سعود عثمانی ہر شخص وہاں بِکنے کو تیار لگے تھا ۔ سعود عثمانی

چوہدری لیاقت علی نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏فروری 20, 2016

  1. چوہدری لیاقت علی

    چوہدری لیاقت علی محفلین

    مراسلے:
    305
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    ہر شخص وہاں بِکنے کو تیار لگے تھا
    وہ شہر سے بڑھ کر کوئی بازار لگے تھا
    ہر شام دبے پاؤں نکلتا تھا کہیں سے
    وہ رنج کوئی سایہء دیوار لگے تھا
    کیا طرفہ طلسمات تھا آئینہء دل بھی
    اِس پار لگا تھا مگر اُس پار لگے تھا
    اُس پیش میاں پیش نہ چلتی تھی کسو کی
    انکار کروں تھا تو وہ اقرار لگے تھا
    ویرانی کا مسکن ہے بلا شرکتِ غیرے
    وہ قصر جہاں شاہ کا دربار لگے تھا
    وہ عشق تھا آوازہء کہسار کی صورت
    اک بار لگا دو تو کئی بار لگے تھا

    سعود عثمانی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
    • زبردست زبردست × 1
  2. سارہ خان

    سارہ خان محفلین

    مراسلے:
    15,819
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cool
    عمدہ انتخاب۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
    • متفق متفق × 1
  3. باباجی

    باباجی محفلین

    مراسلے:
    3,844
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Curmudgeon
    واہ بہت خوب
    وہ عشق تھا آوازہء کہسار کی صورت ​
    اک بار لگا دو تو کئی بار لگے تھا​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  4. زلفی شاہ

    زلفی شاہ لائبریرین

    مراسلے:
    4,001
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Brooding
    بہت خوب
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر