Recent content by شاہد شاہنواز

  1. شاہد شاہنواز

    تمہارا شکریہ ہمدم ہمارا دل دکھانے کا

    نہیں بنتی ۔۔۔ شکریہ کرنا عام بول چال کی اردو کے خلاف ہے، شکریہ ادا کرتے ہیں ۔۔۔ ادا کے بغیر بات نہیں بنے گی۔۔ ادا ہو شکریہ کیسے تمہارا دل دکھانے کا ۔۔ یوں بھی کریں تو میرا پرانا اعتراض دور نہیں ہوتا کہ دل دکھانے کے بعد پر بنتا ہے، کا نہیں بنتا ۔۔۔ اس پر تھوڑا سا اور غور کر لیتے ہیں !
  2. شاہد شاہنواز

    تمہارا شکریہ ہمدم ہمارا دل دکھانے کا

    کافی عرصے بعد کوئی رائے دے رہا ہوں ، تو غلطی میں بھی کرسکتا ہوں ۔۔۔ آخری فیصلہ بہرحال شاعر کا ہی ہوگا ! تمہارا شکریہ ہمدم ہمارا دل دکھانے کا اکیلا چھوڑ کر ہم کو کسی کے ساتھ جانے کا ۔۔۔ تمہارا شکریہ کے بعد دل دکھانا چونکہ وجہ کے طور پر آیا تو دل دکھانے پر بنتا ہے، یہاں کا کا محل نہیں ہے ۔۔۔...
  3. شاہد شاہنواز

    مجھ کو ہے تیرے آنے کا انتظار اب تک---برائے اصلاح

    --------- آنکھوں کو صرف تیرا ہے انتظار اب تک تیرے بغیر دل ہے یہ بے قرار اب تک ۔۔کمزور ۔۔۔ بہتری کی گنجائش موجود ہے ۔۔ لاکھوں حسین دیکھے دنیا کی انجمن میں لیکن نہ پایا تجھ سا جانِ بہار اب تک درست ۔۔۔ اِس اجنبی جہاں میں ہمدم نہ کوئی ساتھی دل تھا کہ بس وہی...
  4. شاہد شاہنواز

    کسی کے پیار کو ہرگز بھلایا جا نہیں سکتا-----برائت اصلاح

    ------------- کسی کے پیار کو ہرگز بھلایا جا نہیں سکتا دیا روشن جو دل میں ہو بجھایا جا نہیں سکتا درست۔۔۔ ------------ نظر آ بھی کہیں جائیں ،نظر سے گر گئےہوں جا اُنہیں پھر سے تو آنکھوں پر بٹھایا جا نہیں سکتا ۔۔۔پہلا مصرع یا تو غلط ٹائپ ہوا، یا نظر سے گر گئے ہوں کے بعد جا کا مطلب فی الحال میری...
  5. شاہد شاہنواز

    مجھ کو ہے تیرے آنے کا انتظار اب تک---برائے اصلاح

    دنیا نے جو بنایا چاروں طرف ہمارے ٹُوٹا نہ ہم سے وہ بھی حصار اب تک ------------دوسرا مصرع وزن میں نہیں ۔۔۔ ٹوٹا نہ ہم سے ایسا کوئی حصار اب تک ۔۔ لیکن اب آپ پر منحصر ہے، یہ مصرع آپ کے جذبات کو درست طور پر بیان کرتا ہے یا نہیں۔۔۔ تیری وفا ملی ہے میری ہے خوش نصیبی ---------یا...
  6. شاہد شاہنواز

    مجھ کو ہے تیرے آنے کا انتظار اب تک---برائے اصلاح

    مجھ کو ہے تیرے آنے کا انتظار اب تک دل میں بسا ہے میرے تیرا ہی پیار اب تک ۔۔۔۔آنے کا تیرے مجھ کو ہے انتظار اب تک ۔۔۔ یا ایسی ہی کوئی صورت شاید بہتر لگے، ویسے جو آپ نے تحریر کیا، وہ غلط نہیں۔۔۔۔ گھوما جہان سارا تجھ سا کہیں نہ پایا دیکھے حسین چہرے ہیں بے شمار اب...
  7. شاہد شاہنواز

    جو بیٹے بیٹیوں کو اپنی غربت دے چکا میں : غزل برائے اصلاح

    اپنی غلطی تسلیم کرنا اعلیٰ ظرفی ہے ! آج کل میری یہ عادت چھوٹتی جارہی ہے! غلطی تسلیم کرنے کی بجائے دوسروں کے سر تھوپتا ہوں۔۔۔ خیر۔۔ آپ کو پریشان کرنا مقصود نہیں۔۔ اس سوال و جواب میں ہم شاعرِ محترم کی تخلیق پیچھے چھوڑدیں گے!
  8. شاہد شاہنواز

