حکومت کا دیامیر بھاشا ڈیم کی تعمیر شروع کرنے کا اعلان

جاسم محمد نے 'آج کی خبر' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 11, 2020

  1. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,757
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    نقصان صرف جان لینا ہی تو نہیں ہوتا۔ گو میں انتہا پسند نہیں ہوں لیکن انھیں نقصان ضرور پہنچاؤں گا۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  2. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,443
    کپتان کچھ عرصہ قبل جنرل باجوہ سے یہ گلہ شکوہ بھی کر چکے ہیں کہ ان کو ٹیم اچھی نہیں ملی۔ جنرل صاحب بھی کہتے ہوں گے کس نخرے والے وزیر اعظم کو سلیکٹ کر لیا ہے
     
  3. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,757
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    یہاں پبلک کمپنی کے ملازمین نے سازش کی ہے۔۔۔ پکا۔
     
    • معلوماتی معلوماتی × 1
  4. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,443
    اوہ سوری یہ بتانا بھول گیا تھا کہ اس سکینڈل کے منظر عام پر آنے کے بعد کیا ہوا۔ ناروے پاکستان نہیں ہے جہاں مک مکا، ویلنگ ڈیلنگ کرکے سکینڈلز کو دبا دینا قومی روایات کا حصہ ہو۔
    حکومت نے پہلے اس سکینڈل کی انکوائری کروائی تاکہ ذمہ داروں کا تعین ہو سکے۔ انکوائری رپورٹ پبلک ہوئی اور بلدیہ کے صفائی ستھرائی ڈپارٹمنٹ جس نے نجی کمپنی کو کنٹریکٹ دیا تھا کو اس سکینڈل کا اصل ذمہ دار ٹھہرایا گیا۔ نیز نجی کمپنی کے مالک کو غیر قانونی بھرتیاں کرنے اور بلدیہ کو چونا لگانے پر قریبا دس کروڑ روپے جرمانہ بھی عائد کیا۔ یہی نہیں موصوف کے خلاف عدالت میں مقدمہ چلایا گیا اور امسال فروری میں ان کو سزا یافتہ مجرم ثابت کرکے جیل بھیج دیا گیا ہے۔ یہ سزا ان کرپٹ لوگوں کیلئے نشان عبرت ہے جو مستقبل میں اوپن بڈنگ پراسیس کو متاثر کرکے عوامی فلاح کے کاموں میں حکومت کو چونا لگانے کا خواب دیکھ رہے ہیں
    Jonny Enger dømt til fengsel: – Føler meg ikke som noen kriminell
     
    آخری تدوین: ‏مئی 14, 2020
  5. عبدالقیوم چوہدری

    عبدالقیوم چوہدری محفلین

    مراسلے:
    17,757
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Relaxed
    قصہ بیان کرتے ہوئے یہ جملے لکھنے کی قطعاً ضرورت نہیں تھی۔
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  6. آورکزئی

    آورکزئی محفلین

    مراسلے:
    1,285
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    اپ نے دو نام بتا دیے وہ بھی ایسے کہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ہاہاہاہا
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  7. آورکزئی

    آورکزئی محفلین

    مراسلے:
    1,285
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    یہی تو میں کہہ رہا ہوں کہ سب چور۔۔۔۔۔۔۔ چور چور۔۔۔ لیکن نیازی ان سب کو پیچھے چھوڑ گیا چوری میں۔۔۔۔۔۔۔۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • غیر متفق غیر متفق × 1
  8. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,443
    غیر منتخب لوگوں کے حکومت میں موجود ہونے پر جمہوری لوگ اعتراض اٹھاتے ہیں کہ یہ اس لئے غلط ہے کیونکہ ایسے لگ عوام کو جواب دہ نہیں۔ کیا یہی جمہوری لوگ بتا سکتے ہیں کہ عوام کے ووٹوں سے منتخب ہونے والے سابقہ وزیر اعظم نواز شریف، وزیر خزانہ اسحاق ڈار اب عوام کو جوابدہ ہونے کی بجائے ملک سے مفرور کیوں ہیں؟
     
  9. آورکزئی

    آورکزئی محفلین

    مراسلے:
    1,285
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    کیوں مفرور کا جواب یہ کہ نیازی نے ایک ایسا بازار گرم کر رکھا ہے کہ انصاف کی دھجیاں ہی اڑ گئیں ہیں۔۔ کسی کو کسی بھی ادارے پر بھروسہ نہیں۔۔
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • غیر متفق غیر متفق × 1
  10. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,443
    یعنی جب ان جمہوری مفروروں کے اسٹیبلشمنٹ سے معاملات دوبارہ طے ہوجائیں گے، این آر او وغیرہ مل جائے گا تو سب جعلی بیمار صحت یاب ہو کر ملک واپس لوٹ آئیں گے۔ بات تو پھر وہی ہے کہ یہ جمہوریے بھی عوام کو نہیں بلکہ اسٹیبلشمنٹ کو جوابدہ ہیں جیسا کہ آجکل حکومت میں بھرتی ہونے والے غیر منتخب وزرا اور مشیر
     
    • دوستانہ دوستانہ × 1
  11. آورکزئی

    آورکزئی محفلین

    مراسلے:
    1,285
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    اسی نظام کو ختم کرنے کے لیے اپ لوگوں نے نیازی کو ووٹ دیا تھا نا ؟؟ اب جو وہ خود اسٹبلشمنٹ کے ہتھوں چھڈ گیا ہے تو کسی اور پہ الزام کیوں۔۔۔؟؟
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • نا پسندیدہ نا پسندیدہ × 1
  12. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,443
    عمران خان کی لڑائی اسٹیبلشمنٹ کے خلاف کبھی نہیں تھی۔ ووٹ کو عزت دو کا نعرہ ن لیگ نے لگایا تھا۔ بعد میں سب نے دیکھا کہ کیسے انہوں نے جنرل باجوہ کو عمران خان سے بھی زیادہ ووٹ ڈال کر ایکسٹینشن دی
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  13. آورکزئی

    آورکزئی محفلین

    مراسلے:
    1,285
    جھنڈا:
    UnitedArabEmirates
    یعنی اب نیازی کے پرانے کلپس چلانے پڑیں گے۔۔۔۔۔۔۔ ہاہاہاہا
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • نا پسندیدہ نا پسندیدہ × 1
  14. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,443
    ۲۰۱۸ الیکشن سے قبل اگر نیازی نے کوئی اسٹیبلشمنٹ مخالف بات کی ہو تو چلا دیں۔ مشرف دور تک وہ ان کے خلاف تھا
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
  15. محمد خلیل الرحمٰن

    محمد خلیل الرحمٰن مدیر

    مراسلے:
    9,204
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Festive
    یو ٹرن تیرا ہی آسرا
     
    • پر مزاح پر مزاح × 1
    • نا پسندیدہ نا پسندیدہ × 1
  16. عبداللہ محمد

    عبداللہ محمد مدیر

    مراسلے:
    10,341
    جھنڈا:
    Pakistan
    پس ثابت ہوا اوپن بڈنگ ہی افضل آپشن ہے۔

     
    • متفق متفق × 1
  17. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,443
    بے شک البتہ سب سے کم بڈ کرنے والا ہمیشہ افضل ترین آپشن نہیں ہوتا۔ یہ بات مشاہدات سے ثابت ہو چکی ہے۔ کنٹریکٹ دینے والے کو سب سے کم بڈ کرنے والی کمپنی کی اچھی طرح جانچ پڑتال کرنی چاہئے کہ دیگر کے مقابلہ میں اتنی کم بڈنگ کی کیا وجوہات ہیں۔ کیا اس کے پیچھے واقعی کمپنی کی قابلیت و مہارات ہے یا کوئی غیر قانونی کام کارفرما ہے۔ اور اگر اس معاملہ میں شکوک و شبہات ہوں تو پھر کم ترین بڈ والی کمپنی کی بجائے اس سے اوپر والی کمپنیوں کو دیکھنا چاہئے۔
     
    آخری تدوین: ‏مئی 14, 2020
  18. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,443
    پی پی پی کمیونسٹوں کا روایتی ڈیم کے خلاف تحریک کا اعلان
     
  19. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,443
    دو دن قبل بھارتیوں کو اس ڈیم سے مرچیں لگ گئی تھیں آج پی پی پی والوں کو لگی ہوئی ہیں۔ یہ کیا چکر ہے؟
    India objects to Pak-China decision to construct dam
     
  20. جاسم محمد

    جاسم محمد محفلین

    مراسلے:
    20,443
    مہمند ڈیم 2025 اور بھاشا ڈیم 2028 میں مکمل ہو جائیں گے، چیئرمین واپڈا
    ویب ڈیسک پير 1 جون 2020
    [​IMG]
    کیس کی سماعت 6 ماہ کیلئے ملتوی کردی گئی۔

    اسلام آباد: چیئرمین واپڈا (ریٹائرڈ) لیفٹیننٹ جنرل مزمل حسین کا کہنا ہے کہ مہمند ڈیم کے تینوں یونٹ جولائی 2025 میں مکمل ہو جائیں گے جب کہ بھاشا ڈیم جولائی 2028 میں مکمل ہوجائے گا۔

    سپریم کورٹ میں دیا میر بھاشا اور مہمند ڈیم کیس کی سماعت ہوئی جس میں چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ ڈیم میں کسی کے ساتھ کوئی ناانصافی نہیں ہوگی، ڈیم میں جو زمین استعمال ہو رہی ہے اس میں جو مسئلے ہیں انہیں حل کریں، مہند ڈیم میں عثمان خیل اور برہان خیل کی زمین کا مسئلہ چل رہا ہے۔

    جس پر واپڈا حکام نے جواب دیا کہ مہند ڈیم کی تعمیر کیلئے ٹھیکیدار نے اپنا کام شروع کر رکھا ہے، وہاں 32 گھرانے ہیں اور وہ زمین ابھی ہمیں درکار نہیں، پہلے مرحلے میں جو زمین چاہیے تھی وہ ہم حاصل کر چکے ہیں۔

    سپریم کورٹ نے بیرون ملک سے ڈیمز فنڈ میں آنے والی رقوم کی تفصیلات اسٹیٹ بینک سے طلب کرلی۔ اسٹیٹ بینک حکام نے عدالت کو بتایا کہ ڈیم فنڈ سٹاک ایکسچینج میں انوسٹ کیا جائے تو زیادہ منافعے کے ساتھ خطرہ بھی ہوگا، ڈیم فنڈز کا پیسہ جہاں انویسٹ کیا گیا وہاں نفع بھی ٹھیک ہے اور سکیورٹی بھی ہے۔

    عدالت نے کہا کہ کوئی پاکستانی ایسی جگہ سے پیسے بھیجنا چاہتا ہو جہاں پاکستانی بینک نہ ہو جس پر بینک حکام نے کہا کہ ڈیم فنڈ میں رقم جمع کرانے کے حوالے سے ایمبیسیز کو خط لکھ دیئے گئے ہیں۔ جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ خط لکھنے سے کیا ہوگا، کسی سے فون پر بات کریں، ایسی صورت میں متعلقہ سفارتخانوں کو رقوم کی پاکستان منتقلی کا پتہ ہونا چاہئے۔

    چیف جسٹس نے پوچھا کہ مہمند ڈیم پر تعمیر کی کیا صورتحال ہے، ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ مہمند ڈیم کی منظوری سی ڈی ڈیبلو پی کے پاس زیر التواء ہے جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ دیامیر بھاشا ڈیم کا کنٹریکٹ تو پہلے ہی دیا جا چکا ہے، بھاشا ڈیم کی تعمیر کب مکمل ہوگی۔ واپڈا کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ دیامیر بھاشا ڈیم پر کام شروع ہو چکا ہے اور مہمند ڈیم پر کام شیڈول کے مطابق جاری ہے۔

    چیئرمین واپڈا کا کہنا تھا کہ مہمند ڈیم کا پہلا یونٹ 2024 میں آپریشنل ہو جائے گا، مہمند ڈیم کے تینوں یونٹ جولائی 2025 میں مکمل ہو جائیں گے، بھاشا ڈیم جولائی 2028 میں مکمل ہوجائے گا۔ بعد ازاں کیس کی سماعت 6 ماہ کیلئے ملتوی کردی گئی۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر