سعود عثمانی اشک زیادہ سینے میں ' کم آنکھوں میں

چوہدری لیاقت علی نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏اپریل 30, 2016

  1. چوہدری لیاقت علی

    چوہدری لیاقت علی محفلین

    مراسلے:
    305
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    اشک زیادہ سینے میں کم آنکھوں میں
    دل میں ایک سمندر شبنم آنکھوں میں
    تعبیروں کی رت جانے کب آئے گی
    مدت سے ہیں خواب کے موسم آنکھوں میں
    قطرہ قطرہ ڈھلتی ہیں پر جلتی ہیں
    درد کی شمعیں مدھم مدھم آنکھوں میں
    راہ کہاں سے پاتے ہیں کیوں آتے ہیں
    ہنستے ہنستے آنسو یکدم آنکھوں میں
    منہ مانگی ساری ہی خوشیاں ہونٹوں پر
    پھر بھی انجانے سے کچھ غم آنکھوں میں
    سب منظر جانے پہچانے لگتے ہیں
    رہتا ہے اک خواب کا عالم آنکھوں میں

    ( سعود عثمانی )
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2

اس صفحے کی تشہیر