    زندگی ہے کیا پتا ، غم کے سوا ، کچھ بھی نہیں------برائے اصلاح

    صرف ایک رائے دے رہا ہوں، جس کی دعوت نہیں دی گئی، اس سے شاید شاعرِ محترم کے سامنے کچھ باتیں اور عیاں ہوسکیں۔۔۔ معاملہ برعکس بھی ہوسکتا ہے ۔۔ خیر، دیکھ لیجئے گا۔۔ غم ملے ہیں زندگی میں ، اور ملا ، کچھ بھی نہیں سوچئے گا آپ بھی ،اس کے سوا ، کچھ بھی نہیں ۔۔ غم کا م ملے سے...
  9. شاہد شاہنواز

    جو بیٹے بیٹیوں کو اپنی غربت دے چکا میں : غزل برائے اصلاح

    برا ماننا درست محاورہ ہے یا منانا؟ کیونکہ میں جس کسی کو برا منانے کا محاورہ استعمال کرتے دیکھتا ہوں، ٹوک دیتا ہوں۔۔۔ دوست احباب ایسی باتوں کا برا مان سکتے ہیں، اس لیے خاموش بھی رہنا پڑتا ہے ۔۔۔
  10. شاہد شاہنواز

    کسی گہرے نشے سے زندگانی لُوٹ جاتی ہیں: غزل برائے اصلاح

    مجھے تو مطلعے میں کوئی مسئلہ نہیں لگتا، ہو سکتا ہے محترم الف عین کو قافیے پر اعتراض ہو ۔۔۔ تمہارے کا ر اور روٹھنے کا ابتدائی حرف ر، آپس میں ٹکرا رہے ہیں۔۔۔ اگر تم روٹھتے ہو، چاہتیں بھی روٹھ جاتی ہیں ۔۔۔ یہاں جاتیں والا جو ن غنہ آپ نے استعمال کیا ہے، وہ صرف ایسی صورت میں درست ہے جب آگے ہیں یا ہے...
  11. شاہد شاہنواز

    جو بیٹے بیٹیوں کو اپنی غربت دے چکا میں : غزل برائے اصلاح

    جو بیٹے بیٹیوں کو اپنی غربت دے چکا میں تو سمجھو بانٹ کر ساری وراثت دے چکا میں ۔۔ درست ہے ۔۔ میں ناکردہ گناہوں پر بھی شرمندہ رہا ہوں یوں اپنے آپ کو کافی اذیت دے چکا میں ۔۔۔۔ یوں کی جگہ سو کیسا رہے گا؟ مجھے اب تو رہا کر دو محبت کے سحر سے محبت پھر نہیں ہو گی ، ضمانت دے چکا میں ۔۔۔۔ فطرت کے خلاف...
  12. شاہد شاہنواز

    تو سوچتا ہے : غزل برائے اصلاح

    میری منطق یہ ہے کہ لوگ ہمیں اردو زبان کا شاعر کہتے اور سمجھتے ہیں تو ہم اردو چھوڑ کر ہندی کی طرف جائیں کیوں؟ لیکن ہندی کے الفاظ استعمال کرنا میرے نزدیک عیب بھی نہیں ۔۔۔ تاہم اس کی صورت پھر ایسی ہو کہ پڑھنے والے کو بھی اچھا لگے، جیسے ظہور نظرؔ کی مثال ہمارے سامنے ہے: دور گگن پر ہنسنے والے نرمل...
  13. شاہد شاہنواز

    تو سوچتا ہے : غزل برائے اصلاح

    میری مادری زبان بھی سرائیکی ہے ۔۔۔
  14. شاہد شاہنواز

    تو سوچتا ہے : غزل برائے اصلاح

    جو اہلِ ثروت سے چاہتے ہو، نہیں ملےگا اگر ضرورت ہو جان کی، بس فقیر دیں گے نبی ﷺ کی مدحت بیان کرنے سے روزِ محشر بصد مسرت وہ تجھ کو اجرِ کثیر دیں گے ۔۔۔۔ متشکرم ۔۔۔ باقی جو اشعار انکے بارے آپ سے مزید ڈسکس کرنا چاہتا ہوں۔۔۔ ان میں مجھے تھوڑی بہت کنفیوژن ہے۔۔۔ آپ نے نیچے علمی مباحثے کی بات کی، میں...
  15. شاہد شاہنواز

    طرحی مشاعرہ : کشتی مری بھنور سے خدایا نکال دے

    اب تک کی آپ کی تخلیقات میں سب سے بہتر محسوس ہوئی ۔۔۔ روانی بھی خوب ہے ۔۔۔
Top