہرگانو میں لشکر سلطانی کو کیا واقعات پیش آئے 221
    لکہو گر اور نوارہ کے حالات و دیگر قضایا 222
    کہرگانو و متھراپور میں امراض وبا کا پھیلنا، غلہ کا قحط اور نواب کی مراجعت 229
    راہوں کا کھلنا، وبا و قحط کا کم ہونا 231
    صلح کا قیام اور طلسم آسام سے اہلِ اسلام کی نجات 235
    نواب کا انتقال 237
     
  7. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    10,428
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    صفحہ نمبر 7

    ماخذ

    میں نے کتاب عالمگیری کو کتب مفصلہ ذیل کی اعانت سے تالیف کیا ہے
    (1) عالمگیر نامہ تصنیف منشی محمد کاظم بن محمد امین
    محمد کاظم کو مرزا کاظم بھی اور اس کے والد محمد امین کو مرزا مینائے کاشی بھی کہتے ہیں۔ جس نے شاہ جہاں نامہ لکھا ہے۔ محمد کاظم اورنگ زیب کے سال اول جلوس میں اس کا ملازم ہوا۔ عالمگیر کو اس کی انشا پردازی پسند آئی۔ اس نے اس کو اشارہ کیا۔ ہماری سلطنت کا سچا سچا حآل قلمبند کرو۔ حکم دیا
    "جب تک مئولف سوانح نگاری اور وقائع نگاری میں مصروف رہے وقائع نگار ایک نسخہ واقعات اور فہرست واردات جس میں ماہ بہ ماہ اور سال بسال کے حالات معہ صوبحات درج ہوں ۔ اس کے حوالہ کرتے رہیں"
    یہ مقرر فرمایا:-
    " جو سوانح و حالات تحریر میں آئیں۔ وہ ترتیب پانے کے بعد اوقات مناسب میں خلوت کے موقعہ پر ہم کو (عالمگیر کو) سنائے جائیں تاکہ اس کی تصحیح و تنقیح ہم خود کرتے رہیں"۔
    یہ بھی حکم دیا:-
    "پادشاہ نامہ میں ہماری شاہزادگی کا حال تو مفصل لکھا جاچکا ہے۔ اب ایامِ سلطنت کے حالات آغازِ سلطنت جمادی اولولیٰ 1067ھ سے رجب 1078ھ تک ایامِ سلطنت کے دس سال کے حالات تالیف کیے اور 33جلوس میں عالمگیر کے روبروپیش کئے۔ عالمگیر نے اس سبب سے کہ اسکے نزدیک مآثر باط کی تاسیس کے سامنے آثارِ ظاہر کی ابقاء کی وقعت کچھ نہ تھی۔ مئولف کو منع کردیا۔
     
  8. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    10,428
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    صفحہ نمبر 8
    "اب دس سال سے آگے ہماری سلطنت کی تاریخ نہ لکھو"۔
    مئولف نے ان دس سالوں کے واقعات پر بس کی۔
    (2) مآثر عالمگیری: اس کا مصنف محمد ساقی خاں مستعد ہے۔ وہ بہادرشاہ کے وزیر عنایت اللہ خاں کا منشی تھا۔ اس نے عالمگیر نامہ محمد کاظم سے اول دس کے حالات خلاصہ کرکے لکھے۔ باقی چالیس کے حالات وہی قلمبند کئے جو زیادہ تر اپنی آنکھوں سے دیکھے تھے۔ وہ ان چالیس سال میں عالمگیر کے دربار کے حاضرین میں سے تھا۔
    (3) فتوحاتِ عالمگیری: اس کتاب کو واقعاتِ عالمگیری بھی کہتے ہیں۔ اس کا مصنف محمد معصوم ہے۔ وہ اورنگزیب کے بھائی شاہ شجاع کا ملازم تھا۔ یہ تینوں عالمگیر نامے عہد نویس مئورخوں نے لکھے ہیں۔ اس کتاب کا نام ظفرنامہ عالمگیری بھی ہے۔
    (4) منتخب اللُباب: اس کو تاریخ خانی خاں کہتے ہیں۔ اس کا مصنف اورنگزیب کی خدمت میں رہتا تھا۔ وہ اپنی تاریخ میں لکھتا ہے۔
    "اگرچہ اورنگزیب کی پچاس سال کی سلطنت کا خلاصہ لکھنا دریائے پانی کو کُلیا سے ناپنا ہے۔ خصوصاً آخر چالیس کے حالات، جس میں پادشاہ نے مئورخوں کو تاریخ کے لکھنے سے منع کردیا تھا۔ وہ ایک بحربے پیاں ہے لیکن راقم نے بقدر مقدور دست و پازنی کرکے تفتیش تمام اور تخص تام کرکے مقدمات اور واقعات کو قابلِ تحریر کیا۔ جن میں سے بعض کو ثقہ اور بوڑھوں کی زبانی اور بعض کو اہلِ دفتر اور واقعہ نگاروں سے تحقیق کیا ہے"۔
    (5) وقائع نعمت خاں عالی: یہ مشہور کتاب ہے جس میں اورنگزیب کی سلطنت کے بعض وقائع بطور استہزاء کے لکھے ہیں۔ وہ تاریخ نہیں ہے۔
    (6) جنگ نامہ نعمت خاں عالی: یہ کتاب نعمت خاں عالی نے جس کا لقب دانشمند خاں
     
  9. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    10,428
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    صفحہ نمبر9

    تھا۔ لکھی ہے اس میں حالات اس زمانہ سے کہ اورنگزیب رانا سے لڑا ہے۔ بہادرشاہ کی جانشینی تک لکھے ہیں۔
    (7) آدابِ عالمگیری: اس کتاب میں وہ ساری عرضداشتیں، رقعات و تحریرات جمع ہیں۔ جو عالمگیر نے باپ کو، امیروں، وزیروں، مشائخ، بزرگوں و شہزادیوں کو لکھے ہیں یا اپنے منشی ابوالفتح سے لکھوائے ہیں۔ جس کا خطاب قابل خاں تھا۔
    (8) رقعاتِ عالمگیری: جس کا مصنف خود عالمگیر ہے۔ اس کے تین مجموعے ہیں جن کے نام یہ ہیں (1) کلمات طیبات (2) رقام کرائم (3) دستور العمل آگاہی اس میں کچھ تاریخی حالات بھی درج ہیں۔ اکثر یہ کتاب تالیف کے وقت زیر مطالعہ رہی ہے۔
    (9) تاریخ فتح آسام: اس میں شہاب الدین طالش خاں نے آسام کی فتح کا حال لکھا ہے۔ اس جنگ میں وہ شریک تھا۔
    ان کتابوں کے سوا اور چھوٹی موٹی کتابیں تالیف کے وقت زیرِ مطالعہ رہیں۔ اور انگریز تاریخوں کی ورق گردانی اس عالمگیر کے بہت کی گئی ہے۔ عالمگیر کے حالات کی تاریخیں پندرہ لکھی گئی ہیں۔ مگر افسوس ہے کہ کوئی کامل تاریخ ایسی نہیں ہے جیسے کہ اس کے آباؤ اجداد کی تاریخیں ہیں۔ اس لئے اس کی تاریخوں میں اختلافات کثرت سے ہیں۔
     
  10. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    10,428
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    عبدالصمدچیمہ نے صفحہ نمبر ایک سے نو تک صفحات ٹائپ کیے ہیں۔
    ایک بات بہت دکھ دے رہی ہے کہ نایاب بھیا نے کہا تھا کہ صفحہ 1 سے 9 تک وہ ٹائپ کریں گے۔
    اللہ انھیں آسانیاں اور خوشیاں عطا فرمائے اور ان کے گھر والوں کو بھی۔آمین!
     
    • غمناک غمناک × 1
  11. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    10,428
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    18 تک صفحات ہو چکے ہیں۔
    اب کون ذمہ داری لیتا ہے اگلے صفحات کی؟
     
  12. غدیر زھرا

    غدیر زھرا لائبریرین

    مراسلے:
    3,144
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Devilish
    معذرت کہ میں نے 30 تک ٹائپنگ کی ذمہ داری لی تھی لیکن کچھ وجوہات کی بنا پر نہ نبھا پائی اب ان شاءاللہ دوبارہ کوشش کروں گی کہ تیس تک مکمل کر دوں۔
    اس دھاگے میں جب بھی آنا ہو گا محترم نایاب کی یاد آئے گی خدا ان کے درجات بلند کرے آمین
     
  13. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    10,428
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    اللہ آسانیاں عطا فرمائے۔آمین!

    ان شاءاللہ۔

    آمین!
     

اس صفحے کی تشہیر