دستِ صبا(فیض احمد فیض)

وہاب اعجاز خان نے 'اردو شاعری' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اپریل 29, 2006

  1. وہاب اعجاز خان

    وہاب اعجاز خان محفلین

    مراسلے:
    1,587
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    میخانے کی رونق ہیں کبھی خانقہوں کی
    اپنالی ہوس والوں نے جو رسم چلی ہے
    دلداریء واعظ کو ہمیں باقی ہیں ورنہ
    اب شہر میں ہر رندِ خرابات ولی ہے

    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
     
  2. وہاب اعجاز خان

    وہاب اعجاز خان محفلین

    مراسلے:
    1,587

    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    اختتام

    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
     
  3. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,870
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    کبھی کبھی یاد میں اُبھرتے ہیں نقشِ ماضی مٹے مٹے سے
    وہ آزمائش دل و نظر کی، وہ قُربتیں سی، وہ فاصلے سے

    کبھی کبھی آرزو کے صحرا میں، آ کے رُکتے ہیں قافلے سے
    وہ ساری باتیں لگاؤ کی سی، وہ سارے عُنواں وصال کے سے

    نگاہ و دل کو قرار کیسا، نشاط و غم میں کمی کہاں کی
    وہ جب ملے ہیں تو اُن سے ہر بار، کی ہے الفت نئے سرے سے

    بہت گراں ہے یہ عیشِ تنہا، کہیں سبک تر، کہیں گوارا
    وہ دردِ پنہاں کہ ساری دنیا، رفیق تھی جس کے واسطے سے

    تمہیں کہو رند و محتسب میں ہے آج شب کون فرق ایسا
    یہ آ کے بیٹھے ہیں میکدے میں، وہ اٹھ کے آئے ہیں میکدے سے
     

اس صفحے کی تشہیر