1. اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں فراخدلانہ تعاون پر احباب کا بے حد شکریہ نیز ہدف کی تکمیل پر مبارکباد۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    $500.00
    اعلان ختم کریں

متفرق تُرکی ابیات و اشعار

حسان خان نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏جولائی 26, 2017

  1. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    عُثمانی شاعر «شیخ غالب» کی ایک تُرکی بیت میں «مُلکِ کشمیر» کا ذِکرِ خَیر مُلاحظہ کیجیے:

    فِکر سبزانِ پری‌صُورت‌له پُردۆر سینه‌میز
    رونُمادېر کِشوَرِ کشمیردن آیینه‌میز

    (شیخ غالب)

    ہمارا سینہ پری‌صُورت سبز (گندُم‌گوں یا تر و تازہ) زیباؤں کے تماشا و نظارہ کی فِکر سے پُر ہے۔۔۔۔ ہمارا آئینہ مُلکِ کشمیر سے (کا) چہرہ دِکھاتا ہے۔
    (شاعر نے خود کے سینے کو آئینۂ کشمیرنُما سے تشبیہ دی ہے۔)

    Fikr-i sebzân-ı perî-sûretle pürdür sînemiz
    Rû-nümâdır kişver-i Keşmîrden âyînemiz
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    فارسی-تُرکی شعری دُنیا میں شہرِ «اِصفہان» اپنے بہترین سُرمے کی وجہ سے مشہور رہا ہے۔ سُرمہ تقویتِ بینائی کی غرَض سے استعمال ہوتا آیا ہے، اور اِس کی چشمِ سیاہ کے ساتھ بھی مُناسبت ہے۔ شاید اِسی وجہ سے ایک عُثمانی-بوسنیائی شاعر «بۏسنالې ثابِت» نے اپنے ایک تُرکی مصرع میں معشوقِ خود کی چشمِ سیاہ کو «اِصفہانی» پُکارا ہے:

    چشمِ سیاهې‌نوڭ روِشی اِصفهان‌لې‌دور
    (بۏسنالې ثابِت)


    اُس کی چشمِ سیاہ کی روِش اِصفہانی ہے

    Çeşm-i siyâhınuñ revişi Isfahânlıdur
    (Bosnalı Sâbit)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    زبانِ فارسی تو خَیر «کشمیر» اور «کشمیریوں» کی اپنی زبان تھی، لہٰذا اگر کشمیر کے خُوب‌رُو «سیاه‌چشمانِ کشمیری» فارسی شاعروں کے دل کھینچتے آئے ہیں تو یہ کوئی تعجُّب کی چیز نہیں ہے۔ جالبِ توجُّہ چیز شاید یہ ہے کہ شاعرانِ تُرک‌زبان بھی «سیاه‌چشمانِ کشمیری» کے دِل‌باختہ و مفتون نظر آتے ہیں۔ دیارِ آذربائجان کے ایک تُرکی شاعر «نعمت‌الله کِشوَری» پانچ صدیوں قبل زیبایانِ کشمیری کی سِتائش میں کہتے ہیں:

    وطن‌دین ای دریغا کیم منی آواره قېلدې‌لار
    سیه‌چشمانِ کشمیری گُل‌اندامانِ قِپچاقی

    (کِشوَری)

    اے دریغا! کہ «سیاہ‌چشمانِ کشمیری» اور «گُل‌اندامانِ قِپچاقی» نے مجھ کو وطن سے آوارہ کر دیا!

    Vatandın ey dirîgâ kim meni âvâre kıldılar
    Siyeh-çeşmân-ı Keşmîrî gül-endâmân-ı Kıpçakî

    (Kişverî)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    بعض اوقات تُرکی عامّہ‌پسند نغمے بھی کوئی اُمیدافزا پیغام دے جاتے ہیں۔ مجھ کو ایک تُرکی نغمہ بِسیار پسند ہے، اور اُس نغمے کی دو سطریں کئی روز سے میری زبانوں پر ہیں جو ایسے ہی ایک رجائیت‌پسندانہ پیغام پر مُشتَمِل ہیں:

    قۏرقمام، قارا گۆن قارارېپ قالماز
    بیر یۏلونو بولوروز، گۆزه‌ل اینجه


    میں نہیں ڈرتی، تاریک روز [ہمیشہ] تاریک‌شُدہ نہ رہے گا
    ہم [بِالآخر] اِک راہ پا لیں گے، خُوب و نازُک۔۔۔

    Korkmam, kara gün kararıp kalmaz
    Bir yolunu buluruz, güzel ince


    بعد میں معلوم ہوا کہ «قارا گۆن قارارېپ قالماز» (تاریک روز، تاریک‌شُدہ نہیں رہتا/نہ رہے گا) ایک تُرکی ضرب‌المثَل ہے، اور یہ اِس مفہوم میں استعمال ہوتی ہے کہ: اِنسان کا پُررنج زمانہ دوام نہیں کرتا اور دائماً نہیں رہتا، بلکہ اُس کے عقَب میں پُرشادمانی روز بھی آ جاتے ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    (مصرع)
    "قېزېل‌دان اۏلسا دا قه‌فه‌س، زیندان‌دېر"
    (یحییٰ شَیدا)

    قفَس خواہ زر سے [بنا ہوا] ہو، تب بھی وہ زِندان ہے

    Qızıldan olsa da qəfəs, zindandır

    (Yəhya Şeyda)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  6. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    عئشق اۏلسون آزادلېق سئوه‌ن اینسان‌لارا من‌دن
    عئشق اۏلسون اۏ کس‌لر کی، دیفاع ائتدی وطه‌ن‌دن

    (یحییٰ شَیدا)

    آزادی سے محبّت کرنے والے اِنسانوں پر میری طرف سے آفرین ہو!
    اُن اشخاص پر آفرین ہو کہ جِنہوں نے وطن کا دِفاع کیا!

    Eşq olsun azadlıq sevən insanlara məndən
    Eşq olsun o kəslər ki, difa etdi vətəndən

    (Yəhya Şeyda)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  7. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    ایرانی آذربائجانی شاعر «یحییٰ شَیدا» نے مندجۂ ذیل تُرکی ابیات «صدّام حُسین» کو مُخاطَب کر کے اُس وقت کہی تھیں جب «صدّام» نے اسّی کے عشرے میں مملکتِ ایران پر یورِش کی تھی اور یہ دو ابیات شاعر کی ایک تُرکی نظم «صدّامېن تحمیلی جنگی» (صدّام کی تحمیل‌کردہ جنگ) سے مأخوذ ہیں۔ لیکن میں اِن ابیات کو «کشمیریوں» کی آواز بنتے ہوئے اور «کشمیریوں» کے سِتم‌گار دُشمنوں کو مُخاطَب کر کے «کشمیریوں» کی طرف سے کہنا چاہتا ہوں۔۔۔ «کشمیریوں» کی آواز دو ہفتوں سے جبراً خاموش ہے، لہٰذا مُحِبّان و طرف‌دارانِ مِلّتِ «کشمیری» ہی کو «کشمیریوں» کی آواز بننا پڑے گا۔

    ال چک وطه‌نیم‌دن، ایتیل ائی دۆشمه‌نِ غددار
    ائی نیفره‌ته شایان، ابه‌دی لعنه گیریفتار
    چک قان‌لې الین تۏرپاغېمېزدان، داغېمېزدان
    ائی تۆلکۆصیفه‌ت، چېخ چؤله، شئر اۏیلاغېمېزدان
    (یحییٰ شَیدا)


    میرے وطن سے دست کھینچ لو! دفع ہو جاؤ! اے دُشمنِ بے‌رحم و جفاکار!۔۔۔۔۔ اے شایانِ نفرت! [اور] اے ابدی لعنت میں گِرِفتار!۔۔۔۔ اپنے دستِ خُونیں کو ہماری خاک و سرزمین سے اور ہمارے کوہ (کوہسار) سے [دُور] کھینچ لو!۔۔۔ اے [دُشمنِ] رُوباہ‌صِفَت، ہماری شیروں کی منزل‌گاہ سے خارِج ہو کر [اپنے] بیابان کی طرف چلے جاؤ!
    × رُوباہ = لومڑی

