درخت کے بدلے جنت

abdul.rouf620 نے 'اِسلامی تعلیمات' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اگست 18, 2020

  1. abdul.rouf620

    abdul.rouf620 محفلین

    مراسلے:
    455
    ایک گھر میں کھجور کا درخت تھا جس کے تنے پڑوسی کے گھر تک چلے گئے تھے پڑوسی کے بچے کبھی کبھار کھجور توڑ لیا کرتے تھے کھجور کا مالک ان بچوں سے بری طرح پیش آتا تھا
    پھر ایک دن کھجور کے مالک نے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی خدمت میں شکایت کر دی، نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کو اس تمام واقعہ پر بہت رنج ہوا کھجور کے مالک کو فرمایا کہ تم اگر یہ درخت اللہ کی راہ میں وقف کر دو تو میں تمہیں جنت کی بشارت دیتا ہوں مگر کھجور کا مالک رضامند نہ ہوا اور اٹھ کر چلا گیا اسی مجلس میں عثمان غنی رضی اللہ عنہ بھی بیٹھے ہوئے تھے انہوں نے حضور صلی اللہ علیہ وسلم سے عرض کی کہ کیا یہ پیشکش صرف اسی کے لئے تھی یا کوئی بھی اس پیشکش سے فائدہ اٹھا سکتا ہے آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا "جو بھی ایسا کرے" پھر حضرت عثمان بھی اس شخص کے پیچھے پیچھے اس کے گھر پہنچ گئے دستک دی اور کہا فلاں جگہ میں تمہیں اس کے بدلہ میں درخت دیتا ہوں تم یہ چھوڑ دو اس نے انکار کیا حتی کہ پورا باغ دے کر اس سے وہ ایک درخت لے لیا اسی کامیابی کی خوشی میں یہ سرکار مدینہ صلی اللہ علیہ وسلم کی خدمت میں حاضر ہوتے ہیں اور عرض کی کہ میں وہ درخت فی سبیل اللہ وقف کرتا ہوں یہ سننا تھا کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا عثمان جنتی ہے عثمان جنتی ہے عثمان جنتی ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • زبردست زبردست × 1
  2. arshadmm

    arshadmm محفلین

    مراسلے:
    301
    جزاک اللہ خیر
     

اس صفحے کی تشہیر