فارسی شاعری اے خسروِ خوباں نظرے سوئے گدا کن ۔ حافظ شیرازی

محمد شان محسن نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 19, 2020

  1. محمد شان محسن

    محمد شان محسن محفلین

    مراسلے:
    7
    جھنڈا:
    Pakistan
    اے خسروِ خوباں نظرے سوئے گدا کن
    رحمے بمنِ سوختئہ بے سروپا کن

    اے حسینوں کے بادشاہ! فقیر پر ایک نظر کر۔ مجھ جلے ہوئے ، بے سروپا پر، رحم کر۔

    دارد دلِ درویش تمنائے نگاہے
    زآں چشمِ سیہ مست بیک غمزہ روا کن

    فقیر کا دل ، ایک نگاہ کا آرزو مند ہے۔ اس مست، کالی آنکھ کی ایک ادا سے حاجت روائی کر دے۔

    شمع و گُل و پروانہ و بلبل ہمہ جمع اند
    اے دوست بیا رحم بہ تنہائی ما کن

    شمع ، گل، پروانہ اور بلبل سب جمع ہیں۔ اے دوست آجا، ہماری تنہائی پر رحم کر۔

    با دلِ شدگاں جوروجفا تا بکے آخر
    آہنگِ وفا ترکِ جفا بہرِ خدا کن

    بے دلوں پر آخر کب تک ظلم و ستم کرے گا؟ خدا کے لئے وفا کا ارادہ کر، اور جفا چھوڑ دے۔

    مشنو سخنِ دشمنِ بد گوئے خدارا
    با حافظِ مسکینِ خود اے دوست وفا کن

    خدا کے لئے، بد گو دشمن کی بات نہ سن ۔اے دوست ! اپنے مسکین ، حافظ کے ساتھ وفا کر۔

    حافظ شیرازی (خواجہ شمس‌الدین محمد شیرازی)
     
    آخری تدوین: ‏مارچ 20, 2020
  2. Athar Ghaffar Jimmy

    Athar Ghaffar Jimmy محفلین

    مراسلے:
    1

اس صفحے کی تشہیر