    Əl çək vətənimdən, itil ey düşməni-qəddar
    Ey nifrətə şayan, əbədi lə'nə giriftar
    Çək qanlı əlin torpağımızdan, dağımızdan
    Ey tülküsifət, çıx çölə, şer oylağımızdan
    (Yəhya Şeyda)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  8. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    مغربی تُرکی میں «خُدا» کو «تانرې» کہتے ہیں، جو آذربائجانی گُفتاری زبانچوں میں «تارې» کی شکل میں بھی رائج ہے۔ دیارِ آذربائجان میں جب «سنی تانرې/تارې!» (تم کو خُدا!) بولا جاتا ہے تو اِس کا مفہوم «تم کو خُدا کی قسم!» ہوتا ہے، اور یہ فارسی کے «تو را خُدا!» کا لفظی ترجمہ ہے، جو ایرانی فارسی میں اِسی مفہوم کے لیے استعمال ہوتا ہے۔ یہ قَسمیہ عِبارت میں نے تا حال تُرکیہ کی تُرکی میں استعمال ہوتے نہیں دیکھی، اور یہ آذربائجان سے مخصوص ہے۔

    =============

    ایرانی آذربائجانی شاعر «شهریار تبریزی» کی ایک تُرکی بیت دیکھیے:

    قۏرخوم بودو یار گلمه‌یه بیردن آچېلا صۆبح
    باغرېم یارېلار صۆبحۆم آچېلما سنی تارې!
    (شهریار تبریزی)


    مجھے خَوف یہ ہے کہ یار نہیں آئے گا اور ناگہاں صُبح طُلوع ہو جائے گی
    میرا جِگر [و قلب] پھٹ جائے گا۔۔۔ اے میری صُبح! طُلوع مت ہوؤ! تم کو خُدا کی قسم!

    Qorxum budu yar gəlməyə, birdən açıla sübh,
    Bağrım yarılar, sübhüm, açılma səni Tarı!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  9. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    گؤریجه‌ک مسجِد‌ده اغیارا محبّت قېلدوغوڭ
    خونِ اشکِ چشم ایله عاشِق‌لار آلدې آب‌دست

    (مۏستارلې حسَن ضِیائی)

    جب عاشقوں نے مسجد میں تم کو اغیار کے ساتھ محبّت کرتے دیکھا تو اُنہوں نے خُونِ اشکِ چشم کے ساتھ وُضو کیا۔

    Göricek mescidde agyâra mahabbet kılduguñ
    Hûn-ı eşk-i çeşm ile 'âşıklar aldı âb-dest

    (Mostarlı Hasan Ziyâ'î)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  10. اریب آغا

    اریب آغا محفلین

    مراسلے:
    885
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    گُلسِتانِ کربلاېی ذِکرئدیپ حِلمی دده
    بۆلبؤلِ شئیدا گیبی نالان گلیر نالان گیدر
    (حِلمی دده)

    حلمی ددہ گلستانِ کربلا کا ذکر کرکے بلبلِ شیدا کی مانند نالہ‌کناں آتا ہے، نالہ‌کناں جاتا ہے۔

    Gülsitân-ı Kərbəlâ'yı zikrədip Hilmî Dədə
    Bülbül-i şeydâ gibi nâlân gəlir nâlân gidər

    (Hilmî Dədə)

    حسان خان آپ سے گزارش ہے کہ ترجمہ اور املا دونوں میں درستگی کردیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    (رباعی)
    مَی تَرکی‌نی قیلغه‌لی اېرورمېن غم‌لیق
    بار تِیره کۉنگول‌گه هر زمان درهم‌لیق
    غم بیرله فسُرده‌لیق هلاک اېتتی مېنی
    مَی بیرله اېمیش شادلیغ و خُرّم‌لیق

    (ظهیرالدین محمد بابُر)

    جب سے میں نے مَے کو ترک کیا ہے میں مغموم ہوں۔۔۔ [میرے] تِیرہ و تاریک دل میں ہر وقت درہمی و برہمی [در آتی رہتی] ہے۔۔۔ غم و افسُردگی نے مجھ کو ہلاک کر دیا۔۔۔ [معلوم ہوتا ہے کہ] شادمانی و خُرّمی مَے کے ساتھ/ذریعے تھی (یا مَے کے ساتھ شادمانی و خُرّمی تھی)۔۔۔

