1. احباب کو اردو ویب کے سالانہ اخراجات کی مد میں تعاون کی دعوت دی جاتی ہے۔ مزید تفصیلات ملاحظہ فرمائیں!

    ہدف: $500
    $453.00
    اعلان ختم کریں

میر کیا کہوں تم سے میں کہ کیا ہے عشق ۔ میر تقی میر

فرخ منظور نے 'پسندیدہ کلام' کی ذیل میں اس موضوع کا آغاز کیا، ‏مئی 7, 2010

  1. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,631
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    کیا کہوں تم سے میں کہ کیا ہے عشق
    جان کا روگ ہے بلا ہے عشق

    درد ہی خود ہے خود دوا ہے عشق
    شیخ کیا جانے تُو کہ کیا ہے عشق

    عشق ہی عشق ہے جہاں دیکھو
    سارے عالم میں بھر رہا ہے عشق

    عشق معشوق، عشق عاشق ہے
    یعنی اپنا ہی مبتلا ہے عشق

    عشق ہے طرز و طور، عشق کے تئیں
    کہیں بندہ کہیں خدا ہے عشق

    کون مقصد کو عشق بن پہنچا
    آرزو عشق و مدّعا ہے عشق

    کوئی خواہاں نہیں محبت کا
    تو کہے جنسِ ناروا ہے عشق

    تو نہ ہووے تو نظمِ کُل اٹھ جائے
    سچے ہیں شاعراں خدا ہے عشق

    میر جی زرد ہوتے جاتے ہیں
    کیا کہیں تُم نے بھی کیا ہے عشق؟

    (میر تقی میر)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 4
  2. کاشفی

    کاشفی محفلین

    مراسلے:
    15,371
    عمدہ و لاجواب سخنور صاحب۔۔ہمیشہ کی طرح خوبصورت انتخاب ۔۔شکریہ بہت بہت شریک محفل کرنے کے لیئے۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  3. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,631
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    انتخاب پسند فرمانے کے لئے بہت شکریہ کاشفی صاحب!
     
  4. ناعمہ عزیز

    ناعمہ عزیز لائبریرین

    مراسلے:
    23,230
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Where
    واہ بہت خوب:)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  5. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    25,144
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    واہ کیا خوبصورت غزل ہے، لاجواب۔ بہت شکریہ فرخ صاحب شیئر کرنے کیلیے۔


    ان دونوں اشعار کے پہلے مصرعوں میں کچھ گڑبڑ لگ رہی ہے، پلیز پھر دیکھ لیں۔

    یہ مطلعِ ثانی ہے سو اصولاً اسے شعر نمبر دو ہونا چاہیئے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  6. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,631
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    بہت شکریہ ناعمہ صاحبہ!
     
  7. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,631
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold

    بہت شکریہ وارث صاحب۔ ایک مصرع کا مسئلہ حل نہیں ہو سکا لیکن دوسرا درست کر دیا ہے اور مطلع ثانی کو بھی درست کر دیا ہے۔ یہ غزل فرزانہ صاحبہ نے رومن میں فیس بک پر پوسٹ کی تھی وہی سے یونی کوڈ میں بدل کر ٹائپ کی ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  8. محمد وارث

    محمد وارث لائبریرین

    مراسلے:
    25,144
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Depressed
    بہت شکریہ فرخ صاحب۔

    ممکن ہے 'تئیں' کا وزن صرف 'تیں' بھی بندھتا ہو، اور یہیں مجھے مسئلہ محسوس ہو رہا تھا۔ بہرحال ایک بار پھر شکریہ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  9. فاتح

    فاتح لائبریرین

    مراسلے:
    15,751
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Hungover
    فرخ صاحب! واہ واہ واہ۔ خوبصورت انتخاب پر آپ کا شکریہ!
    وارث صاحب! تئیں کے تئیں آپ کی دوسری رائے قریں از قیاس ہے کہ یہ ہر دو طرح مستعمل ہے۔ مثلا میر درد کا یہ شعر
    طریقِ‌ ذکر تو ہے دردؔ یاد عالم کو
    طرح بتائیے کچھ اپنے تئیں بھلانے کی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 3
  10. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,631
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    بہت شکریہ فاتح صاحب اور مسئلہ حل کرنے کا بھی شکریہ! :)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1
  11. ام نور العين

    ام نور العين معطل

    مراسلے:
    2,026
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    میرتو بھلے عہد میں جیے کہ زرد ہونا بس ایک بات کی علامت تھا ۔ اب تو ہیپا ٹائٹس سے لے کر ویلیو ایڈڈ ٹیکس تک سو کھکھیڑ ہیں ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 2
  12. فرخ منظور

    فرخ منظور لائبریرین

    مراسلے:
    12,631
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Cold
    میر کی غزل ناپسند فرمانے کا بہت شکریہ! :)
     
  13. ام نور العين

    ام نور العين معطل

    مراسلے:
    2,026
    جھنڈا:
    Pakistan
    موڈ:
    Bookworm
    ارے نہیں نہیں غزل ناپسند نہیں کی ۔ عہد پسند آیا ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ × 1

اس صفحے کی تشہیر