فراز تم بھی خفا ہو لوگ بھی برہم ہیں دوستو

سید زبیر نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 29, 2012

  1. سید زبیر

    سید زبیر محفلین

    مراسلے:
    4,362
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Dunce
    تم بھی خفا ہو لوگ بھی برہم ہیں دوستو
    اب ہو چلا یقیں کہ برے ہم ہیں‌ دوستو
    کس کو ہمارے حال سے نسبت ہے کیا کریں
    آنکھیں‌تو دشمنوں‌کی بھی پرنم ہیں دوستو
    اپنے سوا ہمارے نہ ہونے کا غم کسے
    اپنی تلاش میں تو ہم ہی ہم ہیں دوستو
    کچھ آج شام ہی سے ہے دل بھی بجھا بجھا
    کچھ شہر کے چراغ بھی مدھم ہیں دوستو
    اس شہرِ آرزو سے بھی باہر نکل چلو
    اب دل کی رونقیں بھی کوئی دم ہیں‌دوستو
    سب کچھ سہی فراز پر اتنا ضرور ہے
    دنیا میں ایسے لوگ بہت کم ہیں‌دوستو
    • — — — — — — — — — — — — •
     
    • زبردست زبردست × 3
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. محمد بلال اعظم

    محمد بلال اعظم لائبریرین

    مراسلے:
    10,288
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    احمد فراز کی زبردست غزل۔
    شکریہ
     
  3. امیداورمحبت

    امیداورمحبت محفلین

    مراسلے:
    3,074
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    بہت خوب ۔۔۔۔۔
     
  4. محمد بلال اعظم

    محمد بلال اعظم لائبریرین

    مراسلے:
    10,288
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Angelic
    واہ
    فراز نے ایک ایک شعر میں موتی پرو دیے ہیں۔
    ایک ایک شعر نگینے کی طرح جڑا ہوا ہے۔
     

اس صفحے کی تشہیر