    May tarkini qilg'ali erurmen g'amliq,
    Bor tiyra ko'ngulga har zamon darhamliq.
    G'am birla fasurdaliq halok etti meni,
    May birla emish shodlig'u xurramliq.
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  12. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    (رباعی)
    مَی تَرکی‌نی قیلغه‌لی پریشان‌دورمېن
    بیلمان قیلور ایشیم‌نی و حیران‌دورمېن
    اېل برچه پشیمان بۉلور و توبه قیلور
    مېن توبه قیلیب‌مېن و پشیمان‌دورمېن

    (ظهیرالدین محمد بابُر)

    جب سے میں نے مَے کو ترک کیا ہے میں پریشان ہوں۔۔۔ میں نہیں جانتا کہ میں کیا کر رہا ہوں اور میں حیران [و سرگرداں] ہوں۔۔۔ تمام مردُم [اوّلاً] پشیمان ہوتے ہیں اور [پِھر] توبہ کرتے ہیں۔۔ [جبکہ] میں نے توبہ کر لی ہے اور [اب] میں پشیمان ہوں۔۔۔۔

    May tarkini qilg'ali parishondurmen,
    Bilmon qilur ishimniyu hayrondurmen.
    El barcha pushaymon bo'luru tavba qilur,
    Men tavba qilibmenu pushaymondurmen.
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  13. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    فارسی-تُرکی شاعری میں محبوب کی چشمِ بے‌رحم کو کافر و بے‌ایمان سمجھا جاتا ہے، اور یہ بھی ایک ضرب‌المثَل (یا شاید حدیثِ نبَوی) ہے کہ "جس شخص میں کسی دیگر شخص کے لیے رحم نہ ہو، وہ ایمان نہیں رکھتا"۔۔۔۔ مشرقی تُرکی شاعر «مولانا گدایی» نے ایک بیت میں اِن دونوں چیزوں کی جانب اشارہ کرتے ہوئے یہ مضمون باندھا ہے:

    کۉزلرینگ‌نینگ فنّی‌دین بیلدیم چین اېرمیش بو مثَل
    هر کیشی‌نینگ کیم کیشی‌گه رحمی یۉق، ایمانی یۉق
    (مولانا گدایی)


    [اے محبوب!] میں تمہاری چشموں کے فنّ و حِیلے سے جان گیا کہ یہ ضربُ‌المثَل ظاہراً حقیقت تھی: جس شخص میں [کسی دیگر] شخص کے لیے رحم نہیں ہے، وہ ایمان نہیں رکھتا (وہ بے‌ایمان ہے)۔۔۔۔

    Ko'zlaringning fannidin bildim chin ermish bu masal
    Har kishining kim kishiga rahmi yo'q, imoni yo'q
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  14. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    تُرکِیَوی شاعر «جمال ثُریّا» کی ایک تُرکی نثری نظم «فۏتۏغراف» (فوٹوگراف) کا اُردو ترجمہ:

    (تصویر)

    ایستگاہ پر تین اشخاص
    مرد، عورت اور بچّہ

    مرد کے دست اپنی جیبوں میں
    عورت نے بچّے کا دست پکڑا ہوا

    مرد غم‌گین
    غم‌گین نغموں کی طرح غم‌گین

    عورت زیبا
    زیبا یادوں کی طرح زیبا

    بچّہ
    زیبا یادوں کی طرح غم‌گین
    غم‌گین نغموں کی طرح زیبا

    (جمال ثُریّا)

    × اِیستگاہ = اسٹیشن

    =============

    تُرکی متن:

    (FOTOĞRAF)

    Durakta üç kişi
    Adam kadın ve çocuk

    Adamın elleri ceplerinde
    Kadın çocuğun elini tutmuş

    Adam hüzünlü
    Hüzünlü şarkılar gibi hüzünlü

    Kadın güzel
    Güzel anılar gibi güzel

    Çocuk
    Güzel anılar gibi hüzünlü
    Hüzünlü şarkılar gibi güzel

    (Cemal Süreya)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  15. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    پادشاہِ غازی «ظهیرالدین محمد بابُر» کی مندرجۂ بالا فارسی رُباعی کا منظوم مشرقی تُرکی ترجمہ:

    قاصد مېن‌گه كېلتوردی سلامینگ، ای دۉست
    خوش قیلدی دِلیم‌نی خوش كلامینگ، ای دۉست
    عالَم‌ده سلام نامی تا بار، اۉلسون،
    جِسمینگ ساغ و شُهره یخشی نامینگ، ای دۉست

    (مترجم: شفیقه یارقین)

    قاصد مجھ تک تمہارا سلام لایا، اے دوست!۔۔۔ تمہارے کلامِ خوش نے میرے دل کو خوش کر دیا، اے دوست!۔۔۔ عالَم میں جب تک سلام کا نام موجود ہے، تمہارا جِسم سلامت اور تمہارا نامِ خُوب مشہور رہے، اے دوست!

