نوشی گیلانی تمهیں خبر ہی نہیں کیسے سر بچایا ہے

ہارون اعجاز نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 18, 2016

  1. ہارون اعجاز

    ہارون اعجاز محفلین

    مراسلے:
    183
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    غزل

    تُمھیں خبر ھی نہیں کیسے سر بچایا ھے
    عذاب جاں پہ سہا ھے تو گھر بچایا ھے

    تمام عُمر تعلّق سے مُنحرف بھی رھے
    تمام عُمر اِسی کو مگر بچایا ھے

    بدن کو برف بناتی ھوئی فضا میں بھی
    یہ مُعجزہ ھے کہ دستِ ھُنر بچایا ھے

    سحرِ ھوئی تو مِرے گھر کو راکھ کرتا تھا
    وہ اِک چراغ جسے رات بھر بچایا ھے

    کُچھ ایسی صُورت حالات ھو گئی دل کو
    جنوں کو ترک کیا اور ڈر بچایا ھے

    یقینِ شہر ھُنر نے یقین موسم میں
    بہت کٹھن تھا بچانا مگر بچایا ھے

    ٭٭٭
     
    • زبردست زبردست × 1
  2. عبد الرحمٰن

    عبد الرحمٰن محفلین

    مراسلے:
    2,623
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    بہت خوبصورت
     
  3. عبد الرحمٰن

    عبد الرحمٰن محفلین

    مراسلے:
    2,623
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool

اس صفحے کی تشہیر