سیماب اکبر آبادی دل کی بساط کیا تھی نگاہ جمال میں ۔ سیماب اکبر آبادی

چوہدری لیاقت علی نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اکتوبر 31, 2015

  1. چوہدری لیاقت علی

    چوہدری لیاقت علی محفلین

    مراسلے:
    305
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    دل کی بساط کیا تھی نگاہ جمال میں
    اک آئینہ تھا ٹوٹ گیا دیکھ بھال میں

    صبر آہی جائے گر ہو بسر ایک حال میں
    امکاں اک اور ظلم ہے قید محال میں

    تنگ آکے توڑتا ہوں طلسم خیال کو
    یا مطمئن کرو کہ تمھیں ہو خیال میں

    بجلی گری اور آنچ نہ آئی کلیم پر
    شاید ہنسی بھی آگئی ان کو جلال میں

    عمر دو روزہ واقعی خواب و خیال تھی
    کچھ خواب میں گزر گئی باقی خیال میں

    سیماب اکبر آبادی
     
    • زبردست زبردست × 1

اس صفحے کی تشہیر