    Qosid menga kelturdi saloming, ey do'st
    Xush qildi dilimni xush kaloming, ey do'st
    Olamda salom nomi to bor, o'lsun
    Jisming sog'u shuhra yaxshi noming, ey do'st
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  16. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    تُرکِیہ کے ایک تُرکی نغمے کے کلِماتِ نغمہ مجھ کو پسند آئے۔۔۔

    ===============

    لے لو، یہ دُنیا تم لے لو، تمہاری ہوئی!
    مجھے ہرگز کوئی خواہش نہیں، یہ ہمہ دُنیا تمہاری ہو!
    لیکن میری تم سے ایک آخری آرزو ہے:
    اِس لعین و بدفطرت دُنیا میں تم اپنا تمام مال و منال لے لو
    سب کا سب لے لو!

    [لیکن]
    مجھ کو میرے ساتھ چھوڑ دو
    مجھ کو میرے ساتھ۔۔۔ اِس جہنّم میں
    میری رُوح تم سے بِسیار دُور ہے
    میں تمہاری جنّت کے لیے اجنبی ہوں

    Al, bu dünya al senin olsun
    Benim hiç gözüm yok hepsi senin olsun
    Ama son bir dileğim var senden
    Şu gaybana dünyada varını yoğunu al
    Hepsini al da

    Beni benimle bırak
    Beni benimle bu cehennemde
    Ruhum senden çok uzak
    Yabancıyım senin cennetine
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  17. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    پادشاہِ غازی ‌«ظهیرالدین محمد بابُر» کی ایک تُرکی بیت:

    صبر و هوش و عقل و دینیم‌نی آلیب‌تور، نه‌یله‌یین
    سروقدّې، گُل‌رُخې، ریحان‌خطې، نسرین‌برې
    (ظهیرالدین محمد بابُر)


    ایک سرْوقد، گُل‌رُخ، رَیحان‌خط اور نسرین‌سینہ [معشوق] نے میرا صبر و ہوش و عقل و دین لے لیا ہے، مَیں کیا کروں؟!

    Sabru hushu aqlu dinimni olibtur, naylayin,
    Sarvqadde, gulruxe, rayhonxate, nasrinbare.
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  18. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    پادشاہِ غازی ‌«ظهیرالدین محمد بابُر» شراب سے توبہ کر لینے پر پشیمانی محسوس ہونے پر ایک تُرکی رُباعی میں کہتے ہیں:

    تا تَرکِ مناهی و شراب اېتمیش‌مېن
    نفسیم‌غه خُدای اوچون عذاب اېتمیش‌مېن
    توبه اېشیگی هنوز آچوق اېردی
    بو توبه‌ده بیر نیمه شِتاب اېتمیش‌مېن
    (ظهیرالدین محمد بابُر)


    جب سے میں نے نہی‌شُدہ حرام چیزوں اور شراب کو تَرک کر دیا ہے، میں نے اپنے نفْس کو خُدا کی خاطر عذاب [میں مُبتلا] کر دیا ہے۔۔۔ توبہ کا در ہنوز کُھلا ہوا تھا۔۔۔۔ [معلوم ہوتا ہے کہ] میں نے اِس توبہ میں ذرا سی جَلدی کر دی ہے۔۔۔۔

    To tarki manohiyu sharob etmishmen,
    Nafsimg'a Xudoy uchun azob etmishmen.
    Tavba eshigi hanuz ochuq erdi,
    Bu tavbada bir nima shitob etmishmen.
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  19. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    پادشاہِ غازی «ظهیرالدین محمد بابُر» کی اپنے احباب کے لیے ایک تُرکی دُعائیہ رُباعی:

