1. گوگل کروم کے حالیہ نسخہ 53 میں محفل کا اردو ایڈیٹر بعض مقامات پر درست کام نہیں کر رہا۔ جب تک اس کا کوئی حل نہ دریافت کر لیا جائے، احباب گوگل کروم کے پچھلے نسخوں یا دیگر کسی براؤزر کا استعمال کر سکتے ہیں۔ اس بلائے نا گہانی سے ہم کافی پریشان ہیں اور جلدی ہی اس کا کوئی حل دریافت کرنے کی کوشش جاری ہے۔ تفصیل ملاحظہ فرمائیں!

    اعلان ختم کریں

نبی کریم صلہی اللہ والہ وسلم نے پانی کے لیے کیا فرمایا ہے

عاشق چانگ نے 'سیرتِ سرورِ کائنات' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏نومبر 5, 2008

  1. عاشق چانگ

    عاشق چانگ محفلین

    مراسلے:
    88
    بھائی آپ میں سے کسی کو معلوم ہے کے ہماری پیاری نبی کریم صلی اللہ والہ وسلم نے نیہارموں پانے پینے کے باری میں کیا فرمایہ اگر آپ کو معلوم ہے تو بتائیں شکریہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  2. عادل ـ سہیل

    عادل ـ سہیل محفلین

    مراسلے:
    465
    ::: حدیث میں نہار منہ پانی پینے کا ذَکر :::

    السلام علیکم و رحمۃ اللہ و برکاتہ
    بھائی ، اگر آپ اہپنے سوال کا مقصد بھی بیان کرتے تو جواب میں آپ کی طلب کرنا نسبتا آسان ہوتا ،
    بہر حال ، بھائی ، میں یہاں وہ روایات درج کرتا ہوں جن میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ و علی آلہ وسلم کے فرمان کے طور پر نہار مُنہ یعنی صبح صبح کچھ کھائے پیئے بغیر پانی پینے کا ذکر ہے ،
    (1) ابو سعید الخدری رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وعلی آلہ وسلم نے فرمایا ((( مَن شرِب الماءَ علیَ الرِیقِ اَنتقصَت قُوتہُ ::: جس نے نہار مُنہ پانی پیا اس کی طاقت کم ہو گئی ))) المعجم الأوسط للطبرانی/حدیث4646/جلد5/صفحہ52/مطبوعہ دار الحرمیں ، القاھرہ ، مصر
    (2) ابو ھریرہ رضی اللہ عنہ سے مروی ایک لمبی روایت میں بھی یہ ہی الفاظ ہیں ((( من شرب الماء على الريق انتقضت ::: جس نے نہار مُنہ پانی پیا اس کی طاقت کم ہو گئی ))) المعجم الأوسط للطبرانی/حدیث6557/جلد 6/صفحہ 334/مطبوعہ دار الحرمیں ، القاھرہ ، مصر
    (3) عبداللہ ابن عباس رضی اللہ عنہما سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ و علی آلہ وسلم نے اُن سے فرمایا ((( يا ابن عباس ألا أهدي لك هدية علمني جبريل للحفظ تكتب على طاس بزعفران فاتحة الكتاب والمعوذتين وسورة الإخلاص وسورة يس والواقعة والجمعة والملك ثم تصب عليه ماء زمزم أو ماء السماء ثم تشربه على الريق عند السحر مع ثلاثة مثاقيل من لبان:::اے ابن عباس کیا میں تمہیں تحفے میں وہ (چیز یا بات ) نہ دوں جو مجھے جبرئیل (علیہ السلام ) نے جادُو ہونے کی صورت میں بچاو کے لیے سکھائی ، تم کسی برتن پر زعفران کے ساتھ (سورت)الفاتحہ ، اور دونوں پناہ طلب کرنے والی (یعنی سورت الفلق اور سورت الناس )اور سورت الاِخلاص اور سورت یس اور (سورت) الواقعہ اور (سورت) الجُمعہ اور (سورت)المُلک لکھو اور پھر اس (لکھے ہوئے ) پر زمزم کا پانی یا بارچ کا پانی ڈالو اور اس میں تین مثقال دودھ ملا کر پہار مُنہ پی لو ))) الفردوس بمأثور الخطاب /حدیث8436/جلد5/صفحہ359 مطبوعہ دار الکتب العلمیہ ، بیروت ، لبنان
    (4) ابو ھریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ و علی آلہ وسلم نے فرمایا ((( شرب الماء على الريق يفقد الشحم ::: نہار مُنہ پانی پینے سے چربی ختم ہوتی ہے ))) الکامل فی ضعفاء الرجال / باب من اسمہ عاصم کا ترجمہ رقم 6/جلد 5/صفحہ237/مطبوعہ دار الفکر ، بیروت ، لبنان ،
    ::: ان مندرجہ بالا چار روایات کے عِلاوہ مجھے کتب حدیث میں کوئی اور ایسی روایت نہیں ملی جس میں """ نہار مُنہ پانی پینے """ کا کوئی منفی یا مُثبت ذِکر کیا گیا ہو ، اور یہ مندرجہ بالا چاروں کی چاروں روایات ناقابل اعتماد و حجت ہیں ، اور وہ یوں کہ :::
    ::: پہلی روایت کی سند میں دو روای (1) زید بن أسلم اور (2)اس کا بیٹا عبدالرحمان ، اور یہ دونوں بہت ہی کمزور درجہ کے روای ہیں ، جس کی طرف خود امام الطبرانی نے بھی اسی روایت کے بعد اشارہ کیا ہے ، اور امام الہیثمی نے بھی """ مجمع الزوائد /کتاب الطب /باب 5""" میں اشارہ کیا ہے ، اور اس روایت کے ایک اور راوی """ محمد بن مخلد الرعینیی """ کو کمزور قرار دیا ہے ،
    ::: دوسری روایت کی سند میں """عبدالاول المعلم ""نامی راوی کے بارے میں بھی خود امام الطبرانی نے ہی اس روایت کے بعد لکھا کہ """ یہ روایت صرف عبدالاول المعلم نے ہی بیان کی ہے """ اور اس راوی اور اس سے پہلے کے دو راویوں """ کی کمزوری کا اظہار امام الہیثمی نے """ مجمع الزوائد /کتاب الطب /باب 5""" میں کیا ،
    ::: تیسری روایت ایک ایسی کتاب میں ہے جس میں صرف ناقابل حجت ، ضعیف اور من گھڑت یعنی موضوع روایات کو جمع کیا گیا ، یعنی یہ تیسری روایت بھی ناقابل اعتماد و نا قابل حجت ہے ،
    ::: چوتھی روایت ، بھی ایک اسی قسم کی کتاب میں ہے ، جس میں کمزور اور جھوٹے راویوں کی رویات کا ذکر ہے اور اس روایت کو بھی ایک راوی """ عاصم بن سلیمان الکوزی """ کی وجہ سے اس کتاب میں شامل کیا گیا ہے ، کیونکہ اس راوی کو أئمہ حدیث نے جھوٹا ، روایات گھڑنے والا قرار دیا ہے ،
    ::::::::: تو حاصل کلام یہ ہوا کہ اس موضوع یعنی """ نہار منہ پانی پینے """ کے متعلق رسول اللہ صلی اللہ علیہ و علی آلہ وسلم کی طرف سے کسی فائدے یا نقصان کی کوئی خبر نہیں ملتی ،
    امید ہے ، ان شاء اللہ ، یہ معومات آپ کے سوال کے جواب میں کافی ہوں گی ، اگر مزید کوئی سوال یا الجھن ہو تو ضرور سامنے لائیے ، ان شاء اللہ سب ایک دوسرے کی مدد سے کچھ نہ کچھ مثبت علم حاصل کریں گے ، و السلام علیکم۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  3. ام نور العين

    ام نور العين معطل

    مراسلے:
    2,026
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    جزاكم اللہ خيرا ۔
     
  4. علی عامر

    علی عامر محفلین

    مراسلے:
    47
    جزاک اللہ۔ اللہ آپ کی توفیقات میں اضافہ فرمائے۔ آمین
     
  5. ابوسنان

    ابوسنان محفلین

    مراسلے:
    5
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cheerful
    جزاکم اللہ خیرا
     

اس صفحے کی تشہیر