1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $453.00
    اعلان ختم کریں

اس ہفتے کے مہمان شاعر

محمد خلیل الرحمٰن نے 'بزم سخن' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مارچ 6, 2013

  1. طاھر جاوید

    طاھر جاوید محفلین

    مراسلے:
    182
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    بی
     
  2. طاھر جاوید

    طاھر جاوید محفلین

    مراسلے:
    182
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
    بہت خوب جی
     
  3. طاھر جاوید

    طاھر جاوید محفلین

    مراسلے:
    182
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Breezy
  4. ذوالفقار نقوی

    ذوالفقار نقوی محفلین

    مراسلے:
    381
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Happy
    محترم اظہر نذیر صاحب۔۔۔۔کیا عمدہ شعر کہا ہے۔۔۔۔۔
    خاک سے ہی خمیر تھا اظہر
    خاک میں ہی کہیں نشیں ہوں گے۔۔۔۔۔
     
    • متفق متفق × 1
  5. ذوالفقار نقوی

    ذوالفقار نقوی محفلین

    مراسلے:
    381
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Happy
    ’’عمر، ڈگریاں اور حیثیت سب ادب کی محفل سے باہر کی باتیں ہیں، ادب میں انسان کا قد بُت، عمر، حیثیت اور مرتبہ صرف ادب کی خدمت کی بنیاد پر ہوتا ہے ‘‘
    آپ کا یہ جملہ بے حد پسند آیا جو ایک مسلمہ حقیقت ہے۔۔۔ کاش ہم اسے درک کر لیں۔۔۔۔۔۔
     
    • متفق متفق × 1
  6. ذوالفقار نقوی

    ذوالفقار نقوی محفلین

    مراسلے:
    381
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Happy
    میرا ایک سوال ۔۔۔۔ کہ آپ شاعری میں جدیدیت کے حوالے سے کیا کہیں گے؟
     
    • زبردست زبردست × 1
  7. ذوالفقار نقوی

    ذوالفقار نقوی محفلین

    مراسلے:
    381
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Happy
    احباب .....یہ نذیر صاحب اگر کہیں ملیں تو بلا لایئے گا.....
     
    • زبردست زبردست × 1
  8. محمد اظہر نذیر

    محمد اظہر نذیر محفلین

    مراسلے:
    1,818
    جھنڈا:
    Qatar
    موڈ:
    Angelic
    محترم جناب ذوالفقار نقوی صاحب
    شاعری میری ناقص رائے میں اُس مضراب سے مشابہت رکھتی ہے جو دل کے تاروں کو چھیڑ دے، اس میں جدت یا قدامت کا سوال نہیں اُٹھنا چاہئے، ہاں البتہ جیسا کہ غزل جن کی ایجاد ہے اُن کا ایک خاص مقصد تھا ہمیں ہرممکن کوشش کرنا چاہئے کہ غزل اُنہی حدود و قیود کے درمیان کھیلنے کا نام ہو۔ ہم اگر مضامین میں ترمیم کرنا چاہیں یا اسلوب بدلنا چاہیں تو اُسے اپنی کا پسند کا کوئی اور نام کیوں نہ دیں؟ ہمیں کیوں اصرار ہو کہ ہم اُس نئی روش کو بھی غزل ہی کہ کر پکاریں؟
    مان لیتے ہیں کہ مضامین پامال ہو چکے ہیں، اسلوب تو نہیں؟ انداز تو نہیں؟ کیا ہم سب کچھ نئے سرے سے کہنے کے لائق بھی نہیں؟
    یہ جو جدت کے نام پر قبروں میں لیٹے مردوں تک کی باتیں کی جاتی ہیں ، یہ نامناسب ہیں میرے خیال سے، جدت مادر پدر آزاد نہیں ہونا چاہئے
    رہا سوال کہ لوگ لکھ رہے ہیں جدید انداز میں، کچھ بُرائی نہیں اس میں کہ آخر میں عزت اور ذلت تو اللہ کے ہاتھ میں ہے اور مقبولیت جس انداز کو حاصل ہو گی وہ پائندہ رہے گا، باقی گرد آلود کتابوں میں دفن ہو جانا ہے۔ :angel:
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. ذوالفقار نقوی

    ذوالفقار نقوی محفلین

    مراسلے:
    381
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Happy
    محمد اظہر نذیر صاحب۔۔ بعض شعرا جدیدیت کو لیکر بہت ہنگامہ کھڑے کئے ہوئے نظر آتے ہیں۔۔ اور ایسوں میں بعض کے ہاں تو صرف کچھ نیا کرنے یا کہنے کی دھن میں بے معنی بھی در آئی ہے۔ میں نے فیس بک پر ایک گروپ بنا کر چند نامور شعرا جن میں محترم عرفان ستار صاحب، جناب رفیق راز صاحب، جناب رحمان حفیظ، جناب ادریس آزاد ، جناب ایاز رسول نازکی ، وغیرہ وغیرہ شامل ہیں ، کے انٹرویو بھی لئے ، جو اب بھی میرے پاس محفوظ ہیں۔اور میں اِن تمام سے یہ سوال کیا لیکں سب سے مختلف جواب پایا۔
     
    • زبردست زبردست × 1
  10. ذوالفقار نقوی

    ذوالفقار نقوی محفلین

    مراسلے:
    381
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Happy
    اِن میں بعض کے جوابات کے اقتباسات بھی یہاں پیش کرنے کی کوشش کروں گا۔
     
    • زبردست زبردست × 1
  11. محمد اظہر نذیر

    محمد اظہر نذیر محفلین

    مراسلے:
    1,818
    جھنڈا:
    Qatar
    موڈ:
    Angelic
    ذوالفقار نقوی صاحب
    ہم دیسیوں کے ساتھ ایک بہت بڑی مشکل ہے، یا شائد یوں کہوں تو بہتر ہو گا کہ میری ناقص رائے میں ایسا ہے کہ جانچ پڑتال کے اصول و ضوابط وضع کرنے کے بعد بھی پرکھنے پہ جب آتے ہیں تو اپنی اپنی ذاتی کسوٹیوں سے پرکھے بغیر کسی بھی زیر پرکھ موضوع کو پزیرائی نہیں بخشتے، آپ نے جن مشاہیر کا نام لیا ہے وہ سب کے سب اگر کسی ایک مستند تحریر کو بھی پرکھیں گے تو اُن کا نتیجہ ایک دوجے سے یکسر مختلف ہو گا۔
    گوروں کے ہاں یہ بات نہیں ہوتی اور اگر ہوتی ہے تو صرف بند کمروں میں احباب کے درمیان۔ گویا اعلانیہ جب وہ پرکھتے ہیں کسی بھی شے کو تو صرف اور صرف مروج معلوم کسوٹیوں پر اور رائے دیتے وقت کہیں بھی '' میں '' دکھائی نہیں دیتی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. محمد اظہر نذیر

    محمد اظہر نذیر محفلین

    مراسلے:
    1,818
    جھنڈا:
    Qatar
    موڈ:
    Angelic
    ایسا ہوا تو میرے علم میں اضافہ ہو گا جناب، از راہ کرم نیکی اور پوچھ پوچھ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  13. ذوالفقار نقوی

    ذوالفقار نقوی محفلین

    مراسلے:
    381
    جھنڈا:
    India
    موڈ:
    Happy
    جناب رحمان حفیظ صاحب کا جواب کہ ندرت ِِ شعری یا جدت کیا ہے۔۔۔۔
    ’’
    ﺟﺪﺕ ﻭﯾﺴﮯ ﺗﻮ ﺍﯾﮏ ﻣﻌﺮﻭﺿﯽ ﺍﺻﻄﻼﺡ ﮨﮯ ۔ ﮨﺮ
    ﻗﺪﯾﻢ ﭼﯿﺰ ﮐﺒﮭﯽ ﻧﮧ ﮐﺒﮭﯽ ﺟﺪﯾﺪ ﺭﮨﯽ ﮨﻮ ﮔﯽ۔ ﻟﯿﮑﻦ
    ﺷﺎﻋﺮﯼ ﻣﯿﮟ ﺟﺪﺕ ﺳﮯ ﻣﺮﺍﺩ ﮐﻠﯿﺸﮯ ﺳﮯ ﻧﺠﺎﺕ
    ﮨﮯ۔
    ﮐﻠﯿﺸﮯ ﺍﻥ ﺭﭨﮯ ﺭﭨﺎﺋﮯ ﺍﻟﻔﺎﻅ ﺍﻭﺭ ﻣﺮﮐﺒﺎﺕ ﺳﮯ
    ﺍﻧﺪﮬﺎ
    ﺩﮬﻨﺪ ﺍﺳﺘﻔﺎﺩﮮ ﮐﺎ ﻧﺎﻡ ﮨﮯ ﺟﻮ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﮐﯽ ﺯﯾﺎﺩﺗﯽ
    ﮐﮯ ﺑﺎﻋﺚ ﺍﭘﻨﮯ ﻣﻌﺎﻧﯽ ﻣﯿﮟ ﺍﺱ ﻃﺮﺡ ﺣﺴﺎﺱ ﻧﮩﯿﮟ
    ﺭﮨﮯ ﮐﮧ ﺫﮨﻨﻮﮞ ﭘﺮ ﺍﺳﺼﺪﺍﻗﺖ ﺍﻭﺭ ﺷﺪﺕ ﺳﮯ ﺍﺛﺮ
    ﺍﻧﺪﺍﺯ ﮨﻮﮞ ﺟﺲ ﻃﺮﺡ ﺍﭘﻨﮯ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﮐﮯ ﺁﻏﺎﺯ ﻣﯿﮟ
    ﺗﮭﮯ۔ ﺁﭖ ﺳﻮﭼﺌﮯ ﮐﮧ ﺟﺐ ﮐﺴﯽ ﺷﺎﻋﺮ ﻧﮯ ﺗﺎﺭﯾﺦ
    ﻣﯿﮟ ﭘﮩﻠﯽ ﺑﺎﺭ ﻣﺤﺒﻮﺏ ﮐﮯ ﮨﻮﻧﭩﻮﮞ ﮐﻮ ﭘﮭﻮﻝ ﯾﺎ ﮐﻠﯽ
    ﺳﮯ ﺗﺸﺒﯿﮩﮧ ﺩﯼ ﮨﻮ ﮔﯽ ﺗﻮ ﺍﺱ ﮐﯽ ﺷﮩﺮﺕ ﭼﮩﺎﺭ
    ﺩﺍﻧﮓِ ﻋﺎﻟﻢ ﻣﯿﮟ ﭘﮭﯿﻞ ﮔﺌﯽ ﮨﻮ ﮔﯽ۔ ﺍﯾﮏ ﻋﻤﺮ ﺗﮏ
    ﻟﻮﮒ ﺍﺱ ﻟﻔﻆ ﮐﻮ ﺍﭘﻨﮯ ﻣﺤﺒﻮﺏ ﮐﮯ ﮨﻮﻧﭩﻮﮞ ﮐﮯ ﻟﺌﮯ
    ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﮐﺮﻧﮯ ﭘﺮﮨﭽﮑﭽﺎﺗﮯ ﮨﻮﮞ ﮔﮯ ﺟﯿﺴﮯ ﺍﺱ
    ﻟﻔﻆ ﭘﺮ ﺍﻭﻟﯿﮟ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﻭﺍﻟﮯ ﺷﺎﻋﺮ ﮐﯽ ﺣﻖ ﮐﯽ
    ﻣﮩﺮ ﺛﺒﺖ ﮨﻮ ﭼﮑﯽ ﮨﻮ۔ ﭘﮭﺮ ﯾﮧ ﻟﻔﻆ ﻋﺎﻡ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﮨﻮ
    ﻧﺎ ﺷﺮﻭﻉ ﮨﻮ ﮔﯿﺎ ﺍﻭﺭ ﺍﺏ ﮨﺮ ﮐﻮﺋﯽ ﺍﺳﮯ ﻧﮩﺎﯾﺖ ﺑﮯ
    ﺣﺴﯽ ﺳﮯ ﮐﮩﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﮐﺴﯽ ﮐﮯ ﻟﺌﮯ ﺑﮭﯽ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ
    ﮐﺮ ﻟﯿﺘﺎ ﮨﮯ ﺗﻮ ﺍﮐﺜﺮ ﺍ ﺱ ﮐﺎ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﺟﺬﺑﺎﺗﯽ ﺳﻄﺢ
    ﭘﺮ ﻧﮩﯿﮟ ﮨُﻮﺍ ﮨﻮﺗﺎ۔ ﯾﮩﯽ ﺑﺎﺕ ﺍﻣﯿﺠﺮﯼ ﭘﺮ ﺻﺎﺩﻕ ﺁﺗﯽ
    ﮨﮯ۔ ﺍﮔﺮﭼﮧ ﯾﮧ ﺍﯾﮏ ﺧﻮﺑﯽ ﮨﮯ ﻣﮕﺮ ﮨﻤﺎﺭﮮ ﺑﻌﺾ
    ﺷﻌﺮﺍ ﻣﺤﺾ ﺍﻣﯿﺠﺴﭧ ﮨﻮﺗﮯﮨﻨﮟ ﺍﻭﺭ ﺍﻧﮩﯿﮟ ﺍﺗﻨﺎﺑﮭﯽ
    ﻋﻠﻢ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﺎ ﮐﮧ ﺍﻥ ﮐﯽ ﺑﯿﺸﺘﺮ ﺍﻣﯿﺠﺰ ﭘﮩﻠﮯ ﺑﮭﯽ
    ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﮨﻮﺗﯽ ﺁﺋﯽ ﮨﯿﮟ۔ ﺟﺪﺕ ﺩﺭ ﺍﺻﻞ ﻣﻮﺿﻮﻋﺎﺕ
    ﺑﺪﻟﻨﮯ ﮐﺎ ﻧﺎﻡ ﮨﮯ ﻟﯿﮑﻦ ﭼﻮﻧﮑﮧ ﮨﻤﯿﺸﮧ ﻧﺌﮯ
    ﻣﻮﺿﻮﻋﺎﺕ
    ﮐﯽ ﺗﻼﺵ ﻣﻤﮑﻦ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﻮﺗﯽ ﺗﻮ ﮨﻢ ﯾﮧ ﮐﺎﻡ ﻧﺌﮯ
    ﻋﻼﻣﺘﯽ ﻧﻈﺎﻡ ﮐﯽ ﺩﺭﯾﺎﻓﺖ ﺳﮯ ﻟﮯ ﺳﮑﺘﮯ ﮨﯿﮟ ، ﯾﮧ
    ﺑﮭﯽ ﺁﺳﺎﻥ ﮐﺎﻡ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﮯ ﻣﮕﺮ ﺁﺧﺮ ﮐﮩﯿﮟ ﻧﮧ ﮐﮩﯿﮟ
    ﺳﮯ ﺗﻮ ﮐﻮ ﺷﺶ ﺷﺮﻭﻉ ﮐﺮﻧﯽ ﮨﯽ ﭘﮍﮮ ﮔﯽ۔ ﺍﺱ
    ﺳﻠﺴﻠﮯ ﻣﯿﮟ ﻇﻔﺮ ﺍﻗﺒﺎﻝ ﮐﯽ ﻣﺜﺎﻝ ﺳﺐ ﮐﮯ ﺳﺎﻣﻨﮯ
    ﮨﮯ، ﺍﻧﮩﻮﮞ ﻧﮯ ﻏﺰﻝ ﮐﯽ ﺣﯿﺎﺕِ ﻧﻮ ﮐﮯ ﻟﺌﮯ ﺑﯿﺮﺋﯿﺮ
    ﺗﻮﮌﻧﮯ ﮐﯽ ﺗﺪﺑﯿﺮ ﮐﯽ ، ﺍﮔﺮ ﭼﮧ ﺍﻥ ﮐﮯ ﺑﻌﺾ
    ﺗﺠﺮﺑﺎﺕ ﺷﺮﻭﻉ ﻣﯿﮟ ﺑﮩﺖ ﺑﮭﻮﻧﮉﮮ ﺍﻭﺭ ﻋﺠﯿﺐ ﻟﮕﺘﮯ
    ﺗﮭﮯ ﻣﮕﺮ ﺁﮨﺴﺘﮧ ﺁﮨﺴﺘﮧ ﺍﻥ ﮐﯽ ﮐﭽﮫ ﻟﺴﺎﻧﯽ
    ﺗﺸﮑﯿﻼﺕ ، ﮐﺌﯽ ﻓﮑﺮﯼ ﺗﺎﻭﯾﻼﺕ ﺍﻭﺭﺑﻌﺾ ﺗﻨﻘﯿﺪﯼ
    ﻧﻈﺮﯾﺎﺕ ﮐﻮ ﺑﮭﯽ ﻗﺒﻮﻟﯿﺖ ﺣﺎﺻﻞ ﮨﻮ ﺭﮨﯽ ﮨﮯ ۔‘‘
        
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    12,176
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    محمد خلیل الرحمٰن بھائی۔ آپ نے اچھا سلسلہ شروع کیا ہے۔ محمد اظہر نذیر کی شاعری خوبصورت ہے۔ اور جو انھوں نے لِکھا وہ اور بھی زیادہ خوبصورت۔ :applause: اِس سے محسوس ہو رہا ہے کہ وہ نثر بھی اچھی لکھ سکتے ہیں۔:waiting:
    عاجزی و انکساری۔۔۔۔اُستاد کا ادب۔ماشاءاللہ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  15. محمد اظہر نذیر

    محمد اظہر نذیر محفلین

    مراسلے:
    1,818
    جھنڈا:
    Qatar
    موڈ:
    Angelic
    نثری کاوشیں بھی ارسال کر چکا ہوں جی :warzish: اگر فرصت ملے تو ایک نظر :chill:
    http://www.urduweb.org/mehfil/threads/بادل-دھوپ-میں-جلتا-رہا.61345/
    http://www.urduweb.org/mehfil/threads/دھت-ترے-کی-by-azharm.61952/
    http://www.urduweb.org/mehfil/threads/اُس-کے-جوتوں-میں.63945/
    http://www.urduweb.org/mehfil/threads/ادھوری-دانش-اظہر-م-کے-قلم-سے.64634/
    http://www.urduweb.org/mehfil/threads/کونٹریکٹ،-اظہر-م-کے-قلم-سے.65107/
    ابھی اتنے ہی کافی نا :embarrassed1:
     
  16. جاسمن

    جاسمن مدیر

    مراسلے:
    12,176
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Fine
    محمداظہر نذیر بھائی ! اِنشاءاللہ ضرور پڑھوں گی۔ آپ کے اِنٹرویو سے لگتا ہے (اور اِنشاءاللہ ایسا ہی ہو گا) کہ آپ میں فخر و بڑائی کی بجائے عاجزی و اِنکساری کی خوبصورت (آجکل معدوم ہوتی ہوئی )صفت پائی جاتی ہے۔ مہربانی فرما کر(پلیز کا اردو ترجمہ ذرا طنزیہ محسوس ہوتا ہے، لیکن میں اِس لفظ کو مثبت اِستعمال کرتی ہوں) اگر اپنے دستخط پر نظرِ ثانی کر لیں تو کیا ہی بات ہے۔ یہ عادت بعینہٖ مُجھ میں پائی جاتی تھی۔ اور میں ذرا سی بھی اِس طرح کی حرکت کروں، اللہ فوراً مُجھے سزا دیتا ہے۔ آپ کو کہہ رہی ہوں اور اللہ سے شرمندہ ہو رہی ہوں کہ یہ عادت ابھی تک مکمل طور پہ ختم نہیں ہو سکی۔ اللہ ہمیں اپنی نظروں میں چھوٹا اور دُوسروں کی نظر میں بڑا بنائے۔ آمین!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  17. محمد اظہر نذیر

    محمد اظہر نذیر محفلین

    مراسلے:
    1,818
    جھنڈا:
    Qatar
    موڈ:
    Angelic
    جی ابھی لیجئے
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1

اس صفحے کی تشہیر