    احباب‌قه قیلسه‌نگ گُذر، ای یېل، ناگاه
    اول جمع‌نی بو سۉزوم‌دین اېت‌گیل آگاه
    سیز کۉرگه‌ن‌دېک اېسان-سلامت‌تورمیز
    سیز داغی اېسان بۉلغاسیز، اِن‌شاء‌الله

    (ظهیرالدین محمد بابُر)

    اے باد! اگر احباب کی جانب [کبھی] تم ناگہاں گُذر کرو تو اُس گُروہ کو میرے اِس سُخن سے آگاہ کرنا: "آپ نے [ہم کو] جس طرح دیکھا تھا، ہم [اُسی طرح] تندُرُست و سلامت ہیں۔۔۔ [اُمید کرتا ہوں کہ] آپ بھی تندُرُست [و سلامت] ہوں گے، اِن شاء اللہ!"

    Ahbobqa qilsang guzar, ey yel, nogoh,
    Ul jam'ni bu so'zumdin etgil ogoh.
    Siz ko'rgandek eson-salomatturmiz,
    Siz dog'i eson bo'lg'osiz, inshoolloh!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  20. حسان خان

    حسان خان لائبریرین

    مراسلے:
    17,423
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    پادشاہِ غازی «ظهیرالدین محمد بابُر» نے اپنی اولاد کی دینی تربیت کی غرَض سے «مُبیِّن» ‌نامی ایک طویل تُرکی مثنوی لِکھی تھی جس کی پانچ کتابوں (بابوں) میں سُنّی اسلام کے پانچ ارکانِ دین کے مسائل حنفی فقہی مذہب کے مطابق اور سادہ زبان میں بیان کیے گئے تھے۔ اُس مثنوی میں سے نمونے کے طور پر «کتاب‌الصلات» کا ایک باب «قرائت مسایلی» (مسائلِ قرائت) دیکھیے جس میں نماز کے دوران سورۂ فاتحہ کے بعد کی قرائتِ قُرآن کے چند بُنیادی مسائل بیان کیے گئے ہیں۔:

    [قِرائت مسایلی]
    ینه بیر فرض بیل قِرائت‌تور
    بیل که قُرآن اۉقورغه بو آت‌تور
    فرض بۉلسه نماز بیل مونداق
    ایککی رکعت‌ته فرض‌دور اۉقوماق
    واجب و نفْل بیرله سُنّت‌ته
    فرض بیل‌گیل تمامِ رکعت‌ته
    گر بیر آیت اۉقوسه‌نگ اۉقو اوزون
    قیسقه آیت گر اۉلسه اوچ بۉلسون

    (ظهیرالدین بابُر)

    (مسائلِ قرائت)
    جان لو کہ [نماز کا] ایک دیگر فرض قِرائت ہے، [اور] جان لو کہ یہ نام (یعنی قِرائت) قُرآن کی خوانِش کو کہتے ہیں۔۔۔ اگر فرض نماز ہو تو یہ جان لو کہ خوانشِ قُرآن [ابتدائی] دو رکعات میں فرض ہے۔۔۔ [لیکن] واجب و نفل و سُنّت [نماز] میں [قُرآن کی قرائت کو] تمام رکعات میں فرض جانو۔۔۔ اگر تم [فقط] ایک آیت خوانو (پڑھو) تو [کوئی] طویل [آیت] خوانو (یعنی اگر تم رکعت میں فقط ایک آیت خواننا چاہتے ہو تو وہ کوئی طویل آیت ہونی لازم ہے)۔۔۔ [لیکن] اگر آیت کوتاہ ہو تو وہ [کم از کم] تین ہونی چاہییں!۔۔۔۔۔

    × خوانْنا (بر وزنِ جاننا) = پڑھنا

    [Qiroat Masoyili]
    Yana bir farz bil qiro'at-tur,
    Bil-ki Qur'on o'qurg'a bu ot-tur.
    Farz bo'lsa namoz bil mundoq,
    Ikki rak'atta farz-dur o'qumoq.
    Vojib-u nafl birla sunnatta,
    Farz bilgil tamom-i rak'atta.
    Gar bir oyat o'qusang o'qu uzun,
    Qisqa oyat gar o'lsa uch bo'lsun.

    (Zahiriddin Muhammad Bobur)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر